تازہ ترینخبریںٹیکنالوجی

امریکہ کے بعد اب 150 سے زائد ممالک کے صارفین فیس بک سے پیسے کما سکیں گے

انسٹاگرام کے بعد اب فیس بک پر بھی مختصر ویڈیو فیچر کو شامل کیا گیا ہے جس سے دنیا بھر میں فیس بک صارفین نئے فیچر ‘ریلز’ پوسٹ کا استعمال کرسکیں گے۔

قبل فیس بک پر ریلز کا فیچر سن 2021 میں صرف امریکہ کے صارفین کے لیے پیش کیا گیا تھا تاہم فیس بک کی پیرنٹ کمپنی ‘میٹا’ نے منگل کو کہا ہے کہ اب یہ فیچر 150 سے زائد ممالک میں متعارف کرایا جا رہا ہے۔

خبر رساں ادارے ‘رائٹرز’ کے مطابق میٹا نے ٹک ٹاک کی مقبولیت کو مدِ نظر رکھتے ہوئے انسٹاگرام پر 2020 میں ریلز فیچر متعارف کرایا تھا۔

میٹا کے بانی مارک زکر برگ نے منگل کو فیس بک پر جاری بیان میں کہا کہ “ریلز پہلے ہی تیزی سے مقبول ہونے والا ایک ٹول ہے اور آج ہم اسے دنیا بھر میں فیس بک صارفین کے لیے پیش کر رہے ہیں۔

کمپنی کے مطابق فیس بک پر صارفین اپنا آدھے سے زیادہ وقت ویڈیوز دیکھ کر ہی گزارتے ہیں۔ میٹا نے اس فیچر کے ذریعے کونٹینٹ کریئٹرز کے لیے پیسے کمانے کے مواقع بھی پیش کیے ہیں۔

واضح رہے کہ ریلز پلے بونس پروگرام پروگرام کا حصہ ہے جس کے تحت تحت کمپنی نے فیس بک اور انسٹاگرام کے لیے خصوصی مواد تخلیق کرنے والوں کے لیے ایک ارب ڈالر مختص کرنے کا اعلان کیا تھا۔

تخلیق کار ریلز پر مونیٹائزیشن یعنی اشتہارات کی مدد سے بھی پیسے کما سکیں گے۔ اس ضمن میں کمپنی امریکہ، کینیڈا اور میکسیکو میں آزمائش کر رہی ہے جب کہ آئندہ آنے والے ہفتوں میں اس کا دائرہ کار دیگر ممالک تک بڑھایا جائے گا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button