تازہ ترینخبریںپاکستان سے

اسمبلی ارکان کو ذاتی فائدے کیلئے قانون سازی نہیں کرنی چاہیے: چیف جسٹس

چیف جسٹس سپریم کورٹ عمر عطا بندیال نے کہا ہے کہ اسمبلی میں موجود ارکان کو ذاتی فائدے کیلئے قانون سازی نہیں کرنی چاہیے۔

سپریم کورٹ میں نیب ترامیم کے خلاف عمران خان کی درخواست پر سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ ملک غیر معمولی حالات سے گزر رہا ہے، پی ٹی آئی کے 150 ارکان اسمبلی کا بائیکاٹ کرکے بیٹھے ہیں، متعدد بار کہہ چکے ہیں کہ اسمبلی جاکر اپنا کردار ادا کریں۔

جسٹس عمر عطا بندیال نے کہا کہ اسمبلی ارکان کو ذاتی فائدے کیلئے قانون سازی نہیں کرنی چاہیے، سپریم کورٹ قانون سازی میں مداخلت نہیں کرنا چاہتی، ہم صرف بنیادی حقوق کےخلاف ترامیم ہونے کے نکتے کا جائزہ لیں گے ، ہائی پروفائل کیسز کا ریکارڈ لے کرصرف دیکھ رہے ہیں کہ کیسز چلتے ہیں یا نہیں ، سپریم کورٹ آئین کے تحت چلنے والے تمام اداروں کو مکمل سپورٹ کرتی ہے، غیرمعمولی حالات میں کیس سن کر مزے نہیں لے رہے۔

بعد ازاں عدالت  نے کیس  کی مزید سماعت یکم ستمبر تک ملتوی کردی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button