تازہ ترینتحریکخبریں

پی ٹی آئی اسلام آباد میں ’آزادی مارچ‘ کیلئے تیار، انتظامات کے حوالے سے 9کو کور کمیٹی اجلاس طلب

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے اپنے کارکنوں کو عام انتخابات کی تیاریاں شروع کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے 20 لاکھ افراد کو اسلام آباد لانے کے انتظامات کو حتمی شکل دینے کے لیے کور کمیٹی اور پارلیمانی پارٹی کے اجلاس طلب کر لیے ہیں۔

پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان کی زیر صدارت اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ وفاقی دارالحکومت میں ’پاکستان کی آزادی اور خودمختاری‘ کے لیے 20 لاکھ افراد کو جمع کیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ اس ’آزادی مارچ‘ کے انتظامات کو حتمی شکل دینے کے لیے پی ٹی آئی کی کور کمیٹی اور پارلیمانی پارٹی کے اجلاس 9 مئی کو ہوں گے۔

علاوہ ازیں پی ٹی آئی کی ملک بھر کی تمام تنظیموں اور کمیٹیوں کے اجلاس طلب کر کے پارٹی کارکنوں کو عام انتخابات کی تیاریاں شروع کرنے کی ہدایات کر دی گئی ہیں۔

مزید برآں، پی ٹی آئی کی مالیاتی ٹیم نے اقتصادی اور توانائی کے بحرانوں سے نمٹنے کے لیے مسلم لیگ (ن) کی زیر قیادت والی اتحادی حکومت کی صلاحیت پر سوال اٹھایا۔

پارٹی کے فوکل پرسن برائے مالیاتی امور حماد اظہر کا کہنا ہے کہ صرف تین ہفتوں میں ثابت ہو گیا کہ حکومت نااہل ہے۔

ایک ٹوئٹ میں سابق وزیر توانائی نے دعویٰ کیا کہ پیداواری صلاحیت کے باوجود پورے ملک کو شدید لوڈشیڈنگ کا سامنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ڈیزل کی وافر مقدار موجود ہے لیکن کسان ڈیزل حاصل کرنے کے لیے ایک جگہ سے دوسری مقام تک بھاگ رہے ہیں، بڑھتی ہوئی معیشت کو تباہی کی طرف دھکیل دیا گیا ہے، ان مسائل کا واحد حل عام انتخابات کا انعقاد ہے۔

سابق وزیر خزانہ شوکت ترین نے بھی حکومت کی مالیاتی مسائل سے نمٹنے کی صلاحیت پر سوال اٹھایا۔

انہوں نے ٹوئٹ کیا کہ ’کائبور (کراچی انٹر بینک آفرڈ ریٹ) کی شرح 30 دنوں سے بھی کم عرصے میں 5 فیصد بڑھ گئی ہے، اس سے کاروبار اور انفرادی قرض لینے والے متاثر ہوں گے اور معاشی نمو میں رکاوٹ پیدا ہوگی‘۔

ان کا کہنا تھا کہ لوگوں یہ کیا ہورہا، انتظامات کون دیکھ رہا ہے۔

One Comment

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button