Welcome to JEHANPAKISTAN   Click to listen highlighted text! Welcome to JEHANPAKISTAN
انتخاباتتازہ ترینخبریں

عمران خان کا اپنے امیدوار میدان میں لانے کی بجائے ازخود سامنا کرنے کا فیصلہ

لاہور ( رپورٹ: فیصل اکبر سے) قومی اسمبلی کی 9نشستوں پر 25ستمبر کو ہونے والے ضمنی انتخابات میں پی ڈی ایم کے متفقہ امیدوار میدان میں آنے کی وجہ سے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے اپنے امیدوار میدان میں لانے کی بجائے ازخود سامنا کرنے کا فیصلہ کیا ہے، ان تمام نو حلقوں سے عام انتخابات 2018 میں تحریک انصاف کے امیدوار انتہائی کم ووٹ مارجن سے کامیاب ہوئے تھے۔

عام انتخابات 2018ء میں پی ٹی آئی کے علی محمد خان58577ووٹ لیکر کامیاب قرار پائے ان کے مقابلے میں ایم ایم اے کے مولانا محمد قاسم نے 56318، پی ایم ایل این کے جمشید خان نے 36625، اے این پی کے ملک امان خان نے 27104 اور پی پی پی پی کے شعیب عالم خان خٹک نے 13477ووٹ لیے۔ این اے 24سے پی ٹی آئی کے فضل محمد خان 83495ووٹ لیکر کامیاب ہوئے ان کے مدمقابل پی ایم ایل این کے میاں عالمگیر شاہ نے 1363، اے این پی کے اسفندیار ولی خان نے 59483، پی پی پی پی کے آفتاب عالم نے 10462 اور ایم ایم اے کے مولانا محمد گوہر شاہ نے 38252ووٹ حاصل کئے۔

پی ٹی آئی کے امیدوار شوکت علی این اے 31 سے 87895ووٹ لیکر کامیاب ہوئے مد مقابل اے این پی کے غلام احمد بلور نے 42476، ایم ایم اے کے صدیق الرحمان پراچہ نے11657، پی پی پی پی کے اخونزادہ عرفان اللہ شاہ نے 7499 اور پی ایم ایل این کے محمد ندیم نے3093ووٹ لیے ۔

این اے 45سے ایم ایم اے کے امیدوار حاجی منیر خان اورکزئی کامیاب ہوئے اور ان کے انتقال کے بعد پی ٹی آئی کے فخر زمان خان نے ضمنی انتخاب میں سولہ ہزار سے زائد ووٹ حاصل کرکے کامیابی حاصل کی اِس حلقے میں بھی پی ڈی ایم میں شامل جماعتیں اپنے الگ الگ امیدوار ہونے کی وجہ سے شکست سے دوچار ہوئیں۔ این اے 108سے پی ٹی آئی کے فرخ حبیب 112740ووٹ لیکر کامیاب ہوئے مدمقابل پی ایم ایل این کے چودھری عابد شیر علی نے 111529، پی پی پی پی کے ملک اصغر علی قیصر نے 4987 اور ایم ایم اے کے زکریا سید نے 1827ووٹ حاصل کئے۔ اعجاز احمد شاہ این اے 118 سے 63818 ووٹ لیکر کامیاب قرار پائے اسی حلقے سے پی ایم ایل این کی امیدوار شذرہ منصب علی نے 61413 اور پی پی پی پی کے شاہ جہاں احمد بھٹی نے 18726ووٹ حاصل کئے تھے۔ پی ٹی آئی کے این اے 237ملیرسے مستعفی ہونے والے جمیل احمد خان نے عام انتخابات میں 33280 ووٹ لیکر کامیابی حاصل کی ،

مد مقابل پی پی پی پی کے عبدالحکیم بلوچ نے 31907، پی ایم ایل این کے زین العابدین انصاری نے 14099، ایم ایم اے کے محمد اسلام نے 5168، ایم کیو ایم کے ڈاکٹر ندیم مقبول نے 11251اور اے این پی کے عزیز محمد نے 396ووٹ حاصل کئے۔ این اے 239 سے محمد اکرم چیمہ نے پی ٹی آئی کے امیدوار کے طور پر69147 ووٹ حاصل کرکے کامیابی حاصل کی ، یہاں سے پی ایم ایل این کے محمد احسان نے 19616، ایم ایم اے کے محمد حلیم خان نے 12290، پی پی پی پی کے سید عمران حیدر عابدی نے 11887 اور ایم کیو ایم کے خواجہ سہیل منصور نے 68811 ووٹ لئے مگر شکست سے دوچار ہوئے۔

کراچی سائوتھ سے پی ٹی آئی کے عبدالشکور شاد 52750 ووٹ لیکر کامیاب ہوئے اور ان کے مدمقابل موجودہ پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کے امیدواروں بالخصوص چیئرمین پی پی پی پی بلاول بھٹو زرداری نے 39325، ایم ایم اے کے نور الحق نے 33078، پی ایم ایل این کے سلیم ضیاء نے 19077، اے این پی کے حضرت گل نے772اور ایم کیو ایم کے محفوظ یار خان نے 9851ووٹ حاصل کئے مگر شکست کھائی تھی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Click to listen highlighted text!