تازہ ترینخبریںٹیکنالوجی

سام سنگ نئے فون پرانے سمندری جالوں سے بنانے لگا

سام سنگ نے کہا ہے کہ اس کے نئے فون گیلکسی ایس 22کی تیاری میں ایک خاص مٹیریل استعمال کیا گیا ہے۔

یہ مٹیرئل سمندر میں پھینکے جانے والے پرانے جالوں کو بازیافت یعنی ری سائیکل کرکے تیار کیا گیا ہے۔ دوسری جانب کمپنی نے اعلان کیا ہے کہ اسے مزید وسعت دے کر سام سنگ کی دیگر مصنوعات بھی ری سائیکل شدہ سمندری پلاسٹک سے بنائی جائیں گی۔

آج بدھ کی صبح کو سام سنگ گیلکسی ایس 22کی تقریبِ رونمائی ہے اور اس ضمن میں سام سنگ نے اشارہ دیا ہے کہ اس کے نئے فون میں ایک نیا اور خاص مٹیریل شامل کیا ہے۔

ایک مادہ سمندری جالوں سے بنایا گیا ہے جو دنیا بھر کے پانیوں میں حساس حیات کے لیے وبال بنے ہوئے ہیں۔ سام سنگ نے یہ بھی کہا ہے کہ اگلے مرحلے میں وہ سمندری پلاسٹک کے دیگر اقسام کے کچروں کو مزید مصنوعات میں ڈھال کر مزید مصنوعات تیار کرے گا۔

لیکن خود سام سنگ ایس 22کی بھی نئی تفصیلات نہیں دی گئی ہیں اور نہ ہی یہ بتایا گیا ہے کہ فون کا کونسا حصہ بحری پلاسٹک پر مشتمل ہے۔

اقوامِ متحدہ کے مطابق ہر سال سمندروں میں چھ لاکھ چالیس ہزار ٹن پلاسٹک پھینکا جارہا ہے۔ یہ پلاسٹک بحری حیات کے لیے شدید خطرہ بن چکا ہے اور انہیں بڑے پیمانے پر ہلاک کر رہا ہے۔

پھر اس کے تقسیم ہوتے ذرات مچھلیوں کی خوراک میں شامل ہوکر خود ہماری پلیٹ میں ہم تک پہنچ رہے ہیں۔

دوسری جانب سمندری جانوروں کی نرسری کورال ریفس یعنی مرجانی چٹانیں بھی پلاسٹک کی کاری ضرب سے محفوظ نہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button