تازہ ترینخبریںدنیا سے

بھارت میں مسلمان مخالف جذبات پر کویتی سیاست دان اور عوام حرکت میں آگئے

بھارت میں مسلمان مخالف جذبات پر کویتی سیاست دان اور عوام حرکت میں آگئے۔

بھارت میں برسراقتدار انتہاپسند جماعت بی جے پی کی ریاستی غنڈہ گردی کے خلاف کویتی پارلیمنٹ کے 22 اراکین کے دستخطوں پر مشتمل مذمتی بیان جاری کیا گیا ہے۔

بیان میں حجاب کو مسلمان خواتین کا شرعی اور آئینی حق قرار دیتے ہوئے کہا گیا کہ بھارت سرکار کی جانب سے مسلم خواتین کو حجاب ترک کرنے کو درحقیقت اپنا دین اور سماجی شناخت چھوڑنے پر مجبور کرنا ہے۔

بیان میں بین الاقوامی انسانی حقوق سمیت اسلامی تنظیموں، حکومتوں اور کویت کی وزارت خارجہ سے بھارت کی انتہاپسند سرکار کو 20 کروڑ مسلمانوں کے خلاف جاری وحشیانہ اقدامات روکنے پر دباؤ ڈالنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

اس سے قبل کویتی پارلیمنٹ کے گیارہ ارکان نے بھارت کی بی جے پی سے وابستہ تمام افراد کا کویت میں داخلے پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

اس دوران گزشتہ روز کویت سٹی میں بھارتی سفارتخانے کے سامنے مسلمانوں اور حجاب کے حق میں عوامی مظاہرہ کیا گیا تھا، جس میں کویتی و دیگر غیر ملکی مسلم خواتین نے بڑی تعداد میں شرکت کی تھی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button