تازہ ترینخبریںٹیکنالوجی

فیس بک کی ’زک بکس‘ نامی ورچوئل کرنسی اگلے سال متعارف کروائی جائے گی

خبریں ہیں کہ فیس بک اور انسٹاگرام کی پیرنٹ کمپنی ’میٹا‘ مختلف طرح کے سکوں پر مبنی ’زک بکس‘ نامی ورچوئل کرنسی بنانے میں مصروف ہے۔

فیس بک کی جانب سے ڈیجیٹل کرنسی بنانے اور اسے متعارف کرانے کی خبریں 2019 سے جاری ہیں اور خیال کیا جا رہا تھا کہ کمپنی 2020 تک ورچوئل کرنسی پیش کردے گی، تاہم ایسا نہ ہوسکا، لیکن اب خبریں سامنے آئی ہیں کہ فیس بک کی پیرنٹ کمپنی ’میٹا‘ منفرد قسم کی ورچوئل کرنسی بنانے میں مصروف ہے۔

’فنانشل ٹائمز‘ کے مطابق ورچوئل کرنسی کی تیاری کے منصوبے سے منسلک افراد کے مطابق میٹا کے بانی مارک زکربرگ اپنی ایپز میں ورچوئل کرنسی متعارف کرانے کی تیاریوں میں مصروف ہیں اور اس پر تیزی سے کام جاری ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ میٹا کی جانب سے تیار کی جانے والی ڈیجیٹل کرنسی کو ’زک بکس‘ کا نام دیا گیا ہے، جسے انسٹاگرام سمیت فیس بک ایپ پر ابتدائی طور پر متعارف کرایا جائے گا۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ میٹا کی یہ کرنسی کرپٹو کی طرح ہرگز نہیں جو بلاک چین پر انحصار کرتی ہے بلکہ ’زک بکس‘ روبلوکس روبکس اور فارٹنائٹ وی-بکز جیسی ان-ایپ ٹوکن کرنسیز کی طرح ہے جو کہ کسی ورچوئل ٹوکن کی طرح کام کرتی ہی۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ میٹا نہ صرف ورچوئل کرنسی کی تیاری میں مصروف ہے بلکہ کمپنی مستقل کے متعدد نئے بزنس پروجیکٹس پر بھی کام کرنے میں مصروف ہے، جن میں سے ’میٹا ورس‘ اہم ترین ہے، جس میں ممکنہ طور پر رقم کی ادائیگی اور دیگر مالی سروسز بھی شامل ہوں گی۔

رپورٹ کے مطابق میٹا بیک وقت ایک ہی طرح کی مختلف ورچوئل کرنسیز بنانے میں مصروف ہے، ان میں فیس بک گروپ پر اچھی کارکردگی پر ریوارڈز اور انسٹاگرام پر کریئیٹرز کو کوائنز دیے جائیں گے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ میٹا ورچوئل کرنسی کے علاوہ روایتی فنانشل سروسز پر بھی کام کر رہی ہے جس میں چھوٹے کاروباروں کو کو قرضے دینا شامل ہے۔

ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ ’زک بکس‘ کو کب تک متعارف کرایا جائے گا، تاہم امکان ہے کہ اسے سال 2023 تک پیش کردیا جائے گا اور ابتدائی طور پر اسے صرف فیس بک اور انسٹاگرام پر ہی متعارف کرایا جائے گا۔

 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button