Uncategorized

ویکیوم ٹرین تکمیل کے مراحل میں ،لاہور سے اسلام آباد آدھا گھنٹہ دور

اب اسلام آباد سے لاہور کا سفر آدھے گھنٹے میں طے ہو سکے گا.عرب حکومتوں اور کاروباری کمپنیوں کے اشتراک سے امریکی ٹرانسپورٹ کمپنی ’ورجن ہائپر لوپ‘ کے تحت تیار ہونے والی ویکیوم ٹرین تکمیل کے قریب ہے جو مشرق وسطیٰ میں چلنے والی نہ صرف اپنی نوعیت کی پہلی ٹرین ہوگی بلکہ اس سے خلیجی ممالک کو ملانے والے پہلے ریل نیٹ ورک کا آغاز ہوگا۔
ورجن ہائپر لوپ کی تیار کردہ یہ ویکیوم ٹرین مسافروں کو ایک ہزار کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ایک مقام سے دوسرے مقام تک پہنچائے گی۔پاکستانیوں کے سمجھنے کیلئے اگر یہی ٹرین پاکستان میں چلائی جائے تو اسلام آباد سے لاہور تک کا سفر محض آدھے گھنٹے میں طے ہو سکتا ہے
ورجن ہائپر لوپ کے سربراہ اور شریک بانی جوش گیگل نے کہا ہے کہ سعودی دارالحکومت ریاض سے شروع ہونے والے ریل نیٹ ورک کے ذریعے 48 منٹ میں ابو ظبی پہنچایا جا سکے گا
انہوں نے بتایا کہ اس ٹرین پر دبئی، وہاں سے کویت، جدہ اور نیوم تک کا سفر کرنا ممکن ہوگا۔’ان تمام علاقوں کا سفر کر سکیں گے اور پورے خطے میں ریاض سے کسی بھی مقام تک ایک گھنٹے یا دو گھنٹے سے کم میں پہنچ سکیں گے۔
ہائپر لوپ کے چیئرمین سلطان احمد بن سلیم کا کہنا ہے کہ اس دہائی کے اختتام سے قبل اس پہلی کمرشل ٹرین کے انڈیا یا سعودی عرب میں چلنے کی امید ہے۔قطع نظر کہ یہ ٹرین کس ملک میں پہلے چل سکے گی، ویژن 2030 کے تحت شروع ہونے والے ترقیاتی منصوبوں کے باعث سعودی عرب سرمایہ کاری کے لیے ایک پرکشش مقام بن گیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ ’جس رفتار کے ساتھ وہ (علاقوں) کو ملانا چاہتے ہیں، ان کے سسٹینبلٹی مشنز، شہروں کی جدید طریقے سے تعمیر کا منصوبہ، اور وہ لوگوں کو آپس میں ملانے کے لیے مختلف قسم کی ٹیکنالوجی کی تلاش میں ہیں، تاکہ پائیدار ذرائع کے تحت لوگ جلدی اپنی منزل تک پہنچ سکیں، اور ہائپر لوپ اس ویژن پر پورا اترتا ہے۔ امید ہے مشرق وسطیٰ میں لاکھوں کی تعداد میں لوگ اس پر سفر کریں گے۔‘

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button