تازہ ترینخبریںدنیا

اسرائیل نے غزہ کے عوام کے سامنے ہاتھ پھیلا دیا

جنگ کے میدان میں بے شمار شکستوں سے دوچار ہونے کے بعد اسرائیلی فوج نے غزہ پٹی کے مکینوں کے لئے نوٹس جاری کیا ہے جس میں شدت سے کہا گیا کہ وہ رقم وصول کرنے کے عوض حماس کے رہنماؤں کی معلومات تل ابیب کو فراہم کریں۔

 ان اعلانات میں جو گزشتہ جمعرات 14 دسمبر سے گردش کر رہے ہیں، اسرائیلی فوج نے حماس کے 4 رہنماؤں کے نام شامل کیے ہیں اور اطلاع ملنے کے بعد رابطے کا نمبر بھی لکھا ہے۔

غزہ میں حماس کے سیاسی دفتر کے سربراہ یحییٰ السنوار کے بارے میں کسی بھی معلومات کے لیے تل ابیب نے 4 لاکھ ڈالر، ان کے بھائی اور حماس کے  سینئر فیلڈ کمانڈ محمد السنوار کے بارے میں اطلاع دینے والے کو 3 لاکھ ڈالر، حماس کے ایک  آپریشنل کمانڈر رافع سلامہ کے بارے میں اطلاع دینے والے کو 2 لاکھ ڈالر اور القسام بٹالین کے کمانڈر محمد ضیف کے بارے میں اطلاع دینے والے 1 لاکھ ڈالر انعام دینے کا اعلان کیا گیا ہے۔

الجزیرہ نے اس بارے میں لکھا ہے کہ غزہ پر فضائی بمباری اور زمینی حملہ 70 ویں دن میں داخل ہونے کے بعد، اسرائیل تحریک حماس کے بعض رہنماؤں تک پہنچنے کی اپنی ناکام اور مایوس کن کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے۔

الجزیرہ نے اپنی رپورٹ میں ان نوٹسز اور اعلانات کی تقسیم کو "اسرائیل کا نیا اور پرانا ہتھیار” قرار دیا ہے اور اس بات پر زور دیا ہے کہ غاصب فوج یہ سمجھتی ہے کہ اس طرح وہ لوگوں کو معلومات افشاء کرنے پر اکسا سکتی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button