تازہ ترینخبریںٹیکنالوجی

امارات مریخ مشن نے ’سرخ سیارے‘ پر کیا دریافت کیا؟

متحدہ عرب امارات کے مریخ مشن (ای ایم ایم ) نے سرخ سیارے کے گرد ایک نئی قسم کی پروٹون روشنی دریافت کی کرلی۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق اماراتی مریخ مشن کی جانب سے دریافت کی گئی پروٹون روشنی ممکنہ طور پر مریخ کے ماحول میں غیر متوقع طرز عمل کی نئی بصیرت کو متحرک کرتی ہے۔

امارات مریخ مشن کی سائنس لیڈ کے حصی ٰالمطروشی نے کہا کہ اس پیچیدہ پروٹون روشنی کی ہماری دریافت ای ایم ایم کے زیر مطالعہ طویل فہرست میں ایک نئی قسم کا اضافہ کرتی ہے اور ہمارے موجودہ خیالات کو چیلنج کرتی ہے کہ مریخ کے دن کے کنارے پروٹون روشنیاں کیسے وجود میں آتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ نئی پیچیدہ قسم کی پروٹون روشنی اس وقت بنتی ہے جب شمسی ہوا مریخ کے دن کے اوپری ماحول کو براہ راست متاثر کرتی ہے اور الٹرا وائلٹ روشنی خارج کرتی ہے کیونکہ یہ سست ہوتی ہے اور یہ امارات مارس الٹرا وائلٹ اسپیکٹرومیٹر ایمس کے ذریعہ حاصل کردہ ڈے سائیڈ ڈسک کے اسنیپ شاٹس میں دریافت کی گئی تھی۔

انہوں نے کہا کہ ہم مل کر نہ صرف مریخ بلکہ سیاروں کے شمسی ہوا کے ساتھ تعامل کے بارے میں اپنے موجودہ علم کی حدود کو آگے بڑھا رہے ہیں۔

دوسری جانب میوین کے پرنسپل انویسٹی گیٹر شینن کری نے کہا کہ مریخ کے ماحول کی ملٹی وینٹیج پوائنٹ کی پیمائش ہمیں سورج کے لیے ماحول کے حقیقی وقت کے ردعمل کے بارے میں بتاتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس قسم کے بیک وقت مشاہدات ماحولیاتی حرکیات اور ارتقا کی بنیادی طبیعیات کی جانچ کرتے ہیں۔

واضح رہے کہ امارات مریخ مشن ٹیم نے ناسا کے ایک مشن میون کے ساتھ مل کر ان مشاہدات کو مکمل طور پر نمایاں کرنے کے لیے کام کیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button