تازہ ترینتحریکخبریںپاکستان سے

منگل سے دوبارہ حقیقی آزادی مارچ وزیرآباد سے شروع ہو گا

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے منگل کو وزیر آباد سے لانگ مارچ دوبارہ شروع کرنے کا اعلان کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں سابق وزیر اعظم عمران خان نے پریس کانفرنس میں اعلان کیا ہے کہ جہاں مجھے گولیاں لگیں وہیں سے میرا مارچ دوبارہ شروع ہوگا

انھوں نے کہا ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ منگل سے وزیرآباد سے مارچ شروع ہوگا، ہمارا لانگ مارچ 10 سے 15 دن میں پنڈی پہنچے گا، میں خود پنڈی آؤں گا، پورے پاکستان سے لوگ آئیں گے، اور خود انھیں لیڈ کروں گا۔

عمران خان نے کہا 3 دن ہو گئے پنجاب حکومت بھی ہماری ہے، اس کے باوجود ہم ابھی تک ایف آئی آر نہیں کٹوا پائے، سابق وزیراعظم کہہ رہا ہے کہ 3 لوگ ملوث ہیں، مجھے یقین ہے کہ ان 3 لوگوں نے یہ سب کچھ کیا ہے، یہ میرا حق ہے کہ تفتیش ہو، جس سے سب پتا چل جائے گا، یہ کیسے ہو سکتا ہے کہ ہماری اپنی پولیس منع کر رہی ہے، میں سب سے بڑی سیاسی جماعت کا سربراہ اور سابق وزیر اعظم ہوں، جب میں ایف آئی آر نہیں کٹوا پا رہا تو باقی قوم کیا کرے گی

انھوں نے کہا شہباز شریف نے جوڈیشل کمیشن کی بات کی ہے، میں اسے ویلکم کرتا ہوں، مجھے اس ملک میں صاف اور شفاف تحقیقات چاہئیں، پہلے ایک ویڈیو نکلتی ہے جس میں کہا گیا میں مذہب کی توہین کرتا ہوں، وہ ویڈیو کہاں سے نکلتی ہے، کون نکالتا ہے یہ پتا چلنا چاہیے، مریم صفدر، مریم اورنگزیب اور جاوید لطیف سے کون پریس کانفرنس کراتا ہے؟ اور مجھے پتا چل جاتا ہے کہ انھوں نے مجھے سلمان تاثیر کی طرح قتل کرانا ہے۔

سابق وزیر اعظم نے کہا کہ جب مجھ پر یہ واردات ہوتی ہے تو دیکھ لیں اس کے بعد ہوتا کیا ہے، وہ کون لوگ تھے جو فوری ری ایکٹ کرتے ہیں، ایک دم سے بیانات آنا شروع ہو گئے کہ عمران نے مذہب کی توہین کی ہے، مجھ پر حملے کے بعد 6 بجکر ایک منٹ پر پہلی ٹوئٹ آتی ہے، وقار ستی کی 6 بجکر 2 منٹ پر ٹوئٹ آتی ہے، حامد میر کی 6 بجکر 3 منٹ، جیو نیوز کی 6 بجکر 4 منٹ پر ٹوئٹ آتی ہے، سما نیوز کی بھی 6 بجکر 4 منٹ پر ٹوئٹ آتی ہے

انھوں نے کہا گولی چلانے والے کاانٹرویو ایک دم سے لیک کر دیا جاتا ہے، آئی جی پنجاب سے پوچھا گیا تو وہ کہتا ہے کہ ویڈیو ہیک ہو گئی، مجھ پر قاتلانہ حملے کے بعدایک کے بعدایک جھوٹ بولا گیا، پہلے پتا چلنا چاہیے کہ یہ چیزیں کس نے شروع کیں اور پھر کور اپ کون کر رہا ہے؟

عمران خان نے کہا پاکستان میں خوف پیدا کر دیا گیا ہے، ہم سب کو خوف ختم کر کے بتانا ہے کہ ہم انسان ہیں کوئی بھیڑ بکریاں نہیں۔

عمران خان نے کہا میں چاہتا ہوں جوڈیشل کمیشن سب سے پہلے ارشد شریف کیس کی تحقیقات کرے، پتا چلنا چاہیے ارشد شریف ملک چھوڑنے پر کیوں مجبور ہوا، انھوں نے بہت لوگوں کو بتایا تھا کہ کون لوگ ملوث ہیں، ارشد شریف کی والدہ اور دیگر صحافیوں کو بھی پتا تھا کہ ارشد شریف کو کس سے خطرہ ہے۔

پی ٹی آئی چیئرمین نے اعظم سواتی اور ان کی اہلیہ کی ویڈیو کے حوالے سے چیف جسٹس آف پاکستان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ یہ بہت اہم کیس ہے، ملک کی تاریخ کی سب سے گھٹیا ترین حرکت ہے یہ، چیف جسٹس صاحب اس معاملے پر مکمل تحقیقات کریں۔ انھوں نے کہا جو میرا کیس کور اپ کر رہے ہیں وہ کہہ رہے ہیں کہ وہ جعلی ویڈیو ہے، لیکن ویڈیو فیک نہیں ہے، اعظم سواتی کے پاس موجود ویڈیو اصلی ہے۔

انھوں نے کہا اعظم سواتی نے رات فون کر کے کہا کہ وہ سپریم کورٹ کے باہر دھرنا دیں گے، وہ مطالبہ کریں گے کہ انھیں انصاف فراہم کیا جائے، پی ٹی آئی سینیٹرز اور وکلا اعظم سواتی کے ساتھ سپریم کورٹ کے باہر بیٹھیں گے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button