تازہ ترینخبریںپاکستان سے

امریکی مراسلہ سازش نہیں مداخلت ہے، قومی سلامتی کمیٹی کی توثیق

وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس کا اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ سیکیورٹی اداروں کی تحقیقات کے مطابق کوئی بیرونی سازش نہیں ہوئی ہے۔

وزیراعظم کی قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس کے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ قومی سلامتی کمیٹی نے توثیق کی ہے کہ امریکی مراسلہ سازش نہیں مداخلت ہے۔

اعلامیے میں مزید کہا گیا ہے کہ خفیہ اداروں نے اعلامیہ کی تحقیقات کی ، واشنگٹن میں پاکستانی سفارتخانے کو ٹیلی گرام موصول ہوا تمام ترمعلومات، مراسلوں کی بنیاد پر کمیٹی نے فیصلہ کیا کہ غیرملکی سازش نہیں تھی۔

قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس کے جاری اعلامیے میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ دوران تحقیقات غیر ملکی سازش کے کوئی ثبوت نہیں ملے امریکا میں پاکستان کے سابق سفیر نے قومی سلامتی کمیٹی کو بریفنگ دی۔

قومی سلامتی کمیٹی کےاجلاس میں گزشتہ اجلاس کےفیصلوں کا اعادہ بھی کیا گیا۔

حالیہ مہینوں میں یہ دوسرا موقع ہے کہ فورم نے ‘مراسلے’ کے مندرجات کا جائزہ لینے کے لیے اجلاس بلایا۔

یہ بات یہاں دلچسپ ہے کہ قومی سلامتی کمیٹی نے آج اپنے اعلامیے میں سابق وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت گزشتہ اجلاس کے فیصلوں کی توثیق کی۔

مارچ میں قومی سلامتی کمیٹی نے اس متعلقہ ملک کو ‘تھریٹ لیٹر’ پر ‘مضبوط سفارتی ردعمل’ جاری کرنے کا فیصلہ کیا تھا، اگرچہ فورم نے واضح طور پر اسے سازش قرار دینے سے گریز کیا تھا لیکن اس نے اس کی تردید بھی نہیں کی تھی اور اسے ‘پاکستان کے اندرونی معاملات میں صریح مداخلت’ قرار دیا تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button