26 اپریل 2018
تازہ ترین
news title here

اسلام آباد ہائی کورٹ نے وزیر خارجہ خواجہ آصف کو تا حیات نااہل قرار دے دیا۔ نجی ٹی وی مطابق جسٹس اطہر من اللہ کی سربراہی میں تین رکنی لارجر بینچ نے فیصلہ سناتے ہوئے وزیر خارجہ خواجہ آصف کوتا حیات  نااہل قرار دے دیا گیا ۔ تحریک انصاف کے رہنما عثمان ڈار نے اقامہ چھپانے پر وزیر خارجہ خواجہ آصف کی نااہلی کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی تھی۔ عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد 10 اپریل کو فیصلہ محفوظ کیا جو آج سنایا گیا۔ جبکہ دوسری جانب خواجہ آصف نے اپنی نااہلی سے متعلق ہائی کورٹ کا  فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان کردیا ہے۔ اپنے ایک انٹرویو میں خواجہ آصف نے کہا ہے کہ وہ اپنی نااہلی سے متعلق اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کریں گے، عدالت میں اقامہ کو جواز بنانا کوئی کمال نہیں، کمال تو یہ ہوتا کہ میں نے اقامہ چھپایا ہوتا اور وہ عدالت میں پیش کرتے، حقیقت یہ ہے کہ 1991 سے میرا اقامہ اور بیرون ملک بینک اکائونٹس ظاہر ہیں، ان کا ذکر میرے انتخابی گوشواروں میں بھی ہے۔

news title here
news title here
news title here
 ایل او سی میں بھارتی فوج کی سول آبادی پر فائرنگ سے 2 پاکستانی شہری شہید ہوگئے۔ نجی ٹی وی  کے مطابق بھارتی فوج کی اشتعال انگیزی اور بربریت دن بدن بڑھتی جارہی ہے، جنگی جنون میں مبتلا بھارتی فوج ورکنگ بائونڈری اور  کنٹرول لائن سے ملحقہ شہری آبادی کو نشانہ بنارہی ہے۔ بھارتی فورسز نے ایک  بار پھر ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے لائن آف کنٹرول کے بھمبر سیکٹر میں سول آبادی کو نشانہ بنایا۔  شہید ہونے والوں میں وٹالہ گائوں کے محمد رفیق ولد محمد شریف اور وزیر ولد اللہ رکھا شامل ہیں۔ جب کہ زخمی ہونے والے محمد عثمان اور جنت بی بی کو فوری طور پر سول ہسپتال برنالہ منتقل کیا جب کہ جہاں انہیں فوری طبی امداد دی گئی اور بعد میں ڈسٹرکٹ ہسپتال بھمبرمنتقل کردیا گیا۔
news title here
 سابق وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ آج تک نیب میں میری طرح کا کوئی مقدمہ نہیں آیا۔ اسلام آباد میں پارٹی رہنمائوں سے خطاب کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ نیب میں ہمارے سوا جتنے بھی مقدمات ہیں ان کا تعلق کرپشن سے ہے یا سرکاری خزانے میں خورد برد سے ہے، مگر آج تک میری طرح کا مقدمہ کوئی نیب میں نہیں آیا، نیب نے جو  مقدمات بنائے وہ  ہماری فیملی کے خلاف ہیں، میرے خلاف مقدمہ نہ کرپشن کا ہے نہ ہی اختیارات کے استعمال کا، جبکہ اب نیا مقدمہ بھی تیار کیا جارہا ہے جس میں رائے ونڈ روڈ کو 20 فٹ سے 24 چوڑا کرنے  کی تفتیش کی جائے گی۔  ملک میں 70 سال سے سیاستدانوں اور منتخب نمائندوں کو  جلاوطن اور پابند سلاسل  کرنے اور پھانسی دینے کی روایت  ہے، مجھے 14 ماہ اٹک جیل میں بند کیا گیا، اس کی وجہ بھی آج تک نہیں بتائی گئی تاہم اس کے باوجود میں تیسری بار وزیر اعظم بنا، ملک میں کسی وزیراعظم کو مدت پوری نہیں کرنے دی گئی جس کی وجہ تلاش کرنی چاہیے، کسی ایک شخص کے ساتھ زیادتی اتنی دور تک نہیں جانی چاہیے، میں اداروں کا ہمیشہ احترام کرتا رہا ہوں، میری پارٹی میں لوگ بھاگنے والے نہیں حالات کا ڈٹ کر مقابلہ کرنے والے ہیں، جو آج میرے ساتھ ہیں وہ میرے مشکل وقت کے ساتھی ہیں اور جو چھوڑ گئے ہیں وہ ہم میں سے نہیں تھے۔  مجھے ملک و ملت اور قوم سے محبت ہے، ہر بار قیاس آرائی ہوتی ہے کہ نوازشریف لندن چلے گئے اب واپس نہیں آئیں گے  لیکن میں واپس آگیا اور تمام قیاس آرائیاں جھوٹی پڑ جاتی ہیں، ووٹ کو عزت دو پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرنا پڑے گا۔

فرانسیسی صدر ایمانیول میکرون نے کہا ہے کہ میرے خیال میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ ایران سے جوہری معاہدہ ختم کردیں گے۔جمعرات کو امریکی نشریاتی ادارے کے مطابق 3روزہ دورہ امریکا مکمل کرنے کے بعد روانگی سے قبل پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون نے کہا کہ میں یقین سے نہیں کہہ سکتا کہ ڈونلڈ ٹرمپ 12 مئی کو ایران کےساتھ ہونےوالے جوہری معاہدے پر کیا فیصلہ لیں گے،تاہم یہ یقین سے کہہ سکتا ہوں کہ امریکی صدر معاہدے کو کوڑے میں ڈال کر سیاسی خدشات کو دور کریں گے۔انہوں نے کہا کہ اوول آفس میں امریکی ہم منصب سے ہونیوالی پرائیوٹ ملاقات میں ڈونلڈ ٹرمپ جوہری معاہدے پر تنقید کرتے رہے،اور اسے تاریخ کا بدترین معاہدہ اور نہ جانے کیا کیا کہتے رہے۔انہوں نے کہا کہ امریکی صدر کو واضح کر دیا کہ جوہری معاہدے کے خاتمے سے نیا پنڈورا باکس کھل جائےگا اور میرے خیال میں ڈونلڈ ٹرمپ ایران سے جنگ نہیں چاہتے۔واضح رہے کہ امریکی اور فرانسیسی صدور نے ایران سے نئے جوہری معاہدے کا عندیہ دےدیا۔گزشتہ روز دونوں صدور نے ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران ایران سے جوہری معاہدہ ختم کرنے کا عندیہ دیا تھا۔ امریکی صدر نے کہا کہ ہم بہت بڑا کچھ کرنے جارہے ہیں اور شاید یہ ایران سے معاہدہ بھی ہوسکتا ہے تاہم کوئی بھی نیا معاہدہ مضبوط بنیاد پر ہوگا۔      

news title here
news title here
news title here
news title here
news title here
news title here
پاکستان کی معروف اداکارہ فضا  علی نے کاروباری شخصیت ایاز ملک سے دوسری شادی کر لی ، دوسری شادی کی خبر نے ہر کسی کو حیران کر دیا تاہم ان کے چاہنے والے انہیں زندگی کے نئے سفر کے آغاز پر دعائیں اور مبارک باد پیش کر رہے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق فضا علی کو شوبز کی دنیا میں شہرت انتہائی معروف ڈرامے  لو  لائف اور لاہور  سے ملی،  جس میں انہوں نے لیڈ رول ادا کیا اور شہرت کی بلندیوں پر پہنچ گئیں، فضا علی نے اچانک اپنی شادی کی خبر فیس بک اکائونٹ پر جاری کر کے دی اور انہوں نے اپنا فیس بک اکائونٹ پر نام بھی تبدیل کر کے فضا ایاز ملک کر دیا ۔ فضا علی نے فیس بک پر جاری اپنے پیغام میں کہا کہ میری شادی ایاز ملک کے ساتھ ہو گئی ہے اور اللہ کی رحمت سے یہ اعلان کرتے ہوئے مجھے خوشی ہو رہی ہے ، میں شوبز سے بھی کنارہ کشی اختیار کر رہی ہوں، تاہم میں صرف ابھی اپنا ایک ہی شو جار ی رکھوں گی ۔ واضح رہے کہ فضا علی نے پہلی شادی 2007 میں فواد فاروق کے ساتھ کی تھی تاہم کچھ تنازعات کے باعث ایک سال قبل ان کی علیحدگی ہو گئی تھی اور ان کی ایک بیٹی بھی ہے  ۔
news title here
گلوکارہ و اداکارہ رابی پیرزادہ نے جنسی ہراساں کئے جانے کے خلاف شروع کی گئی مہم  می ٹو کے حوالے سے بات کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ انہیں شوبز میں مردوں نے نہیں بلکہ خواتین نے ہراساں کیا۔ حال ہی میں میڈیا سے گفتگو میں رابی پیرزادہ نے میشا شفیع اور علی ظفر کے تنازع پر اظہار خیال کیا اور اس ویڈیو کو اپنے انسٹاگرام اکائونٹ پر شیئر کیا۔ ویڈیو میں رابی پیرزادہ نے علی ظفر کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ یہ سب پبلسٹی اسٹنٹ ہے ایسے کوئی خاتون ہراساں نہیں ہوجاتی، شوبز میں گھریلو جھگڑوں سے لے کر طلاق یا میل ملاپ کے جو بھی معاملات سامنے آتے ہیں، سب پبلک کے لئے ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں بھی طویل عرصے سے شوبز انڈسٹری میں ہوں، اگر آپ عزت دیں گے تو آپ کو عزت ملتی ہے، ہماری شوبز کی خواتین می ٹو مہم کا غلط استعمال کر رہی ہیں۔  انہوں نے کہا کہ  خواتین کے لئے مردوں پر ہراساں کرنے کا الزام لگانا  بہت آسان ہوگیا ہے، مجھے ایسا کرنا ہو تو میں بھی کسی پر لگا دوں لیکن ایسا کرنا بالکل درست نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ جب شوبز انڈسٹری میں قدم رکھا تو انہیں مردوں نے بہت عزت دی لیکن خواتین نے ہراساں کرنے کی بہت کوشش کی تھی، لیکن انہوں نے ان کوششوں کو نظرانداز کرکے فاصلہ برقرار رکھا تھا۔
news title here

چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی نے حسن علی کے واہگہ بارڈر واقعے پر بھارتی اعتراض مسترد کر دیا۔ آئی سی سی میٹنگز کے موقع پر بھارتی صحافی کی جانب سے جب اس بارے میں سوال ہوا تو انہوں نے کہا کہ کرکٹرز پہلے بھی واہگہ بارڈر پر جاتے رہے ہیں۔ فاسٹ بائولرز وہی کرتے ہیں جو ان کا دل چاہے، میں اس بات کو اہمیت نہیں دیتا، ویسے بھی میں اس حوالے سے کوئی بات نہیں کرنا چاہتا ورنہ آپ اس میں بھی سیاست شامل کر لیں گے۔

news title here

 پاکستانی نږاد برطانوی باکسر عامر خان نے لیور پول میں کینیڈین حریف کے خلاف جیتنے والی فائٹ پاکستانیوں کے نام کردی۔ اپنے ویڈیو پیغام میں باکسر عامر خان نے کہا کہ پاکستانیوں نے جیت کیلئے دعائیں کیں اور ان کی کامیابی صرف ان کی نہیں بلکہ پاکستان میں ان کے سپورٹرز کی بھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان جا کر اپنے مداحوں سے ملاقات کروں گا ،جنہوں نے مجھے سپورٹ کیا۔ عامر خان پاکستان میں باکسنگ لیگ کا ارادہ بھی رکھتے ہیں اور اس حوالے سے انہوں نے کہا کہ پاکستان میں عامر خان سپر باکسنگ لیگ کرانے کا ارادہ ہے۔ عامر خان نے کہا کہ وہ آئندہ چند ہفتوں میں پاکستان آ رہے ہیں جہاں باکسنگ لیگ سے متعلق بڑا اعلان کریں گے۔ یاد رہے کہ 21 اپریل کو برطانیہ کے شہر لیور پول میں ہونے والے مقابلے میں عامر خان نے کینیڈین حریف فل لو گریکو کو صرف 39 سیکنڈ میں ہی ناک آئوٹ کر دیا تھا۔

news title here

سوئیڈن میں منعقد ہونے والی ورلڈ ٹیبل ٹینس چیمپئن شپ میں شرکت کا قومی ٹیبل ٹینس ٹیم کا سپنا لاہور ایئرپورٹ پر ٹوٹ گیا، کھلاڑیوں کو لاہور ایئرپورٹ پر چھوڑنے کے لئے آنے والے رشتہ داروں کے سامنے شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا ۔ امیگریشن حکام نے وزارت داخلہ کا لیٹر نہ ہونے پر ورلڈ ٹیبل ٹینس چیمپئن شپ میں شرکت کے لئے قومی ٹیم کوسوئیڈن  جانے سے روک دیا۔ قومی ٹیبل ٹینس ٹیم کے 5 کھلاڑیوں اور ایک آفیشل نے سوئیڈن میں 29 اپریل سے 6 مئی تک کھیلی جانے والی ورلڈ ٹیبل ٹینس چیمپئن شپ میں شرکت کے لئے لاہور سے غیر ملکی ایئرلائن کی پرواز کے ذریعے روانہ ہونا تھا۔ قومی ٹیبل ٹینس ٹیم عاصم قریشی، رمیز حسین، عائشہ اقبال، فاطمہ خان اور محمودہ پر مشتمل ہے۔ ٹیم آفیشل عرفان اللہ خان کے مطابق لاہور کے علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر امیگریشن حکام نے وزارت داخلہ کا لیٹر نہ ہونے کے باعث ٹیم کو سوئیڈن جانے سے روک دیا۔ عرفان اللہ خان کے مطابق بیرون ملک جاتے ہوئے اس سے قبل کبھی کھلاڑیوں سے وزارت داخلہ کا لیٹر نہیں مانگا گیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ٹیبل ٹینس فیڈریشن کی گروپ بندی کھلاڑیوں کے جانے کی راہ میں رکاوٹ بنی ۔

news title here

آسٹریلوی آل رائونڈر مچل مارش نے ٹخنے کی سرجری کرانے کا فیصلہ کر لیا ، جس کے باعث وہ انگلش کائونٹی سیزن کے ابتدائی میچز میں سرے کلب کو دستیاب نہیں ہوں گے، ستمبر ، اکتوبر میں پاکستان کے خلاف شیڈول ٹیسٹ سیریز میں شرکت بھی مشکوک ہو گئی۔ مچل مارش آسٹریلوی ٹیم میں واپسی کے بعد بھرپور فارم میں ہیں، انگلینڈ اور جنوبی افریقہ کے خلاف کھیلی گئی ٹیسٹ سیریز میں ان کی بیٹنگ اوسط 45 رہی، لیکن انجری کے باعث انہیں ایک مرتبہ پھر کرکٹ میدانوں سے دور رہنا پڑے گا۔26 سالہ آسٹریلوی آل رائونڈر نے اپنے بیان میں کہا کہ ڈاکٹرز نے طبی معائنے کے بعد انہیں فوری طور پر ٹخنے کی سرجری کا مشورہ دیا ، جس کی وجہ سے وہ کائونٹی سیزن کے ابتدائی میچز نہیں کھیل سکیں گے، بلاشبہ یہ میرے لئے مایوس کن ہے لیکن میں سو فیصد فٹنس حاصل کرنے اور جاندار کم بیک کرنے کیلئے سرتوڑ کوشش کروں گا۔

news title here
news title here
چین میں دنیا کا پہلا بینک کھولا گیا، جس میں انسانی عملہ موجود نہیں اور ان کی جگہ روبوٹ افسران مختلف امور انجام دیتے ہیں۔ دنیا میں کسی بھی بینک کی یہ پہلی شاخ ہے جہاں چہرے کی شناخت، مجازی حقیقت اور مصنوعی ذہانت سمیت جدید رحجانات کو استعمال کیا گیا اور یہاں انسان نما روبوٹ آپ کی خدمت کیلئے حاضر ہیں۔ یہ برانچ چائنہ کنسٹرکشن بینک نے شنگھائی میں کھولی ہے جہاں ٹیکنالوجی سے لگائو رکھنے والے صارفین بڑی تعداد میں آ رہے ہیں اور خود بینک بھی زیادہ تنخواہ والے سٹاف کو بھرتی نہ کرنے پر خوش ہے۔ اس بینک میں قدم رکھیں تو ایک انسان نما  روبوٹ، آواز پہچاننے والی ٹیکنالوجی استعمال کرتے ہوئے آپ سے بات چیت کرتا ہے۔ بینک میں کئی اے ٹی ایم اور خود کار مشینیں ہیں۔ یہ مشینیں اکائونٹ کھولنے، رقم کی منتقلی، منی ایکسچینج، سونے میں سرمایہ کاری اور دیگر خدمات فراہم کرتی ہیں۔ بینک انتظامیہ کے مطابق انسانوں کے بغیر کام کرنے والا یہ خود کار بینک رقم اور غیر رقمی سہولیات کی 90 فیصد ضروریات پوری کر سکتا ہے۔ علاوہ ازیں کسی مشکل کی صورت میں صارفین ویڈیو لنک کے ذریعے دور بیٹھے انسانی افسران سے بات چیت بھی کر سکتے ہیں۔  سی سی بی کے مطابق یہ شاخ ٹیکنالوجی کی آزمائش اور اسے بہتر بنانے میں بہت مددگار ثابت ہوگی تاہم بینک نے کہا ہے کہ بااثر اور امیر صارفین کیلئے انسانی عملہ بھی ضروری ہے۔

news title here
فرانس میں کام کرنے والے پلمبر فلپ لارے کو یقین ہے کہ اس کے آنجہانی والد جین میری لارے آنجہانی ہٹلر کے ناجائز بیٹے تھے۔ فلپ کا کہنا تھا کہ اس کی فرانسیسی دادی شارلو لووئی کے 1916میں ہٹلر سے بڑے قریبی تعلقات تھے۔ روسی ٹی وی چینل والوں نے اس کا ڈی این اے لے لیا ، جسے ماسکو کی لیباریٹری میں ٹیسٹ کیا جائیگا۔ واضح ہو کہ روس کے پاس تاریخی اعتبار سے ہٹلر کی باقیات کا کچھ حصہ اب بھی موجود ہے۔ پلمبر کا دعویٰ ہے کہ اسکی دادی کی ایک ایسی تصویر بھی اس کے پاس ہے جس کو دیکھ کر ہٹلر نے اپنی ایک پینٹنگ بنائی تھی۔ ہٹلر کی باقیات ماسکو میں کے جی بی کے سابق ہیڈکوارٹر کی تجوری میں موجود ہیں۔ لارے  نے کہا ہے کہ وہ جس زمانے کی بات کر رہا ہے اس زمانے میں نازی لیڈر جرمن فوج میں ایک کارپورل کے طور پر کام کر رہا تھا۔ یہ زمانہ 1916کے لگ بھگ کا ہے جب جرمنی اور فرانس میں جنگ جاری تھی۔ واضح ہو کہ خود ہٹلر کی باقیات کو بہت سے لوگ شک و شبے کی نگاہ سے دیکھ رہے ہیں۔ غالباً ان باقیات کو سٹالن کے فوجیوں نے برلن کے تہہ خانے سے 1945میں نکالا تھا۔ جہاں نازی لیڈر نے امکانی طور پر خودکشی کرلی تھی۔

news title here
جاپان کے 8 سالہ شہری رائیوسی امائی،  بروس لی کی فلمیں دیکھ دیکھ کر خود کو اس کردار میں ڈھالنے کی کوشش کرتا ہے اور اس کے لئے وہ ہر روز 4 گھنٹے سے زیادہ ورزش اور ٹریننگ کرتا ہے جس سے اس نے اپنا بدن بروس لی جیسے کسرتی بدن میں ڈھال لیا ہے۔ رائیوسی نے تین سال قبل بروس لی کی معرکتہ الآرا فلم دی گیم آف ڈٰیتھ  دیکھی تھی جس کے بعد بچے نے خود کو سخت محنت کے بعد بروس لی جیسا بنایا اور اب سوشل میڈیا پر اس کے لاکھوں فالوورز ہیں ، جبکہ اسے کئی ٹی وی پروگراموں میں بھی مدعو کیا گیا ۔ ایک پروگرام سپرکڈز میں اس نے بروس لی کے تمام مشہور ایکشن سین دوبارہ کرکے لوگوں کو حیران کر دیا۔ چھوٹا بروس لی روزانہ سکول جانے سے قبل ڈیڑھ گھنٹہ ورزش کرتا ہے۔ سکول سے واپسی پر وہ کک لگاتا اور ننچکو چلاتا ہے، جس کے بعد وہ ایک گھنٹہ دوڑ لگاتا ہے۔ یوں مجموعی طور پر روزانہ وہ ساڑھے 4 گھنٹے ورزش کرتا ہے۔ رائیوسی امائی کے فیس بک پر 2 لاکھ 90 ہزار فالوورز ہیں اور انسٹا گرام پر 33 ہزار افراد اس کے مداح ہیں، جبکہ یوٹیوب چینل پر وہ آئے دن اپنی ویڈیوز پوسٹ کرتا ہے۔  8 سالہ بچہ مستقبل میں مارشل آرٹس کا ماہر بننا چاہتا ہے، تاہم سوشل میڈیا پر ناقدین نے اس کے والدین پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس بچے سے اپنے آئیڈیل کی تلاش میں برداشت سے باہر مشقت کرائی جارہی ہے۔

news title here
 کچھوے طرح طرح کے ہوتے ہیں۔ رنگ اور  سائز دونوں کا فرق عام طور پر نظر آتا ہے جبکہ بعض کچھوے انتہائی خوبصورت بھی نظر آتے ہیں اور انہیں مہنگے داموں فروخت کیا جاتا ہے۔ مقامی حکام نے مڈغا سکر کے ساحلی علاقے میں ایک  دو منزلہ مکان سے انتہائی نادر قسم کے 10ہزار کچھوے برآمد کئے، جنہیں انتہائی ناگفتہ بہ حالت میں گھر کے اندر بند کرکے رکھا گیا تھا۔ حکام  نے کہا کہ پڑوسیوں نے اس مکان سے اٹھنے والی بدبو کی وجہ سے پولیس سے رابطہ کیا تھا اور جب پولیس موقع پر پہنچی تو انتہائی ہولناک منظر نظر آیا۔ پولیس چھاپے کے وقت گھر میں کوئی بھی نہیں تھا ، مگر اس کی ایک بڑی وجہ یہ بھی ہو سکتی ہے کہ پورے مکان میں ہر طرف صرف کچھوے ہی کچھوے تھے۔ کوئی جگہ ایسی خالی نہیں تھی جہاں کچھوئوں کے علاوہ کوئی دوسرا قدم بھی رکھ سکتا ہو۔ ان کچھوئوں کی بو بھی عام انسان کیلئے ناقابل برداشت تھی۔ مقامی ماحولیاتی ادارے کی سربراہ سواری کا کہنا ہے کہ مکان سے انتہائی ناقابل برداشت قسم کی بدبو کی اطلاع پر وہ پولیس کے ساتھ خود بھی وہاں گئیں۔ نیشنل جیوگرافی  ڈاٹ کام کو  انہوں نے بتایا کہ  اب تک اس قسم کا ہولناک منظر میں نے زندگی بھر نہیں دیکھا تھا۔ گھر سے اٹھنے والی بو  ان ہزاروں کچھوئوں کی آلائش کی وجہ سے اور بھی ناقابل برداشت  ہوگئی تھی ۔ غرض یہ کہ ہر جگہ یہ کچھوے موجود تھے جن میں سے 180کچھوے پولیس کے پہنچنے تک مر چکے تھے۔ پولیس نے  مالک مکان سمیت 3افراد کو گرفتار کرلیا ، جن میں 2 خواتین شامل ہیں۔ ملائیشیا کے حکام نے گزشتہ سال مئی میں انکشاف کیا تھا کہ انہوں نے تقریباً330نادر قسم کے  ایسے کچھوے پکڑے تھے جو مڈغاسکر سے لائے گئے تھے اور جن کی مالیت ڈھائی لاکھ ڈالر تھی۔

news title here
news title here
news title here
news title here
news title here
ایک نئی تحقیق میں سائنس دانوں نے  بتایا ہے کہ ڈائیٹ مشروبات صحت مند نہیں ہوتے۔ تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ مصنوعی مٹھاس ، جیسے کہ سپارٹیم کا تعلق  موٹاپے اور ذیابیطس سے ہوتا ہے۔ پہلے کی جانے والی تحقیق میں بتایا گیا تھا کہ زیرو کیلوری شکر کے متبادل لوگوں کی خون کی رگوں کو نقصان پہنچاتے ہیں۔ جس سے ان میں سٹروک اور ڈیمنشیا کے خطرات بڑھ جاتے ہیں۔ حالیہ تحقیق کے متعلق مارقیٹ یونیورسٹی کے سربراہ مصنف ڈاکٹر برائن ہوفمین کا کہنا تھا کہ مصنوعی مٹھاس کا استعمال ترک کر دینا، جو ذیابیطس اور موٹاپے سے متعلق صحت کے تمام اثرات کا حل ہے، اتنا آسان نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ اعتدال پسندی ضروری چیز ہے۔ اگر کسی کو کوئی چیز اپنی غذا سے مکمل ختم کرنا مشکل ہے تو اسے کم کر دیں۔ امریکا میں 2کروڑ 90لاکھ سے زیادہ افراد ذیابیطس میں مبتلا ہیں اور برطانیہ میں ہر 17میں سے ایک فرد کو ذیابیطس ہے۔ تحقیق کے متعلق ڈاکٹر ہوفمین نے کہا کہ شکر اور مصنوعی مٹھاس دونوں منفی اثرات مرتب کرتے ہیں جو موٹاپے اور ذیابیطس سے جڑتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ہم نے مشاہدہ کیا کہ معتدل ہونے میں آپ کا جسم شوگر کو قابو کر لیتا ہے۔ جب جسم میں ایک عرصے تک ضرورت سے زیادہ کسی چیز کی کھپت ہوتی ہے تو نظام کام کرنا بند کر دیتا ہے۔
news title here
عام طور پر والدین ویڈیو گیمز کو اپنے بچوں کی ذہنی نشوو نما کا دشمن سمجھتے ہیں، لیکن جدید تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ ویڈیو گیمز سے بچوں میں پڑھنے کی صلاحیت بہتر ہونے کے علاوہ ریاضی اور سائنس میں بھی ان کی کارکردگی بہتر ہوتی ہے۔ آسٹریلیا کی آر ایم آئی ٹی یونیورسٹی آف ملبورن کے پروفیسر کی سربراہی میں ماہرین کی ٹیم نے ویڈیو گیمز کے بچوں کی ذہنی نشو ونما پر اثرات کے حوالے سے تحقیق کی، جس کے مطابق بچوں میں روزانہ ویڈیو گیم کھیلنے سے ان کی قوت فیصلہ اور حافظے پر اچھے اثرات پڑتے ہیں جو تعلیم کے میدان میں ان کی مدد کرتے ہیں۔ اس مطالعے میں پروگرام فار انٹرنیشنل سٹوڈنٹس اسسمنٹ نامی ٹیسٹ کے نتائج استعمال کئے گئے۔ یہ 15 سال عمر کے بچوں کا بین الاقوامی ٹیسٹ ہے ، جس میں ان کی عادات و اطوار کے بارے میں معلومات حاصل کرتے ہوئے ان میں مطالعے ، سائنس اور ریاضی کے حوالے سے قابلیت جانچی جاتی ہے۔ پیسا کے نام سے مشہور اس ٹیسٹ سے حاصل ہونے والے نتائج ہر 3 سال بعد شائع کئے جاتے ہیں۔ مطالعے کے مطابق 15 سال کی عمر کے وہ بچے جو روزانہ ایکشن ویڈیو گیمز کھیلتے ہیں، سائنس میں ان کا اسکور عالمی اوسط سے 17 پوائنٹ زیادہ جب کہ ریاضی میں 15 پوائنٹ زیادہ رہا۔ ایسا کیوں ہوا؟ اس سوال کا جواب دیتے ہوئے ماہرین نے کہا کہ ایکشن گیمز میں بچوں کو  جلدی فیصلے کرکے ان پر عمل بھی کرنا ہوتا ہے، جبکہ گیم کے پچھلے لیولز میں آنے والی رکاوٹوں کو بھی یاد رکھنا پڑتا ہے، کیونکہ اگلے لیولز میں ان کی تکرار جاری رہتی ہے۔ ان باتوں کا اثر بچوں کی یادداشت اور قوت فیصلہ پر پڑتا ہے جو حساب کتاب کرنے اور سبق یاد کرنے میں ان کی مدد کرتی ہیں۔ اسی طرح وہ بچے جو آن لائن معموں پر مشتمل گیمز کھیلتے ہیں، ان میں مسائل حل کرنے کی صلاحیت خوب تر ہوتی ہے۔ غرض کہ یہ تمام پہلو، جو بظاہر تعلیم سے کوئی تعلق نہیں رکھتے، تعلیم کے میدان میں بہتر کارکرگی دکھانے میں بچوں کے مددگار بنتے ہیں۔ البتہ ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ اس مطالعے کو پرتشدد ویڈیو گیمز کے حق میں دلیل نہ سمجھا جائے کیونکہ ان کے منفی اثرات انتہائی خطرناک ہوتے ہیں۔ اس کے برعکس اساتذہ کے لئے ان کا مشورہ ہے کہ تدریس میں مدد دینے کے لئے کلاس روم میں ایسے ویڈیو گیمز سے مستفید ہوا جاسکتا ہے۔ جن میں تشدد نہ ہو اور جو کھیل کھیل میں تعلیم کی طرف راغب کرنے والے ہوں۔ اسی مطالعے کے دوسرے حصے میں پروفیسر نے بچوں کی تعلیم میں سوشل میڈیا اور غیرملکی زبان میں تدریس کو اہم رکاوٹیں قرار دیا ۔

عوامی سروے

سوال: آپ کے خیال میں پاکستان کا اگلا وزیراعظم کون ہونا چاہیے؟