آزادی فلسطین جنگتازہ ترینحالات حاضرہخبریں

شام میں اسرائیل کے فضائی حملے میں 10 جنگجو شہید

اسرائیلی فوج نے شام میں فضائی حملوں میں 6 فوجیوں سمیت 10 جنگجووؑں کو ہلاک کردیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسیوں کی رپورٹ کے مطابق سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس کا کہنا ہے کہ 2022 کے سب سے بدترین حملے میں گولہ بارود کے ڈپو اور شام میں ایرانی فوج کی موجودگی کے حامل متعدد ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا۔

شامی حکومت کے سرکاری میڈیا نے اسرائیلی فوج کی گولہ باری سے چار ہلاکتوں کی تصدیق کردی ہے لیکن تاحال اسرائیل نے اس پر کوئی جواب نہیں دیا۔

شام کی سرکاری نیوز ایجنسی سنا نے عسکری حکام کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اسرائیلی دشمنوں نے صبح کے وقت فضائی حملہ کیا اور دمشق کے قریب کئی مقامات کو نشانہ بنایا۔

سنا کے مطابق یہ حملہ 14 اپریل کو دمشق میں کیے گئے ایک اور حملے کے بعد ہوا ہے جس میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا تھا۔

برطانوی ادارہ پورے شام میں اپنے ذرائع کے ایک وسیع نیٹ ورک پر انحصار کرتا ہے اور اس نے حملے میں 8 افراد کے زخمی ہونے کی بھی تصدیق کی۔

برطانوی ادارے کے رہنما رمی عبدالرحمٰن نے کہا کہ ہلاک ہونے والوں میں سے چار کا تعلق شامی فوج سے نہیں ہے بلکہ وہ ایرانی حمایت یافہ جنگجو تھے مگر ان کی قومیت تصدیق نہیں ہو سکی۔

انہوں نے کہا کہ اسرائیلی حملے میں چانچ مختلف مقامات کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button