تازہ ترینخبریںدیسی ٹوٹکے

کون سی چیزیں فریج میں رکھنے سے خراب ہو سکتی ہیں؟

جب بات آتی ہے خوراک کو مناسب طریقے سے ذخیرہ کرنے کی تو کچھ کیا اکثر اس کے لیے فریج، فریزر وغیرہ کا انتخاب کرتے ہیں مگر کیا یہ واقعی ٹھیک ہے؟

حقیقت تو یہ ہے کہ کچھ چیزیں فریج میں رکھنا انہیں خراب رکھنے کے مترادف ہوتا ہے اور وہ کمرے کے عام درجہ حرارت میں زیادہ فریش رہتی ہیں،تو یہاں ہم ایسی ہی غذائی اشیاءکے بارے میں جانے جن کو فریج میں رکھا جائے تو وہ خراب ہوجاتی ہیں۔

شہد کو فریج میں کبھی رکھنے کی ضرورت نہیں یہ خود ہی ہر حال میں ٹھیک رہتا ہے بلکہ یہ کبھی خراب نہیں ہوتا بس آپ کو اس کا ڈھکن مضبوطی سے بند کرنا ہوتا ہے۔

ایک بڑی تعداد اکثر گرمیوں میں کافی کو محفوظ بنانے کیلئے فریج میں رکھتی ہے، تاہم یہ طریقہ غلط ہے، کافی کو ہرگز فریج میں نہ رکھیں، اس سے نہ صرف اس کا ذائقہ خراب ہوتا ہے بلکہ یہ جم کر خراب ہو جاتی ہے۔

زیتون اور انگور کو فریج میں رکھنا کیسا ہے؟

ویسے تو زیتون کے تیل کو فریج کی بجائے باہر ہی کسی ٹھنڈی جگہ پر رکھنا چاہئیے کیونکہ فریج میں یہ گاڑھا ہوکر سخت ہوجاتا ہے مکھن کی طرح۔

انگور کسی برتن میں چند دن تک محفوظ رہ سکتے ہیں تاہم اگر وہ بہت زیادہ پک چکے ہوں تو پھر انہیں فریج میں رکھنا زندگی کچھ بڑھا سکتا ہے۔

ایک امریکی تحقیق کے مطابق خربوزوں کو کمرے کے درجہ حرارت میں رکھنا زیادہ بہتر ہوتا ہے اس طرح پھل میں شامل اجزاء جیسے بیٹا کیروٹین وغیرہ بڑھ جاتے ہیں جو صحت مند جلد اور بینائی کے لیے فائدے مند ہوتے ہیں جبکہ فریج کی ٹھنڈی ہوا اینٹی آکسائیڈنٹس کی نشوونما کو ختم کرکے رکھ دیتی ہے۔

گرمی پسند کرنے والے بینگن بھی فریج میں جلد خراب ہوجاتے ہیں تو انہیں کمرے کے درجہ حرارت میں محفوظ کرنا چاہئیے۔

سرد درجہ حرارت آلو میں پائے جانے والی نشاستہ کو شوگر میں تبدیل کردیتی ہے جس کے نتیجے میں اس کے ذائقے میں ہلکی سی مٹھاس آجاتی ہے۔

آلوﺅں کو 45 فارن ہائیٹ درجہ حرارت میں رکھنا بہترین ہوتا ہے یعنی کسی بھی کاغذ کے تھیلے میں ڈال کر رکھنا کافی ہوتا ہے، سورج کی روشنی میں رکھنا البتہ اسے خراب کرسکتا ہے، بھنڈی بھی گرمی پسند کرتی ہے اور زیادہ ٹھنڈک میں بھورے داغ اس پر نمایاں ہوجاتے ہیں، فریج میں اسی وقت رکھنا چاہئے جب گھر بہت زیادہ گرم ہو۔

اس کے علاوہ مرچوں کو فریج میں رکھنے سے اس کے فائدے کم ہوجاتے ہیں، اسے کسی ٹھنڈی، خشک اور ہوادار جگہ پر رکھنا زیادہ بہتر ہوتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button