16 جولائی 2018
تازہ ترین
news title here
news title here
news title here
news title here
 صوبہ سندھ کے ضلع مٹیاری کے قریب قومی شاہراہ پر مسافر بس اور ٹرالر  میں تصادم سے 17 افراد ہلاک اور 13 زخمی ہوگئے۔ سینیئر سپرنٹنڈنٹ پولیس  مٹیاری زاہد حسین شاہ کے مطابق حادثہ مٹیاری اور بھٹ شاہ کے درمیان قومی شاہراہ پر پیش آیا۔  سکرنڈ سے حیدرآباد جانے والی باراتیوں سے بھری بس کا ٹائر پنکچر ہونے پر اسے سڑک کنارے کھڑا کرکے ٹائر بدلا جارہا تھا کہ ایک تیز رفتار ٹرالر نے بس کو ٹکر دے ماری۔ حادثے  میں 17 افراد جاں بحق اور 13 زخمی ہوگئے۔ جاں بحق افراد میں 5 خواتین اور 2 بچے بھی شامل ہیں۔ حادثے کے زخمیوں کو بھٹ شاہ اور ہالا کے ہسپتال منتقل کیا گیا، دوسری جانب لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے بعد ایدھی سرد خانے منتقل کردیا گیا، جہاں سے انہیں آبائی علاقے کی جانب روانہ کیا جائے گا۔ حادثے میں زخمی اور ہلاک ہونے والوں کا تعلق زئنور برادری سے تھا۔
news title here
سابق وزیراعظم نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر نے ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت کی جانب سے دی جانے والی سزا کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں اپیل دائر کردی۔ ہائیکورٹ میں دائر اپیل میں احتساب عدالت کا فیصلہ کالعدم قرار دینے اور اپیل پر فیصلہ آنے تک سزا معطل کر کے مجرموں کو ضمانت پر رہا کرنے کی استدعا کی گئی ہے۔ اپیل کے متن کے مطابق احتساب عدالت نے انصاف کے تقاضے پورے کئے بغیر سزا سنائی جب کہ اسلام آباد ہائیکورٹ سے استدعا کی گئی ہے کہ احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کا فیصلہ کالعدم قرار دے کر بری کیا جائے۔علاوہ ازیں نواز شریف نے العزیزیہ اور فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنسز کی دوسری عدالت میں منتقلی کی درخواست مسترد کرنے کا احتساب عدالت کا فیصلہ چیلنج کردیا۔ ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا پانے والے سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کی جانب سے احتساب عدالت میں ایک درخواست دائر کی گئی تھی جس میں اس عدالت کے جج محمد بشیر کی جانب سے فلیگ شپ اور العزیزیہ سٹیل مل ریفرنس کی سماعت پر اعتراض اٹھایا گیا تھا۔ نوازشریف نے درخواست میں دونوں ریفرنسز کی سماعت دوسری عدالت میں منتقل کرنے کی استدعا کی تھی جسے مسترد کردیا گیاتھا۔ میاں نوازشریف نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی ہے جس میں احتساب عدالت کے اس فیصلے کو چیلنج کیاگیا ہے۔ خواجہ حارث کے توسط سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ جے آئی ٹی رپورٹ اور گلف سٹیل ملز سے متعلق عدالت اپنا فیصلہ سنا چکی ہے جب کہ دیگر دو ریفرنسز میں بھی یہ چیزیں مشترکہ ہیں۔

news title here
news title here
news title here
news title here
news title here
1992 میں پاکستان ٹیلی ویږن پر نشر ہونے والے ڈرامہ سیریل دھواں سے شہرت کی بلندیوں پر پہنچنے والے اداکار، ہدایتکار اور مصنف عاشر عظیم نے پاکستان چھوڑ دیا۔ اپنے ٹویٹر پیغام میں عاشر عظیم نے وطن چھوڑنے کی تصدیق کرتے ہوئے لکھا، میں نے ملک چھوڑ دیا ، کیونکہ میں مایوس ہوگیا ہوں۔ شریف یا زرداری کی وجہ سے نہیں، یہ تو ہمیشہ ایسے ہی تھے، میں یہاں کے لوگوں سے مایوس ہوگیا ہوں۔ عاشر عظیم نے مزید لکھا کہ لوگ اصول کی بات نہیں کرتے، اصول پر نہیں لڑتے، اصول پر ہنستے ہیں، انہیں شریف، زرداری اور رائو جیسے لوگ ہی ملیں گے، بس نام تبدیل ہوجائیں گے۔ اپنے پیغام میں عاشر عظیم نے ڈرامہ سیریل دھواں کا ایک سین بھی شیئر کیا، جس میں وہ یعنی اے ایس پی اظہر ڈرامے کے دیگر کرداروں کے ساتھ ملکی حالات پر گفتگو کرتے نظر آئے۔ گفتگو کے دوران اظہر اپنے دوست نیڈو سے کہتا ہے، آج ہم جو بھی ہیں، وہ اس ملک کی وجہ سے ہیں۔ نیڈو کو مخاطب کرکے اظہر کہتا ہے، تم تو اپنی حفاظت کر لیتے ہو، جو لوگ اپنی حفاظت نہیں کر سکتے، وہ کیا کریں؟ مر جائیں؟ کیا ہمارا یہ فرض نہیں بنتا کہ ہم تھوڑی سی دوسرے لوگوں کی بھی حفاظت کریں؟۔ اور آخر میں اظہر کہتا ہے، کتا دو چیزوں پر مرتا ہے، ایک اپنی ہڈی پر اور دوسرا اپنے گھر کی حفاظت پر، کیا ہم کتوں سے بھی بدتر نہیں ہوگئے؟ شاہکار ڈرامے دھواں کے تقریباً 20 سال بعد عاشر عظیم نے اپنی فلم  مالک کے ذریعے شوبز میں واپسی اختیار کی تھی، لیکن اس فلم کو سنسر بورڈ کی جانب سے پابندیوں کا سامنا کرنا پڑا۔ تاہم عاشر عظیم نے ہمت نہ ہاری اور سنسر بورڈ کے فیصلے کے خلاف عدالت سے رجوع کیا، بالآخر وہ کیس تو جیت گئے اور فلم بھی ریلیز ہوگئی، لیکن اس سب قصے میں انہیں کافی زیادہ مالی خسارے کا سامنا کرنا پڑا۔ عاشر عظیم  پاکستان کسٹمز میں ایک اہم عہدے پر تعینات تھے، لیکن کچھ ناگزیر وجوہات کی بنا پر انہوں نے اپنی ملازمت سے استعفیٰ دیا اور پھر پاکستان بھی چھوڑ دیا اور اب وہ کینیڈا میں ٹرک چلا کر  گزر بسر کر رہے ہیں، جس کی تصدیق انہوں نے اپنے ٹویٹر پیغام میں کی۔ عاشر عظیم اکثر و بیشتر ملکی حالات و واقعات اور حب الوطنی پر مبنی پیغامات شیئر کرتے رہتے ہیں۔
news title here
 بالی وڈ کنگ شاہ رخ خان کی غیر منافع بخش تنظیم نے تیزاب گردی کا شکار ہونے والی خواتین کے لئے بڑا قدم اٹھاتے ہوئے ان کی پلاسٹک سرجری کرنے کا فیصلہ کیا۔ کروڑوں دلوں پر حکمرانی کرنے والے بالی وڈ کنگ شاہ رخ خان بھارت سمیت پوری دنیا میں اپنی بہترین اداکاری کی وجہ سے شہرت رکھتے ہیں لیکن ان کی زندگی کے اس پہلو سے بہت کم لوگ واقف ہیں کہ وہ خواتین اور بچوں کے حقوق کے لئے سماجی طور پر بہت زیادہ سرگرم رہتے ہیں۔ شاہ رخ خان غیر منافع بخش تنظیم  میر فائونڈیشن کے بانی ہیں جو تیزاب گردی کا شکار ہونے والی خواتین کے لئے بہت زیادہ سرگرم ہے۔  یہ فائونڈیشن تیزاب سے متاثرہ خواتین کو نہ صرف طبی سہولیات فراہم کرتی ہے بلکہ انہیں اپنے پیروں پر کھڑے ہونے میں بھی مدد دیتی ہے تاکہ یہ خواتین معاشرے میں ایک بار پھر سر اٹھاکر جی سکیں۔ حال ہی میں شاہ رخ خان کی تنظیم میر فائونڈیشن نے تیزاب گردی کا شکار ہونے والی خواتین کے لئے بڑا اعلان کیا ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق میر فائونڈیشن نے  اتی جیون فائونڈیشن اور نیو ہوپ ہسپتال کے ساتھ مل کر تیزاب سے متاثرہ خواتین کے لئے پلاسٹک سرجری کا اہتمام کیا، تاکہ یہ خواتین ایک بار پھر عام لوگوں کی طرح معاشرے میں سرا ٹھاکر جی سکیں۔ میر فائونڈیشن کی جانب سے کیمپ میں ان تمام خواتین کو بہترین طبی سہولیات فراہم کی جائیں گی، جو تیزاب گردی کا شکار ہوئی ہیں۔ ابتدائی مرحلے میں 44 خواتین کی پلاسٹک سرجری کی جائے گی۔ شاہ رخ خان کی پروڈکشن کمپنی ریڈ چلی کے سی ای او وینکی میسور نے کہا کہ ہماری فائونڈیشن گزشتہ کئی  سالوں سے  تشدد کا شکار خواتین  کو بااختیار بنانے کے لئے  کوشاں ہے۔  یہ فائونڈیشن متاثرین پر سے مالی بوجھ کم کرکے انہیں بہتر طبی سہولیات فراہم کرتی ہے۔ اس کے علاوہ یہ فائونڈیشن صرف تیزاب گردی کا شکار ہونے والی خواتین کی مدد ہی نہیں کرتی بلکہ  کمزور اور بے سہارا خواتین کو روزگار دلانے اور انہیں اپنے پیروں پر کھڑا ہونے میں بھی مدد دیتی ہے اور اس حوالے سے انہیں قانونی مشورے بھی فراہم کئے جاتے ہیں تاکہ یہ ایک بہتر اور خوشحال زندگی گزار سکیں۔
news title here
بالی وڈ اداکار رنبیر کپور کی فلم سنجو نے باکس آفس پر کمائی کا ریکارڈ بنالیا  اور اب فلم 300 کروڑ کلب میں شامل ہوگئی۔ سنجے دت کی زندگی پر بننے والی فلم سنجو ریلیز کے بعد سے اب تک کئی ریکارڈز اپنے نام کر چکی ہے اور فلم باکس آفس پر اب بھی ایک کے بعد ایک ریکارڈ توڑ رہی ہے۔ فلم نے بھارت میں 16 روز میں 300 کروڑ بھارتی روپے سے زائد کی کمائی کرکے اس کلب میں شامل ہونے والی رنبیر کی پہلی اور بالی وڈ کی ساتویں فلم ہے۔ سنجو نے بھارت سمیت دنیا بھر میں 500 کروڑ سے زائد کی بزنس کیا، جس کے بعد یہ فلم بھی سب سے زیادہ کمائی والی فلموں کی فہرست میں آگئی۔ یاد رہے کہ فلم پہلے ہی روز رواں سال کی سب سے زیادہ کمائی والی فلم بنی تھی، جبکہ 3 روز میں ہی 100 کروڑ سے زائد کا بزنس کیا تھا۔ سنجو رنبیر کے کیریئر کی سب سے کامیاب ترین فلم ہے جس نے انہیں باکس آفس پر ہندسوں کی جنگ میں بالی وڈ حکمران خانز کے مد مقابل کھڑا کر دیا ۔ فلم میں رنبیر کپور نے مرکزی کردار کیا ، جبکہ دیگر اداکاروں میں پاریش راول، سونم کپور، انوشکا شرما، دیا مرزا سمیت کئی اداکار شامل ہیں۔
news title here

 پاکستان اور زمبابوے کے درمیان 5 ایک روزہ میچز پر مشتمل سیریز کا دوسرا میچ آج کھیلا جائے گا۔ زمبابوے کے شہر بلاوایو کے کوئنز سپورٹس کلب میں دونوں ٹیمیں پاکستانی وقت کے مطابق دن سوا 12 بجے مد مقابل ہوں گی، سیریز میں قومی ٹیم کو ایک صفر کی برتری حاصل ہے۔ دوسرے ایک روزہ میچ کے لئے قومی ٹیم میں کسی تبدیلی کا امکان نہیں اور فاتح ٹیم کو ہی برقرار رکھا جائے گا، کپتان سرفراز احمد کو آج کھیلے جانے والے میچ میں فخر زمان، امام الحق، بابراعظم، شعیب ملک، آصف علی، شاداب خان، فہیم اشرف، حسن علی، محمد عامر اور عثمان خان کی خدمات حاصل ہوں گی۔ بلاوایو میں آج موسم خوشگوار ہے اور درجہ حرارت 14 ڈگری سینٹی گریڈ تک رہنے کا امکان ہے اور پچ پر نمی کے باعث ابتدا میں بیٹنگ کرنے والی ٹیم کے لئے مشکلات ہوسکتی ہیں اور پچ بائولنگ کے لئے سازگار ہوگی۔

news title here

 فٹ بال ورلڈکپ 2018 کے فائنل میں فرانس نے کروشیا کو 2-4 سے شکست دے کر عالمی چیمپئن کا تاج اپنے سر پر سجالیا۔ روس کے شہر ماسکو کے لوزنیکی سٹیڈیم میں کھیلے گئے میچ میں مجموعی طور پر فرانس کا پلڑا بھاری رہا۔ پہلی مرتبہ ورلڈ کپ فائنل کھیلنے والی کروشین ٹیم دبائو میں نظر آئی جبکہ اس سے دفاع میں متعدد غلطیاں ہوئیں جس کا اسے بھاری نقصان اٹھانا پڑا۔ فرانس نے میچ میں سبقت 18ویں منٹ میں اس وقت حاصل کی جب کورشین دفاعی کھلاڑی ماریو منزوچک نے غلطی سے گیند اپنے ہی جال میں پہنچا دی۔ 28ویں منٹ میں کروشین مڈ فیلڈر ایوان پیریسچ نے شاندار گول اسکور کرکے فرانس کی سبقت ختم کردی۔ 38ویں منٹ میں ایک مرتبہ پھر کروشین دفاع نے غلطی کی اور اپنے ڈی میں ہینڈ بال کر دیا جس کے بعد ریفری نے فرانس کو پنالٹی کک دے دی جسے ان کے سٹار کھلاڑی انٹوئن گریزمین نے باآسانی گول میں تبدیل کر دیا۔ دوسرے ہاف میں بھی مجموعی طور پر فرانس کا ہی میچ پر غلبہ رہا۔59ویں منٹ میں پال پوگبا کے شاندار گول نے فرانس اسکور 1-3 کر دیا۔ فرانس کی جانب سے چوتھا گول 65ویں منٹ میں کائلن باپے نے سکور کرکے اپنی ٹیم کی جیت یقینی بنادی۔ فرانسیسی گول کیپر کی غلطی کی وجہ سے کروشیا 69ویں منٹ میں گول کرنے میں کامیاب رہا تاہم میچ کا اختتام فرانس کے حق میں 2-4 پر ہوا۔ کروشیا کے لیوکا موڈرچ کو گولڈن بال جبکہ فرانس کے ایم باپے کو ینگ ہلیئر ایوارڈ دیا گیا۔ خیال رہے کہ فرانس نے دوسرا مرتبہ عالمی چیمپئن بننے کا اعزاز حاصل کیا ہے۔ اس سے قبل فرانس 1998 میں فٹ بال ورلڈ کپ جیتنے میں کامیاب رہا تھا۔

news title here

سٹار جرمن کھلاڑی اینجلیق کربر نے ومبلڈن اوپن ٹینس ٹورنامنٹ وومنز سنگل ٹائٹل اپنے نام کر لیا، انہوں نے فیصلہ کن معرکے میں ٹائٹل فیورٹ سرینا ولیمز کو شکست دے کر کیریئر کا تیسرا گرینڈ سلام ٹائٹل جیتنے کا اعزاز حاصل کر لیا، کربر 22 برس بعد ومبلڈن اوپن سنگل ٹائٹل جیتنے والی پہلی جرمن کھلاڑی بن گئیں، اس سے قبل 1996 میں سٹیفی گراف نے ومبلڈن اوپن کا ٹائٹل جیتا تھا، کربر کو اس سے قبل آسٹریلین اوپن اور یو ایس اوپن ٹائٹلز جیتنے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔ سال کے تیسرے گرینڈ سلام ومبلڈن اوپن کے سلسلے میں کھیلے گئے وومنز سنگل فائنل میں اینجلیق  کربر نے عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 23 مرتبہ کی گرینڈ سلام چیمپئن اور امریکن سٹار سرینا ولیمز کو سٹریٹ سیٹس میں 6-3 اور 6-3 سے ہرا کر ٹائٹل اپنے نام کیا۔ دوسری جانب مائیک برائن اور جیک ساک پر مشتمل امریکن جوڑی نے ومبلڈن اوپن ٹینس مینز ڈبلز ٹائٹل اپنے نام کر لیا، یہ مائیک برائن کے کیریئر کا 17واں گرینڈ سلام ڈبلز ٹائٹل ہے،  انہوں نے  جنوبی افریقہ کے کلاسن اور ان کے نیوزی لینڈ جوڑی دار مارک وینس کو سخت مقابلے کے بعد ہرا کر ٹائٹل جیتنے کا اعزاز حاصل کیا۔ وومنز ڈبلز ٹائٹل کترینا سینیاکووا اور بربورا کریجسی کووا پر مشتمل جمہوریہ چیک کی جوڑی کے نام رہا۔ انہوں نے نیکول ملیشار اور کویٹا پشکے کی جوڑی کو ہرا کر ٹائٹل حاصل کیا۔

news title here

جیسن ہولڈر کی تباہ کن بائولنگ کی بدولت کالی آندھی نے بنگلہ دیش کو دوسرے اور آخری کرکٹ ٹیسٹ میچ میں یکطرفہ مقابلے کے بعد 166 رنز سے ہرا کر سیریز میں 2-0 سے وائٹ واش کر دیا، ویسٹ انڈین ٹیم دوسری اننگز میں 129 رنز بنا کر آئوٹ ہو گئی اور اس نے بنگال ٹائیگرز کو فتح کیلئے مجموعی طور پر 334 رنز کا ہدف دیا، جس کے تعاقب میں مہمان بنگلہ دیشی ٹیم تیسرے روز اپنی دوسری اننگز میں 168 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی، شکیب الحسن کے سوا بنگلہ دیش کا کوئی بھی کھلاڑی ہولڈر کی تندوتیز گیندوں کے سامنے زیادہ دیر وکٹ پر نہ ٹھہر سکا، شکیب 54 رنز بنا کر نمایاں رہے، 5 کھلاڑی دوہرا ہندسہ بھی عبور نہ کر سکے، ہولڈر نے میچ میں 11 وکٹیں لیکر ٹیم کی جیت میں کلیدی کردار ادا کیا، ہولڈر میچ اور سیریز کے بہترین کھلاڑی قرار پائے۔ کنگسٹن ٹیسٹ کے تیسرے روز ویسٹ انڈین ٹیم نے 19 رنز ایک کھلاڑی آئوٹ پر دوسری ادھوری اننگز دوبارہ شروع کی تو ڈیوون سمتھ 8 رنز پر کھیل رہے تھے، شکیب الحسن نے غیرمعمولی بائولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے میزبان کھلاڑیوں کو جم کر کھیلنے کا موقع نہ دیا اور پوری ٹیم 129 رنز بنا کر آئوٹ ہو گئی اور کالی آندھی نے بنگلہ دیش کو فتح کیلئے مجموعی طور پر 334 رنز کا ہدف دیا، سمتھ 16، کیموپال 13، کیرن پاویل 18، شے ہوپ 4، ہٹمائر 18، روسٹن چیس 32، کپتان جیسن ہولڈر اور میگل کمنز ایک، ایک، شینن گبرائل بغیر کوئی رن بنائے آئوٹ ہوئے، ڈورچ نے 12 رنز بنائے اور آئوٹ نہیں ہوئے، شکیب الحسن نے 6، مہدی حسن میراز نے 2 تیجل اسلام اور ابوجاوید نے ایک، ایک وکٹ لی۔ جواب میں بنگلہ دیشی ٹیم مطلوبہ ہدف حاصل کرنے میں ناکام رہی اور پوری ٹیم دوسری اننگز میں 168 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی، شکیب 54 رنز بنا کر نمایاں رہے، تمیم اقبال، قمرالاسلام ربی، ابوجاوید اور نورالحسن بغیر کوئی رن بنائے، لٹن داس 33، مومن الحق 15، محموداللہ 4، مشفق الرحیم 31، مہدی حسن میراز 10 رنز بنا کر آئوٹ ہوئے، تیجل اسلام 13 رنز بنا کر ناٹ آئوٹ رہے، ہولڈر نے 6، چیس نے2، گبرائل اور پال نے ایک، ایک کھلاڑی کو آئوٹ کیا۔

news title here
news title here
 بھارت میں ایک پولیس افسر نے جرائم روکنے میں ناکامی پر اپنے ہی خلاف ہی مقدمہ درج کرا لیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست اتر پردیش کے شہر میرٹھ میں ایس ایچ او نے تھانے کی حدود میں جانوروں کی سمگلنگ کی روک تھام میں ناکامی کا اعتراف کرتے ہوئے اپنے خلاف مقدمہ درج کرا دیا۔ ایس ایچ او راجیندرا تیاگی نے میڈیا کو بتایا کہ کھڑ کودا پولیس سٹیشن کا چارج سنبھالنے سے قبل ایک اصول وضع کیا تھا کہ فرائض سے  غفلت برتنے اور نااہلی  کے مرتکب اہلکار کے خلاف ایکشن لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا میں نے یہ تصور متعارف کرایا تھا کہ جرائم کی روک تھام میں ناکامی پر اہلکار کو  ذمہ دار ٹھہرایا جائےگا، اگر کسی علاقے میں چوری یا قتل کی ورادات ہوئی تو متعلقہ کانسٹیبل  کے خلاف کارروائی کی جائے گی، جبکہ متعلقہ کانسٹیبل کو جرائم پر قابو پانے کیلئے دو مواقع دیئے جائیں گے تاہم تیسری بار غفلت پر مقدمہ درج کیا جائے گا۔ وضع شدہ اصول پر مذکورہ ایس ایچ او نے جانوروں کی سمگلنگ میں مسلسل ناکامی پر اپنے خلاف بھی مقدمہ درج کرایا۔ واضح رہے کہ ایس ایچ او نے اب تک 6 کانسٹیبلز کے خلاف مقدمات درج کرا رکھے ہیں۔

news title here
news title here
news title here
news title here
news title here
news title here
news title here
news title here
اگر کوئی شخص پھل اور سبزیوں کا زیادہ استعمال کرتا ہے تو اول اس میں دمے سے متاثر ہونے کا خطرہ بہت کم رہ جاتا ہے اور دوم متاثر ہونے کے بعد بھی اس کی شدت میں اضافہ نہیں ہوتا۔ ایک سائنسی مطالعے سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ سبزیاں اور پھل کھانے والے افراد میں دمے کا خطرہ 30 فیصد تک کم ہوجاتا ہے، جبکہ دمے کے مریض پھل اور سبزیاں کھا کر مرض کی شدت کم کر سکتے ہیں۔ پھل اور سبزیاں ایسے اجزا سے بھرپور ہوتے ہیں جو جسم کے اندر جلن کو کم کرتے ہیں اور ان میں موجود اینٹی آکسیڈنٹس سانس لینے کے عمل کو بہتر بناتے ہیں۔ پاکستان سمیت دنیا بھر میں دمے کے مریض سبزیوں پر توجہ دے کر نظامِ تنفس کو بہتر بنا سکتے ہیں۔ یہ تحقیق فرانسیسی ماہرین نے کی ہے جس کے تحت اس تکلیف دہ کیفیت کو کم کیا جاسکتا ہے۔ دمے میں پھیپھڑوں کے اندر سوزش اور سوجن پیدا ہوجاتی ہے اور سانس لینے میں بہت دقت پیدا ہوتی ہے۔ اس مطالعے میں ماہرین نے 35 ہزار افراد کو شامل کیا۔ ان افراد کی اکثریت دمے کی شکار تھی لیکن اس کی کیفیت اور شدت مختلف تھی۔ طویل تحقیق کے بعد فرانس کی 13 جامعات اور دو سائنسی تحقیقی اداروں نے اپنا کردار ادا کیا ۔ تحقیق کا خلاصہ یہ ہے کہ پھلوں اور سبزیوں میں موجود کئی مفید اجزا مردوں میں دمے کو 30 فیصد اور خواتین میں 20 فیصد تک کم کرتے ہیں۔ تحقیق کرنے والے ماہر ڈاکٹر رولینڈ اینڈریان سولو نے کہا کہ ہماری تحقیق بتاتی ہے کہ صحت مندانہ غذائیں دمے سے بچانے میں معاون ثابت ہوسکتی ہیں۔ پھلوں اور سبزیوں میں کئی طرح کے بہترین اینٹی آکسیڈنٹس پائے جاتے ہیں جو دمے کو روکتے ہیں۔ دوسری جانب نمک، چینی، گوشت اور دیگر مرغن غذائوں سے جسم میں سوزش اور جلن بڑھتی ہے۔ ماہرین نے کہا ہے کہ غذا میں ان دونوں کا بڑھاوا نظامِ تنفس کو مضبوط بھی بناتا ہے۔
news title here
ماہر امراض قلب نے کہا ہے کہ زیادہ غصہ اور ہر وقت تیزی اور دبائو میں رہنا دل کی صحت کے لئے نقصان دہ ہے، مشروبات ، چائے و کافی کے زیادہ استعمال اور سگریٹ سے پرہیز کیا جائے۔ روزانہ واک کو معمول بنایا جائے۔ قائد اعظم گولڈ میڈل، بینظیر بھٹو گولڈ میڈل اور تمغہ حسن کارکردگی کے حامل احمد میڈیکل کمپلیکس کے معروف ماہر امراض قلب ڈاکٹر راجہ مہدی حسن نے ایک انٹرویو میں دل کے مختلف امراض میں مبتلا مریضوں کو مشورہ دیا کہ وہ سگریٹ نوشی سے پرہیز کریں۔ کھانا کم مقدار میں کھائیں، کھانا کھانے کے بعد دو گھنٹے تک سیر یا مشقت والے کام سے اجتناب کریں۔ دل کے مریض ہمیشہ چربی والے گوشت، بالائی اور پنیر کے استعمال سے گریز، آئس کریم، چاکلیٹ کیک وغیرہ سے بھی بچنے سمیت ہر قسم کے بازاری مشروبات ، کافی اور چائے کا استعمال ترک کر دیں۔ انہوں نے دل کے مریضوں کو مچھلی، تازہ سبزیوں، دالیں، چپاتی، ابلے ہوئے چاول، تازہ پھلوں اور بغیر کریم کے دوددھ استعمال کر سکتے ہیں ۔

عوامی سروے

سوال: الیکشن 2018 کیلئے کونسی جماعت آپکی فیورٹ؟