تازہ ترینجرم کہانیخبریں

تعلیمی اداروں میں منشیات بیچنے والوں کیخلاف کارروائی کا فیصلہ

انٹر ایجنسی ٹاسک فورس (آئی اے ٹی ایف) نے تعلیمی اداروں میں منشیات فراہم کرنے والوں کے خلاف تمام اداروں پر مشتمل ایک جامع ٹیم تشکیل دینے پر اتفاق کیا ہے۔

مذکورہ فیصلہ انسداد منشیات فورس (اے این ایف) کے ہیڈ آفس میں منعقدہ میجر جنرل غلام شبیر نریجو کے زیر صدارت اجلاس میں کیا گیا۔

اجلاس کے دوران سیکریٹری آئی اے ٹی ایف نے سال 2021 میں منشیات کی روک تھام سے متعلق مختلف اداروں کی کارکردگی رپورٹ پیش کی۔

پاکستان کوسٹ گارڈ کے ڈائریکٹر جنرل اور دیگر اداروں کے عہدیداران نے اجلاس کو آگاہ کیا کہ ان کے اداروں نے ایسے کسی شخص کو سمندری راستے سے داخل ہونے کی اجازت نہیں دی۔

اجلاس میں کرسٹل اور آئس سمیت دیگر نشہ آور اشیا سے انسانی صحت پر پڑنے والے اثرات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

اس دوران جوانوں اور طالبعلموں پر خصوصی توجہ مرکوز کرتے ہوئے آئی اے ٹی ایف کے تمام اداروں کے اشتراک سے منشیات ڈیلر اور تعلیمی اداروں کو ہدف بنانے والے منشیات فروشوں کے خلاف کریک ڈاون کا فیصلہ کیا گیا۔

اجلاس میں تجویز دی گئی کہ تعلیمی اداروں میں منشیات فراہم کرنے والوں کے خلاف کارروائی کے لیے اے این ایف، پولیس اور آئی ایس آئی عہدیداران پر مشتمل ٹیم تشکیل دی جائے۔

اس موقع پر ڈائریکٹر اے این ایف کی جانب سے منشیات کے پھیلاؤ اور پاک- افغان سرحد کے حالات پر تشویش کا اظہار کیا گیا۔

دارالحکومت اسلام آباد پولیس کے نمائندگان نے تجویز دی کہ منشیات کے بڑھتے ہوئے رجحان کو آگاہی مہمات کے ذریعے کم کیا جاسکتا ہے، اجلاس کے شرکا کو بتایا گیا کہ آگاہی اقدامات پر عمل درآمد کے لیے اے این ایف ہیڈ کوارٹرز میں ایک علیحدہ ڈائریکٹوریٹ پہلے ہی کام کر رہا ہے۔

اجلاس میں ماتحت عملے کی مؤثر نگرانی پر زور دیتے ہوئے اطلاع دی گئی کہ انہیں انعام کی رقم کے بجائے انہیں منشیات کا حصہ فراہم کیا جاتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button