Welcome to JEHANPAKISTAN   Click to listen highlighted text! Welcome to JEHANPAKISTAN
تازہ ترینخبریںپاکستان سے

آئی ایم ایف چاہتا ہے ملکی معیشت کی رفتار سست کی جائے

وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف چاہتا ہے مہنگائی کم کرنے کے لیے ملکی معیشت کی رفتار کو سست کیا جائے، اس کے لیے ہمیں شرح سود بڑھانا ہوگی۔

کراچی آمد پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے مفتاح اسماعیل نے کہا کہ آئی ایم ایف سے کیے گئے عمران خان اور شوکت ترین کے معاہدے کے تحت آج قیمت بڑھائی تو ڈیزل ڈیڑھ سو روپے اور پیٹرول سو روپے مہنگا ہوجائے گا۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ آئی ایم ایف سے مذاکرات کے آخری مرحلے پر دوحہ جارہا ہوں، قوم کو کہتا ہوں آئی ایم ایف سے معاملات طے کر کے اچھی خبر لے کر آؤں گا۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت میں آنے سے پہلے تیرہ سو ارب روپے کے خسارے کا تخمینہ تھا، شوکت ترین نے غلط بیانی کی، بجلی اور پیٹرولیم مصنوعات کی سبسڈی کی مد میں کوئی رقم چھوڑ کر نہیں گئے۔

مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ ہم ڈیڑھ ماہ تک سبسڈیز کو آگے لے کر چلیں گے، شوکت ترین بتا دیں کہاں پیسے چھوڑ کر گئے تھے، آپ کوئی پیسے چھوڑ کر نہیں گئے۔

انہوں نے عمران خان کے لانگ مارچ کے اعلان پر ردّ عمل دیتے ہوئے کہا کہ عمران خان دس ہزار لوگ بھی اسلام آباد نہیں لاسکتے، پچھلی مرتبہ ان کے دھرنے میں 400 لوگ ہوتے تھے، باقی طاہرالقادری کے لوگ ہوتے تھے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان ہر دور میں پاکستان کی ترقی میں رکاوٹ ڈالتے ہیں، وہ ہمیشہ ذاتی مفاد کو ملکی مفاد پر ترجیح دیتے ہیں، ان کا لانگ مارچ فرح گوگی کو بچانے کے لیے ہے، سابق وزیر اعظم دھرنا اور سیاست کررہے ہیں، اس سے ملک کو نقصان ہوگا۔

انہوں نے عمران خان کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ ہم ایل این جی کے طویل مدتی معاہدے کر کے گئے تھے، آج عمران خان کی وجہ سے پاکستان میں ایندھن، ایل این جی اور کوئلے کی کمی ہے، یہ بات درست ہے کہ ملک میں بجلی اور گیس کی لوڈشیڈنگ ہے، کراچی میں صنعتوں میں بھی گیس کی لوڈشیڈنگ ہورہی ہے، پچھلی حکومت نے نئے ٹرمنلز نہیں لگائے اور ایندھن بھی نہیں خریدا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Click to listen highlighted text!