تازہ ترینجرم کہانیخبریں

سیٹھ عابد کی بیٹی کے قتل میں ملوث دیگر کردار بھی سامنے آگئے

لاہور کے علاقے مسلم ٹاؤن میں 60 سالہ خاتون کے قتل میں ملوث دیگر کردار بھی سامنے آگئے۔

پولیس کے مطابق سیٹھ عابد کی بیٹی کے قتل کی تفتیش میں ملزم فہد کے ساتھ گرفتار دیگر ملازمین کے کردار بھی سامنے آگئے ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کے ساتھ گھریلو ملازمہ عطیہ نے قتل کے بعد بیڈ کی خون آلود چادریں تبدیل کیں جبکہ ملازمین عابد اور شاہد نے قتل میں استعمال ہونے والا اسلحہ چھپایا اور ملازم روح الامین ملزم فہد کے ساتھ مقتولہ کو اسپتال لے کر گیا۔

پولیس کا یہ بھی کہنا ہے کہ ان تمام ملازمین نے شواہد کو مٹایا جس پر انہیں گرفتار کرلیا گیا ہے۔

ملازمہ عطیہ کا کہنا ہے کہ ملزم فہد کوٹ لکھپت کے رہائشی ایک درزی کی بیٹی سے شادی کرنا چاہتا تھا، دونوں کی دوستی فیس بک پر ہوئی لیکن مالکن شادی سے منع کرتی تھی۔

پولیس کے مطابق ملزم نے والدہ کو قتل کرنے کے بعد خودکشی کا رنگ دینے کی کوشش کی تھی، پولیس حراست میں لےپالک فہد اپنی والدہ کو قتل کرنے کا اعتراف کرچکا ہے۔

واضح رہے کہ 60 سالہ مقتولہ فرخ مظہر پاکستان کے معروف بزنس مین سیٹھ عابد مرحوم کی صاحبزادی تھیں۔

مقتولہ فرح کے شوہر امریکا میں مقیم ہیں، مقتولہ نے 3 لے پالک بچوں کی پرورش کی تھی جن میں 2 لڑکے اور 1 لڑکی شامل ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button