news title here
news title here
news title here
news title here
 وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ حکومت کی جامع پالیسیوں کی بدولت ملک تیز رفتار ترقی کی راہ پر گامزن ہے اور وہ دن دور نہیں جب پاکستان ترقی یافتہ اقوام کی صف میں کھڑا ہوگا۔ ریڈیو پاکستان سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے نیا پاکستان بنانے کےلئے متعدد میگا ترقیاتی منصوبے شروع کئے اور متعدد مکمل کرائے۔ انہوں نے کہا کہ جمہوری نظام کے خلاف سازش کرنے والے عناصر کو ناکامی ہوگی۔
news title here
 لورہ پولیس نے سرچ آپریشن کے دوران بھاری مقدار میں اسلحہ و منشیات برآمد کرکے17ملزمان گرفتار کرلیے۔ پولیس ذرائع کے مطابق ڈسٹرکٹ پولیس افسر سید اشفاق انور کی ہدایت پر ایس ایچ او لورہ ہارون خان نے پولیس نفری کے ہمراہ  مختلف علاقوں میں سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن کرتے ہوئے 10عدد 12بور بندوقیں، 3عدد 32بور پستول، ایک عدد ایس ایم جی، 2عدد ٹرپل ٹوبور پندوقیں، 100عدد کارتوس اور ایک کلو اعلیٰ کوالٹی چرس برآمد کر کے 17ملزمان کوگرفتارکیا۔ پولیس نے ملزمان کے خلاف تھانہ لورہ میں مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی۔  

 مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران ضلع کپواڑہ میں ایک کشمیری نوجوان کو شہید کر دیا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق فوجیوں نے اس نوجوان کو ضلع کے علاقے ہندواڑہ میں اننوان کے مقام پر محاصر ے اور تلاشی کی کارروائی کے دوران شہید کیا۔ آخری اطلاعات ملنے تک علاقے میں فوجی آپریشن جاری تھا۔علاوہ ازیں مقبوضہ کشمیر میں خواتین کی چوٹیاں کاٹنے کے واقعات کے خلاف احتجاجی مظاہروں میں شرکت کرنے پر بھارتی پولیس نے ضلع بارہمولہ سے 45افراد کو گرفتار کرکے ان کے خلاف مقدمات درج کر لیے ہیں۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بارہمولہ میں بھارتی پولیس کے ایک افسر نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ یہ وہی نوجوان ہیں جو گذشتہ سال بھارتی فورسز پر پتھرائو کرنے میں پیش پیش تھے۔ انہوں نے کہا کہ ٹریٹوریل آرمی کے تین اہلکاروں کی مار پیٹ کرنے پر شیری کے علاقے سے18افراد کو گرفتار کیا جاچکا ہے۔ پولیس افسر نے کہا کہ سوپور کے علاقے ماز بگ سے 14افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ بارہمولہ ضلع میں اب تک چوٹیاں کاٹنے کے 11واقعات پیش آئے ہیں۔ ادھر کپوارہ میں بھارتی پولیس نے چوکی بل کرالہ پورہ میں ٹریٹوریل آرمی کے ایک اہلکار پرتشدد کرنے کے الزام میں 10افراد کو گرفتارکیا ہے جبکہ دو گاڑیو ں کو بھی ضبط کیا  گیا ۔ ایس ایس پی کپوار نے صحافیوں کو بتا یا کہ کپوارہ میں چوٹیاں کاٹنے کے متعدد واقعات پیش آئے ہیں اور ریڈی چوکی بل میں جب ایک خاتون کی چوٹی کاٹنے کا واقعہ پیش آ یا تو لوگو ں نے ایک فوجی جوان کو اس میں  ملوث قراردیکر اس کی ہڈی پسلی ایک کردی اور اس کو نیم مردہ حالت میں چھو ڑ دیا۔ بھارتی پولیس کا کہنا ہے کہ آخون محلہ اشبر نشاط میں بشارت مقبول،عاشق آخون اور اویس وانی کو گرفتار کیا  گیا ہے۔  

news title here
news title here
news title here
news title here
news title here
 بالی وڈ کے مسٹر پرفیکشنسٹ عامر خان نے اپنی نئی فلم  سیکرٹ سپر  سٹار کے ذریعے کئی اداکاروں کی حقیقی زندگی سے پردہ اٹھا دیا ہے،بھارتی فلم انڈسٹری میں عامر خان کا کوئی متبادل نہیں کیوں کہ وہ کردار میں ڈھلنے کی صلاحیت رکھتے ہیں اور ہمیشہ کچھ نیا کرکے مداحوں میں دلچسپی پیدا کرنے کی بھرپور کوشش کرتے ہیں ، بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق بالی وڈ کے مسٹر پرفیکشنسٹ نے حالیہ انٹرویو میں انکشاف کیا کہ فلم  سیکرٹ سپر  سٹار  میں انہوں نے جو کردار ادا کیا اس میں کئی اداکاروں کی حقیقی زندگی کی عادات کو نقل کیا ہے، انہوں نے کہا کہ انیل کپور کی عادت ہے وہ کال پر ایک دفعہ بائے نہیں کہتے بلکہ جب میں انہیں کہتا ہوں کہ  اوکے انیل پھر بات ہوگی بائے  تو اس کے جواب میں وہ کئی بار بائے بائے کہتے ہیں،بالی وڈ کے مشہور نامور اداکار جتندر کمار کے حوالے سے عامر خان نے کہا کہ جب ان سے پہلی ملاقات ہوئی تو وہ فلمساز کے ساتھ بیٹھے تھے جہاں انہیں ایک کردار کی پیشکش ہوئی جس کی انہوں نے حامی بھرتے ہوئے کہا کہ  بیک اپ انڈیا  جو مجھے بہت اچھا لگا  اس لیے میں نے  سیکرٹ سپر  سٹار میں اس عادت کو شامل کیا ہے، واضح رہے فلم  سیکر ٹ سپر  سٹار  دیوالی پر ریلیز ہوئی تھی جو اب تک مداحوں کو متاثر کرنے میں کامیاب نظر نہیں آتی۔
news title here
 بالی وڈ کے سپر سٹار اجے دیوگن اور ہدایت کار روہت شیٹھی کی فلم  گول مال اگین نے ریلیز کے پہلے دن 33 سے 34کروڑ کی کمائی کرکے کامیابی کے جھنڈے گاڑ دئیے، اجے دیوگن، پرینیتی چوپڑا، تشار کپور، ارشد وارثی،کنال کھیمو، شریاس تلپڑے اور تبو جیسی بڑی کاسٹ پر مشتمل فلم  گول مال اگین کی ریلیز سے قبل امید کی جارہی تھی کہ یہ فلم باکس آفس پر کامیاب ہوجائے گی تاہم یہ کامیابی اتنی شاندار ہوگی اس کا اندازہ فلم کی کاسٹ سمیت ہدایت کار روہت شیٹھی کو بھی نہیں ہوگا، بھارتی میڈیا کے مطابق گول مال سیریز کی چوتھی فلم  گول مال اگین دیوالی کے موقع پر ریلیز کی گئی تھی،میڈیا رپورٹس کے مطابق  گول مال اگین ریلیز کے پہلے روز 33 سے 34 کروڑ کا بزنس کرنے کے ساتھ رواں سال کی اب تک کی کامیاب فلم بن گئی ہے، گول مال اگین نے ورون دھون کی  جڑواں 2 کو بھی پیچھے چھوڑدیا ہے، فلم  جڑواں2 نے ریلیز کے پہلے روز 15 کروڑ 55 لاکھ کا بزنس کیا تھا جس کے باعث اس فلم کو رواں سال کی سب سے کامیاب فلم قرار دیا جارہا تھا تاہم اب اجے دیوگن کی گول مال نے ورون کی فلم کو مات دے دی ہے،فلم گول مال اگین کی کہانی گزشتہ سیریز کی طرح کامیڈی اور مزاح سے بھرپور ہے تاہم اس بار روہٹ شیٹھی نے کچھ الگ کرتے ہوئے فلم میں جن اور بھوتوں کا اضافہ کیا ہے، بلاشبہ لوگوں کو روہت شیٹھی کی یہ کاوش پسند آئی یہی وجہ ہے کہ لوگوں کی بڑی تعداد سینما گھروں  کا رخ کررہی ہے۔
news title here
news title here

سابق عالمی چیمپئن  سکواش  جان شیر خان نے کہا ہے کہ پاکستان سکواش فیڈریشن سیاست سے پاک ہے بلکہ کھلاڑی محنت کر کے ملک کا نام روشن کر سکتے ہیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے  میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا،10سال تک دنیا پر حکمرانی کرنے والے جان شیر خان نے کہا کہ اس وقت پاکستان سکواش فیڈریشن سیاست سے پاک ہے اور اس کی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ پاکستان ایئرفورس اس کھیل کی سرپرستی کر رہی ہے اور پاکستان سکواش فیڈریشن کے صدر ایئر چیف مارشل سہیل امان ملک میں سکواش کے فروغ کیلئے دن رات کوشاں ہیں اور میں بھی اس فیڈریشن کے ساتھ کام کرنے کو فخر محسوس کر رہا ہوں،انہوں نے کہا کہ ملک میں ٹیلنٹ کی کمی نہیں ہے ضرورت اس بات کی ہے کہ کھلاڑی محنت کے ساتھ کھیلیں ، کوچز ایمانداری اور نیک نیتی سے کھلاڑیوں کی رہنمائی کریں تواس میں کوئی شک نہیں پاکستان سکواش میں اپنا کھویا ہوا مقام دوبارہ حاصل  کر سکتا ہے، کوچ ایک استاد کا درجہ رکھتا ہے اگر کھلاڑی دلچسپی نہیں لے گا تو کوچ بھی کیا کرےگا، قومی ہیرو جان شیر خان نے کہا کہ سکواش سے میرے ریٹائرڈ ہونے کے 17 سال بعد تک بھی آج تک پاکستان سکواش میں ایسا کوئی بھی کھلاڑی نہیں آیا جو عالمی نمبرون کی رینکنگ میں پہنچا ہو ، اس کی وجہ یہ ہے کہ کھلاڑی دلچسپی کے ساتھ محنت نہیں کر رہے اور ہمارے دور میں ایک ٹورنامنٹ جیتنے کے بعد دوسرے ٹورنامنٹ کیلئے مزید سخت محنت کر تے تھے تاکہ اگلا ٹائٹل بھی اپنے نام کر سکیں،  انہوں نے کہا کہ ہمارے دور میں بھارت جیسا ملک عالمی رینکنگ میں 100 ویں پوزیشن پر بھی نظر نہیں آتاتھا آج وہ ہم پر نہ صرف پابندیاں لگا رہا ہے بلکہ ہماری جیت پر بھی تنقید کر رہا ہے،انہوں نے کہا کہ میری کامیابی کی سب سے بڑی وجہ یہ تھی کہ میں اپنے دور میں ایک منٹ بھی ضائع نہیں کرتا تھا اور پورا پورا دن صرف سکواش کورٹ میں ہی رہتا تھا جس کی مثال پوری دنیا کے سامنے ہے کہ 10 سال تک سکواش کے میدان پر دنیا میں حکمرانی کرنے کا اعزاز حاصل کرکے پاکستان کا پرچم بلند کیا۔

news title here

آسٹریلیا نے وومنز ایشز سیریز کے پہلے ون ڈے میچ میں انگلینڈ کو سنسنی خیز مقابلے کے بعد دو وکٹوں سے ہرا کر تین میچوں کی سیریز میں 1-0 کی برتری حاصل کر لی، برسبین میں کھیلے گئے میچ میں انگلینڈ وومن نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ 50 اوورز میں 9وکٹوں کے نقصان پر 228رنز بنائے، نیتلی سکیور 36 اور سیرا ٹیلر 34 رنز کے ساتھ نمایاں رہیں، ایشلے گارڈنر نے تین جبکہ الیز پیری اور میگان شوٹ نے دو، دو وکٹیں حاصل کیں، جواب میں آسٹریلیا وو من نے ہدف 49.1 اوورز میں 8وکٹوں کے نقصان پر حاصل کر لیا،ایلیکس بلیکویل نے شاندار بیٹنگ کا مظاہرہ کیا اور67 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی، انہیں میچ کی بہترین پلیئر قرار دیا گیا، کیتھرین برنٹ اور ایلیکس ہرٹلی نے دو، دو کھلاڑیوں کو آئوٹ کیا۔  

news title here

 قومی کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز آل رائونڈر محمد حفیظ کو ون ڈے انٹرنیشنل میں کیریئر کے 6 ہزار رنز مکمل کرنے کیلئے مزید 41 رنز درکار ہیں، توقع ہے کہ وہ سری لنکا کے خلاف آخری ون ڈے میں یہ سنگ میل عبور کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔ اگر حفیظ کامیاب ہو گئے تو وہ یہ اعزاز پانے والے دسویں پاکستانی بلے باز بن جائیں گے، انہوں نے اب تک 194 میچز میں 5959 رنز بنا رکھے ہیں جس میں 11 شاندار سنچریاں بھی شامل ہیں، پاکستان کی طرف سے انضمام الحق 11701 رنز بنا کر سرفہرست ہیں، محمد یوسف 9554 رنز کے ساتھ دوسرے، سعید انور 8824 رنز کے ساتھ تیسرے، شاہد آفریدی 8027 رنز بنا کر چوتھے، جاوید میانداد 7381 رنز بنا کر پانچویں، یونس خان 7249 رنز بنا کر چھٹے، سلیم ملک 7170 رنز بنا کر ساتویں، شعیب ملک 6926 رنز بنا کر آٹھویں اور اعجاز احمد 6564 رنز بنا کر نویں نمبر پر موجود ہیں۔  

news title here

 پاکستانی نږاد برطانوی باکسرعامر خان نے کہا ہے کہ انہوں نے اپنی اہلیہ فریال مخدوم کو پلاسٹک سرجری کروانے کی وجہ سے چھوڑا۔اپنی نئی دوست اور ایک بچے کی ماں صوفیہ کو بھیجے گئے درجنوں میسیجز میں عامر خان نے فریال مخدوم کو کائلی جینر کی طرح پلاسٹک سرجری کی جنونی قرار دیا۔صوفیہ سے ایک ہوٹل کے باہر کار پارکنک میں ملنے اور پھر نمبروں کا تبادلہ کرنے والے عامر خان نے صوفیہ پر ٹیکسٹ میسجز کی بھرمار کرتے ہوئے کہا کہ فریال مخدوم کو کائلی جینر کی طرح پلاسٹک سرجریز کا جنون ہے، اسی لیے فریال سے چھٹکارا حاصل کیا۔عامر خان نے صوفیہ کو بتایا کہ فریال اس وقت تک خوبصورت تھی جب تک اس نے کائلی جینر کی تقلید کرتے ہوئے پلاسٹک سرجریز نہیں کروائی تھیں۔حال ہی میں الگ ہونے والے عامر خان اور فریال مخدوم نے ایک دوسرے پر دھوکہ اور دغا بازی کے الزامات لگائے تھے۔

news title here
news title here
news title here
ایل ای ڈی والی جعلی پلکوں کے بعد اب کوریا میں ناخنوں کو ایل ای ڈی سے روشن کرنے کا رحجان بڑھ رہا ہے اور خواتین کی بڑی تعداد اپنے ناخنوں پر رنگ برنگی ایل ای ڈی روشنیاں لگوارہی ہیں۔ اس فن کو پارک یونک یونگ نے متعارف کرایا ہے جو ناخنوں کی آرائش کے ماہر ہیں۔ انہوں نے خواتین میں ناخنوں کے آرٹ اور آرائش کے عمل کو ایک نئی شکل دینے کے لیے نظر نہ آنے والے تاروں سے جوڑا ہے۔ لیکن اس کے لیے پارک نے ایک نیا اور مشکل طریقہ بھی اختیار کیا ہے۔پارک یونک یونگ سوشل میڈیا پر بھی مقبول ہیں اور انہوں نے ناخنوں کے لیے ایئرنگ جیسے ڈیزائن بنائے ہیں۔ وہ جعلی ناخنوں میں ایک سوراخ کرتی ہیں اور اس پر ایک جگمگاتے ہیرے جیسی ایل ای ڈی فٹ کرکے ناخن کے پیچھے چھوٹی بیٹریاں لگاتی ہیں۔ لیکن یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ ایک بیٹری کتنی دیر تک روشنی کو جلاتی رہے گی۔ اس کامیابی کے بعد اب پارک تجارتی طور پر ناخنوں کو روشن کرنے والی ایل ڈی بنانا چاہتی ہیں۔ انسٹا گرام اور فیس بک ان کے ایل ای ڈی ناخن بہت مقبول ہورہے ہیں۔

news title here
 تازہ تحقیق کے مطابق کتے جب اپنی آنکھوں سے کوئی تیور دکھاتے ہیں تو وہ انسانوں کے فائدے کیلئے ہوتا ہے، اپنے لئے وہ ایسا شاذو نادر ہی کرتے ہیں، ماہرین کا کہناہے کہ جانور بھی انسانوں کو اپنے چہرے کے تاثرات سے آگاہ کرنے کی کوشش کرتے ہیں، انکی اپنی برادری میں ان تیوروں کی کوئی خاص اہمیت نہیں ہوتی، سائنسدان ماضی میں یہی خیال کرتے رہے ہیں کہ جانوروں کے چہرے کے تاثرات غیر ارادی ہوتے ہیں اور یہ جذباتی صورتحال پر منحصر ہوتے ہیں، انکا ایک دوسرے سے رابطہ کرنے کے حوالے سے کوئی تعلق نہیں ہوتا تاہم کتوں کی قوت مدرکہ سے متعلق پورٹسما ئوتھ یونیورسٹی کے ماہرین نے تحقیق کے دوران انکشاف کیا ہے کہ کتے اپنے چہرے کے تاثرات اسی وقت ظاہر کرتے ہیں جب ان کے اردگرد انسان موجود ہوں، یہ انکی جانب سے انسانوں کی توجہ اپنی جانب مبذول کرانے کا ایک طریقہ ہوتا ہے،سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ  پپی ڈاگ آئز ان آنکھوں کو کہتے ہیں جس میں کتا اپنی بھویں چڑھا لیتا ہے تاکہ اس کی آنکھیں زیادہ بڑی دکھائی دیںاور اسکے ساتھ ہی وہ ا پنی آنکھوں کو مغموم ظاہر کرتا ہے، ماہرین کا کہناہے کہ اس قسم کی آنکھیں کتوں میں سب سے زیادہ دیکھی گئی ہیں، ماہرین یہ نہیں جانتے کہ آیا کتوں کو یہ علم ہوتا ہے یا نہیں کہ وہ ایسی آنکھیں بنا کر یا چہرے کے ایسے تاثرات ظاہر کرکے اداس اور مغموم دکھائی دیتے ہیں، یہ بھی امکان ہے کہ وہ یہ سمجھتے ہوں کہ آنکھیں پھیلا کر بھنویں چڑھا کر انسانوں کے سامنے تاثرات دیئے جائیں تو ان سے ہمدردی حاصل ہوتی ہے اور یہ تاثر انسانوں میں رحم کے جذبات پیدا کرنے میں کارگر ثابت ہوتا ہے، کتوں کے ماہر جولیانی کمنز کا کہناہے کہ اب ہم یہ بات اعتماد سے کہہ سکتے ہیں کہ کتوں کی جانب سے جو چہرے کے تاثرات دیئے جاتے ہیں وہ اپنے اردگرد موجود لوگوں کی توجہ پر مبنی ہوتے ہیں اور وہ محض اس لئے نہیں ہوتے کہ ان سے کتا متاثر ہورہا ہے یعنی یہ اس کے ذہن میں پیدا ہونے والے جذبات کی عکاسی نہیں ہوتی، انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنے مطالعہ کے دوران یہ بات نوٹ کی کہ جب کتے کو کوئی شخص بغور دیکھ رہا ہو تو وہ مزید تاثرات ظاہر کرتا ہے، تاہم اس کے سامنے جب کھانے پینے کی اشیا لائی جاتی ہیں تو ایسے اثرات دیکھنے میں نہیں آتے، اس مطالعہ سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ کتے انسانوں کی توجہ کے حوالے سے کافی حساس ہوتے ہیں نیز انکے تاثرات انسانوں کی توجہ حاصل کرنے، اپنے جذبات کا اظہار کرنے اور ان سے روابط استوار کرنے کی کوشش ہوتی ہے۔

news title here
 انسان کو کرہ ارض پر قدم رکھے کروڑوں سال ہوچکے ہیں مگر آج کے انسان کیلئے یہ علم اب بھی محمل اور ناپختہ ہے کہ سب سے پہلے انسان نے کرہ ارض کے کس حصے اور کہاں پر قدم رکھا، اس حوالہ سے ماہرین آثار قدیمہ ایک نئی اور عجیب و غریب صورتحال سے دوچار ہورہے ہیں اور یہ صورتحال اس دانت کے نتیجہ میں پیدا ہوئی ہے جو جرمنی میں ملا ہے اور اسی بنیاد پر یورپ کو انسانیت کا گہوارہ قرار دینے کی کوششیں بھی شروع ہوچکی ہیں، اب تک کی مسلمہ تاریخ کچھ ایسی ہے کہ انسان او ر انسانیت کی ابتدا کیلئے افریقہ کو مرکز قرار دیا جاتا رہا ہے کیونکہ وہاں بہت ہی قدیم انسانوں کے  ڈھانچے ملے ہیں مگر اب جرمن ماہرین آثار قدیمہ یہ دعویٰ کر رہے ہیں کہ ان کے یہاں جو دانت دریافت ہوا ہے وہ افریقہ میں پائے جانے والے دونوں انسانی ڈھانچوں سے د گنا پرانا ہے۔ اسکی تصدیق کیلئے اچھا خاصا وقت چاہئے تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر اس دعوے کو تسلیم کرلیا گیا تو بنی نو انسان کی تاریخ ازسر نو مرتب کرنا پڑیگی اور آج کا انسان خود کو، دنیا اور اپنے وجود کو ایک نئے زاویے سے دیکھنے پر مجبور ہو جائیگا، سردست سائنسدانوں کی ایک ٹیم اس دانت کا جائزہ لے رہی ہے ۔ جرمنوں کا نیا دعویٰ  اس بیانیے پر سوالات کھڑے کر سکتا ہے کہ انسانیت کا اصل مرکز یا گہوارہ افریقہ تھا اور افریقہ سے ہی انسان نے دنیا کے طول و عرض کی جانب قدم بڑھایا، زیر بحث دانت دریائے رائن کے دامن میں کھدائی کے دوران ملا ہے، واضح ہو کہ یہ دریا ایک عرصہ پہلے خشک ہوچکا ہے، سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ وہ اس دانت کی دریافت سے اتنے حیران ہوئے کہ انہوں نے اسکا اعلان کرنے میں بھی ایک سال کا عرصہ لگادیا۔

news title here
news title here
news title here
news title here
news title here
مشروم کو ان کے خواص کی بنا پر میجک مشرومزبھی کہا جاتا ہے کیونکہ ان میں صحت کے خزانے پوشیدہ ہوتے ہیں۔ اب اچھی خبر یہ ہے کہ مشرومز اداسی اور ڈپریشن کے علاج میں بھی مددگار ثابت ہوسکتی ہیں۔لندن کے مشہور امپیریل کالج کے ماہرین نے کہا ہے کہ میجک مشرومز میں ایک مرکب سائلوسائبن پایا جاتا ہے جو ڈپریشن کو دور کرسکتا ہے۔ حالیہ تجربات میں ڈپریشن کے 20 ایسے مریض لیے گئے جن پر دوا اثر نہیں کر رہی تھی۔ ان سب مریضوں کو مشروم میں پائے جانے والے مرکب سائلوسائبن کی پہلے ہفتے تک 10 ملی گرام مقدار دی گئی۔ اس کے بعد اگلے ہفتے تک 25 ملی گرام خوراک دی گئی۔ ان میں سے 19 افراد کو پہلی خوراک دیتے ہی ان کے دماغ کے اسکین کئے گئے اور اس کے بعد دوسری اور تیسری خوراک کے بعد بھی دماغی اسکین کیے گئے۔ جب پہلے اور بعد میں کئے گئے اسکین کا باہمی جائزہ لیا گیا تو معلوم ہوا کہ دماغی گوشے ایمگڈالا میں خون کی فراہمی کم ہوئی ہے۔ ایمگڈالا میں ہمارے جذبات چھپے ہوتے ہیں، جن میں خوف، دبائو اور دیگر منفی جذبات بھی ہوتے ہیں۔ جبکہ دماغ کے ایک اور گوشے میں جو ڈپریشن سے وابستہ ہوتا ہے، استحکام دیکھا گیا۔دماغی اسکین کے علاوہ ڈپریشن کے مریضوں سے سوالنامے بھی بھروائے گئے جن میں ان سے ڈپریشن کی علامات کے بارے میں پوچھا گیا۔ نہ صرف تمام مریضوں نے ڈپریشن میں کمی کا اعتراف کیا بلکہ کہا کہ ان کا دماغ کسی کمپیوٹر کی طرح ری سیٹ ہوکر مایوسی سے امید کی جانب چلا گیا ہے۔ دوسری خوراک کے بعد یہ اثر کئی ہفتوں تک جاری رہا۔ ہم نے پہلی مرتبہ ڈپریشن میں مبتلا افراد میں یہ ثابت کیا ہے کہ باقی علاج ناکام ہونے کی صورت میں سائلوسائبن سے ان کا علاج کیا جاسکتا ہے،ڈاکٹر روبن کارہرٹ ہیرس نے کہا جو اس رپورٹ کے اہم سائنسدان بھی ہیں۔ روبن کے مطابق سائلوسائبن مریضوں کو ڈپریشن سے نکلنے کی فوری چھلانگ فراہم کرسکتے ہیں۔ اس طرح وہ ڈپریشن کے نرغے سے نکل کر اپنا دماغ دوبارہ سیٹ کرسکتے ہیں۔تاہم ماہرین نے اعتراف کیا کہ اس میں چند لوگوں کو ہی شامل کیا گیا تھا اب یہ ٹیم مشرومز کو لوگوں کی ایک بڑی تعداد پر استعمال کرے گی۔ تاہم ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ ڈپریشن کے مریض مزید تحقیق کے بعد ہی اس سبزی کو استعمال کریں تو بہتر ہوگا۔
news title here
ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ ایک رات کی نیند کی خرابی، دماغی سرکٹ میں تبدیلیاں پیدا کر سکتی ہے اور مستقبل میں یہ الزائیمر اور ڈیمنشیا جیسے امراض کی وجہ بھی بن سکتی ہے۔ نیند کی کمی دماغ میں ان پروٹین کو بڑھاتی ہے جو الزائیمر کی وجہ بنتے ہیں۔ واشنگٹن یونیورسٹی کے ماہر ڈیوڈ ہولز مین اور ان کی ٹیم کا کہنا ہے کہ مسلسل نیند کی خرابی سے دماغ میں کم ازکم ان دو پروٹین کی مقدار بڑھ جاتی ہے جو الزائیمر کی وجہ قرار دیئے گئے ہیں۔ ماہرین کا خیال ہے ادھیڑ عمری میں نیند کی مسلسل کمی زندگی میں آگے چل کر الزائیمر کا خطرہ بڑھا دیتی ہے۔ صرف امریکہ میں ہی اس وقت 50 لاکھ افراد اس مرض کا شکار ہیں جس میں دھیرے دھیرے یادداشت غائب ہوجاتی ہے اور دماغی صلاحیت بھی شدید متاثر ہوتی ہے جبکہ گزشتہ 15 برس میں اس سے اموات میں 55 فیصد اضافہ دیکھا گیا ہے۔ ماہرین اب تک الزائیمر کی اصل وجوہ جاننے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن اب تک یہ بات ثابت ہوچکی ہے کہ ٹائو اور امیلوئڈ بی ٹا نامی دو پروٹین اس بیماری میں بڑھ جاتے ہیں۔ اگرچہ نیند اور الزایئمر کے تعلق سے ہم پہلے بھی واقف تھے لیکن اب دو پروٹین کی صورت میں یہ بات مزید مستحکم ہوچکی ہے۔ اگر صرف ایک رات کی نیند خراب ہوجائے تو دماغ میں امیولوئڈ بی ٹا بڑھ جاتا ہے اور اگر بدقسمتی سے ایک ہفتے کی نیند خراب ہوجائے تو ٹائو پروٹین بھی بڑھنا شروع ہوجاتا ہے۔ اگر یہ سلسلہ کئی برس تک جاری رہے تو اس سے دماغ شدید متاثر ہوسکتا ہے اور متعلقہ فرد الزائیمر کے دہانے پر جا پہنچتا ہے۔ اس کےلیے سائنسدانوں نے 35 سے 65 برس تک کے 17 صحت مند افراد کو سروے میں شامل کیا اور ان پر نیند نوٹ کرنے والے آلات دو ہفتے تک لگا کر ان کی نیند کا دورانیہ نوٹ کیا۔ اس کے بعد ایک ڈارک روم میں بھی کھوپڑی پر برقیرے الیکٹروڈز لگا کر رضا کاروں کی نیند کا جائزہ لیا گیا۔ اس دوران نصف لوگوں کی نیند کو متاثر کیا گیا۔ کچھ روز بعد جن کی نیند خراب کی گئی تھی، ان کے دماغوں میں مذکورہ بالا دونوں پروٹین کی زیادتی نوٹ کی گئی جو دس فیصد تک تھی۔ تاہم اچھی خبر یہ ہے کہ جیسے ہی آپ کی نیند بہتر ہوتی ہے تو دماغ میں ان مضرپروٹین کی تعداد معمول پر آنا شروع ہوجاتی ہے۔

عوامی سروے

سوال: انتخابی اصلاحات کی منظوری ملک کیلئے فائدہ مند ہو گی یا نقصان دہ؟