پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری اور مسلم لیگ (ن) کے رہنما خواجہ سعد رفیق کے پروڈکشن آرڈر جاری کر دیے گئے ہیں۔تفصیلات کے مطابق سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے نیب کے زیر حراست ملزموں آصف علی زرداری اور خواجہ سعد رفیق کے پروڈکشن آرڈر جاری کر دیے ہیں، اب دونوں رہنما جمعرات کو اسمبلی اجلاس میں شرکت کر سکیں گے۔ تین روز قبل وزیراعظم عمران خان نے تحریک انصاف کی پارلیمانی پارٹی اور حکومتی اتحادی جماعتوں کے اجلاس میں ہدایت کی تھی کہ آصف علی زرداری سمیت کسی بھی ملزم کے پروڈکشن آرڈر جاری نہ کیے جائیں۔ پیپلز پارٹی کی جانب سے بھی ممبر قومی اسمبلی کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے کے لیے اسپیکر اسد قیصر کو تحریری طور پر درخواست دی گئی تھی۔اب اطلاعات ہیں کہ اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے سابق صدر آصف علی زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری کردیے ہیں۔ پی پی کے صدر آصف زرداری کے پروڈکشن آرڈر بجٹ سیشن کے لیے جاری کیے گئے ہیں اور قومی اسمبلی کا بجٹ سیشن 29 جون تک جاری رہے گا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ آصف زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری ہونے سے پہلے خورشید شاہ نے اسد قیصر کو کئی بار فون کیا۔ خورشید شاہ نے سابق صدر آصف علی زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ آصف زرداری کل صبح کے اجلاس میں شریک ہوں گے۔ پیپلز پارٹی کے رہنما عبدالقادر پٹیل، شازیہ مری اور شگفتہ جمانی پروڈکشن آرڈر وصول کرنے کے لیے موجود تھے۔

مزید پڑھیں
ویڈیوز

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟