تازہ ترینجرم کہانیخبریں

درندگی کی انتہا: ڈاکوؤں کی باپ کے سامنے بیٹی کے ساتھ اجتماعی زیادتی

ڈاکوؤں نے پتوکی میں باپ کے سامنے بیٹی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا ، پولیس نے واقعہ میں ملوث ایک مشکوک شخص کوحراست میں لے لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب کے شہر پتوکی میں درندگی کی انتہا ہوگئی، ڈاکوؤں نے باپ کو باندھ کر اس کے سامنے بیٹی کو زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔

پولیس کا کہنا ہے لانگ مارچ کی وجہ سے ساری نفری ڈیوٹی پرتھی، مؤثر گشت نہ ہونے کی وجہ سے واقعہ پیش آیا۔

پولیس نے بتایا کہ ظہور احمد اپنے پندرہ برس کی بیٹی اور پانچ سال کے بیٹے کے ساتھ شادی کی تقریب سے واپس گاؤں جارہا تھا کہ ڈاکوؤں نے پتوکی چونیاں بائی پاس پر روک کرپہلےلوٹ مار کی اور پھرانہیں کھیتوں میں لے گئے۔

حکام کا کہنا تھا کہ ڈاکوؤں نے باپ اور بیٹے کو رسیوں سے باندھا اوران کے سامنے لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا اور کچھ لوگوں کوآتا دیکھ کرڈاکو موٹرسائیکل چھوڑ کر فرار ہوگئے۔

اطلاع ملنے پر تھانہ صدر پولیس موقع پر پہنچی اور لڑکی کا تحصیل ہیڈکوارٹر اسپتال میں میڈیکل کرایا، جس میں زیادتی ثابت ہوگئی۔

پولیس نے ڈکیتی اور زیادتی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرکے تمام شواہد اکٹھے کرلیے اور کہا کہ ملزمان کو جلد گرفتار کرلیا جائے گا۔

آئی جی پنجاب نے پتوکی میں ڈاکوؤں کی لڑکی سے زیادتی کا نوٹس لیتے ہوئے آر پی اوشیخوپورہ سےواقعےکی رپورٹ طلب کرلی اور تمام ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کر کے سخت قانونی کارروائی کی ہدایت کردی ہے۔

،آئی جی پنجاب نے ڈی پی اوقصور کو رمتاثرہ فیملی کےساتھ قریبی رابطہ رکھنے کی بھی ہدایت کی۔

ڈی پی اوقصورمحمد صہیب اشرف موقع پرپہنچ گئے اور بتایا کہ واقعہ میں ملوث ایک مشکوک شخص کوحراست میں لیا گیا ہے اور کرائم سین یونٹ کی ٹیمیں جائے وقوعہ سےشواہداکٹھےکر رہی ہیں، ملزمان کی گرفتاری کیلئے5 ٹیمیں تشکیل دےدی گئی ہیں،

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button