تازہ ترینخبریںکاروبار

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 10 روپے تک فی لیٹر اضافے کا امکان

بین الاقوامی مارکیٹ میں تیل کی قیمت میں اضافے کے باعث ملک میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اگلے پندرہ روز کے لیے 8 سے 10 روپے تک فی لیٹر اضافے کا امکان ہے، قیمتوں میں مزید اضافے کی وجہ مصنوعات پر مزید پیٹرولیم لیوی کا اطلاق اور کرنسی کی قدر میں کمی ہے۔

گزشتہ 15 روز کے دوران بین الاقوامی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمت میں 95 سے 99 ڈالر فی بیرل اضافہ ہوا ہے، جبکہ شرح مبادلہ میں بھی کمی دیکھی گئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ موجودہ ٹیکس کی شرح، درآمدی قیمت اور شرح مبادلہ کی بنیاد پر پیٹرول (موٹر گیسولین) اور ہائی اسپیڈ ڈیزل (ایچ ایس ڈی) کی قیمتوں میں فی لیٹر بالترتیب تقریباً 5روپے60 پیسے او4 روپے 50 پیسے کا اضافہ کیا جانے کا امکان ہے۔

اسی طرح مٹی کے تیل اور لائٹ ڈیزل آئل ( ایل ڈی او) کی قیمت میں تقریباً 4 روپے اور 3 روپے 70 پیسے بالترتیب اضافے کی توقع ہے۔

قبل ازیں 15 فروری کو حکومت نے بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے کیے گئے وعدے کے مطابق تمام پیٹرولیم مصنوعات پر پیٹرولیم لیوی میں 4 روپے فی لیٹر اضافہ کیا تھا، جبکہ مہنگائی کے اثرات پر قابو پانے کے لیے تمام مصنوعات پر سیلز ٹیکس کی شرح صفر کردی گئی تھی۔

اگر حکومت پیٹرولیم لیوی میں 4 روپے فی لیٹر ماہانہ اضافے کے عمل کو جاری رکھنے کا فیصلہ کرتی ہے، تو تخمینے کے مطابق پیٹرول کی ایکس ڈپو سیل قیمت میں تقریباً 9روپے 60 پیسے فی لیٹر اضافہ متوقع ہے جبکہ اس کے بعد ایچ ایس ڈی میں 8 روپے 50 پیسے اضافے کا امکان ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button