تازہ ترینحالات حاضرہخبریںدنیا سےروس یوکرائن جنگ

یوکرینی شہریوں کے لیے روسی صدر پیوٹن کا بڑا قدم

 روسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے ایک ایسے حکم نامے پر دستخط کر دیے ہیں جس کے بعد اب یوکرینی شہری غیر معینہ مدت تک روس میں قیام کر سکیں گے

تفصیلات کے مطابق یوکرینی شہریوں کے لیے روسی صدر پیوٹن نے بڑا قدم اٹھا لیا ہے، اب یوکرین کے شہری روس میں غیر معینہ مدت تک رہ سکیں گے، اور ورک پرمٹ کے بغیر بھی قیام کر سکیں گے۔

پیوٹن نے اس سلسلے میں حکم نامے پر دستخط کر دیے، اس نئے اقدام سے اس اجازت نامے سے مستفید ہونے کا اہل ہونے کے لیے درخواست دہندگان کے انگلیوں کے نشان، تصاویر اور منشیات اور کسی بھی متعدی بیماریوں کا ٹیسٹ کرانا لازمی ہوگا

حکم نامے میں ان لوگوں کے لیے مالی فوائد متعارف کرائے گئے ہیں جو یوکرین کی سرزمین چھوڑ کر روس آنا چاہتے ہیں، صدر پیوٹن نے بزرگ افراد سمیت پنشنرز، معذور یا حاملہ خواتین کو سماجی فنڈز سے رقوم کی ادائی کی بھی ہدایت کی ہے۔

10 ہزار روبل (170 ڈالرز) ماہانہ پنشن ان لوگوں کو دی جائے گی جو 18 فروری سے یوکرین چھوڑنے پر مجبور ہو گئے ہیں، معذور افراد بھی اسی ماہانہ امداد کے اہل ہوں گے، جب کہ حاملہ خواتین یک طرفہ فائدے کی حق دار ہوں گی۔

حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ ادائیگی یوکرین کے شہریوں اور ڈونیٹسک اور لوہانسک عوامی جمہوریہ کو کی جائے گی، یہ مشرقی یوکرین میں دو الگ ہونے والے روسی حمایت یافتہ علاقے ہیں، جنھیں ماسکو نے فروری میں آزاد تسلیم کیا تھا، جسے یوکرین اور مغرب کی جانب سے غیر قانونی قرار دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ اب تک یوکرین کے لوگ 180 دن کی مدت کے اندر زیادہ سے زیادہ 90 دن تک روس میں رہ سکتے تھے، جب کہ زیادہ دیر تک رہنے یا کام کرنے کے خواہاں افراد کو خصوصی اجازت نامہ یا ورک پرمٹ حاصل کرنا پڑتا تھا

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button