تازہ ترینخبریںفن اور فنکار

گلوکار علی نور نے ہراسانی کے الزامات لگانے والی صحافی سے معذرت کرلی

گلوکار علی نور نے خود پر ’جنسی ہراسانی‘ اور برے رویے کے الزامات لگانے والی صحافی عائشہ بنت راشد سے معذرت کرلی۔

عائشہ بنت راشد نے 18 فروری کو انسٹاگرام پر علی نور کے ساتھ کی گئی واٹس ایپ چیٹ کے اسکرین شاٹس شیئر کرتے ہوئے گلوکار پر جنسی ہراسانی کے سنگین الزامات لگائے تھے۔

صحافی کی جانب سے شیئر کیے گئے اسکرین شاٹس سے معلوم ہوتا ہے کہ دونوں کے درمیان پرانی شناسائی تھی مگر گلوکار کا رویہ عائشہ بنت راشد کے ساتھ نامناسب تھا۔

صحافی کے ایک اسکرین شاٹ سے معلوم ہوتا ہے کہ گلوکار نے ان کے ساتھ ایک مرتبہ دوران سفر کار میں بھی نامناسب رویہ اختیار کیا، جسے عائشہ بنت راشد نے ’جنسی ہراسانی‘ کا نام دیا تھا۔

عائشہ بنت راشد کی جانب سے الزامات عائد کیے جانے کے بعد علی نور نے بھی انسٹاگرام اسٹوریز میں مبہم اور ذو معنی جملوں میں اپنا موقف دیا تھا۔

علی نور نے کہا تھا کہ عائشہ نے ان کے ساتھ ہونے والی چیٹنگ کے تمام اسکرین شاٹ شیئر نہیں کیے اور انہوں نے اپنے مقصد اور مطلب کے پیغامات کو شیئر کرکے انہیں بدنام کرنے کی کوشش کی۔

علی نور نے اپنی اسٹوریز میں بتایا تھا کہ انہوں نے وہ ایک طرح سے عائشہ بنت راشد کے مجرم ہیں اور انہوں نے ان سے ذاتی طور پر بھی معافی مانگی تھی اور اب بھی وہ سب کے سامنے معافی مانگ رہے ہیں۔

علی نور نے واضح طور پر اس کا اعتراف نہیں کیا تھا کہ ان پر لگائے گئے تمام الزامات درست ہیں، تاہم انہوں نے معاملے کو ختم کرنے کے لیے صحافی سے مانگی تھی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button