تازہ ترینخبریںپاکستان سے

جسٹس جاوید اقبال کی قیادت میں لاپتہ افراد کیلئے قائم قومی کمیشن کی شاندار کارکردگی

 

چئیرمین جسٹس جاوید اقبال کی قیادت میں لاپتہ افراد کیلئے قائم قومی کمیشن کی شاندار کارکردگی کی بدولت 30اپریل 2022 تک6408کیسز نمٹا دیئے۔ لاپتہ افراد کمیشن کے سیکرٹری کی جانب سے اپریل2022 کی جاری کی گئی رپورٹ کے مطابق مارچ 2022تک لاپتہ افراد کے لئے قائم کمیشن کو 8539کیسز موصول ہوئے جبکہ اپریل 2022کے دوران 122 نئے کیس لاپتہ افراد کیلئے قائم قومی کمیشن کو موصول ہوئے جس کے بعد لاپتہ ہونے والے افراد سے متعلق کیسز کی تعداد مجموعی طور پر 8661 ہوگئی۔ جن میں سے لاپتہ افراد کیلئے قائم قومی کمیشن نے30اپریل 2022؁ تک6408 لاپتہ افراد کے کیسز نمٹا دیئے ہیں اور اس وقت لاپتہ افراد کی تعداد 2253ہے۔

لاپتہ افراد کیلئے قائم قومی کمیشن نے اپریل2022 کے دوران 431 سماعتیں کیں جن میں سے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 178،کراچی میں 109جبکہ کوئٹہ میں 144سماعتیں شامل ہیں۔

لاپتہ افراد کے قومی کمیشن کی طرف سے30 اپریل 2022تک 6408لاپتہ افراد کے کیسز نمٹانے اور ان کی بحفا ظت گھروں کو واپسی یقینی بنانے کے لئے قومی کمیشن کے چئیرمین جناب جسٹس جاوید اقبال اورلاپتہ افراد کے قومی کمیشن کے دیگر معززممبران نے نہ صرف لاپتہ فرد کی فیملیز کا موقف سنا بلکہ ان کی جلد از جلد بازیابی کے لئے کوششیں بھی کیں جس پر لاپتہ افراد کے لواحقین نے چئیرمین جناب جسٹس جاوید اقبال اور لاپتہ افراد کے لئے قائم کمیشن کے دیگر معزز ممبران کی کوششوں کو سراہا۔لاپتہ افراد کے کمیشن کے چئیرمین کی حیثیت سے جسٹس جاوید اقبال اپنے عہدے کی تنخواہ نہیں لیتے اورنہ ہی سرکاری وسائل استعمال کرتے ہیں بلکہ لاپتہ افراد کے قومی کمیشن کے صدر کی حیثیت سے کام کرنے کواپنا قومی فریضہ سمجھتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button