تازہ ترینجرم کہانیخبریں

ساتویں جماعت کی 11 سالہ طالبہ ٹیوشن ٹیچر کے ہاتھوں قتل

راولپنڈی کے علاقے رتہ امرال میں ساتویں جماعت کی 11 سالہ طالبہ کو پڑوس کے گھر میں اس کے ٹیوشن ٹیچر نے مبینہ طور پر قتل کر دیا۔

سٹی پولیس افسر عمر سعید ملک نے بتایا کہ ملزم کو گرفتار کر لیا گیا ہے اور اس کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

عمر سعید ملک نے کہا کہ ابتدائی تفتیش سے معلوم ہوا ہے کہ مشتبہ شخص زید نصیر کی بیٹی بریرہ زید کا ٹیچر تھا، جو النور مسجد کے قریب چک مدد کے رہائشی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بچی کے والدین کو شبہ ہے کہ ایبٹ آباد کا رہائشی عادل چن ان کی بچی کے لیے بُرے ارادے رکھتا تھا۔

ابتدائی پولیس رپورٹ کے مطابق چند روز قبل بچی کے والدین نے عادل کو کہا تھا کہ وہ نہیں چاہتے کہ اب وہ ان کی بیٹی کو پڑھائے جس پر وہ غصہ ہوگیا تھا۔

پیر کو عادل ایک اور طالب علم کو پڑھانے کے لیے محلے میں آیا اور بریرہ کو وہاں بلایا۔

عادل نے بریرہ کو اپنے والدین سے اس کے بارے میں شکایت کرنے پر ڈانٹا اور غصے میں آکر بچی کو چاقو مار کر قتل کر دیا۔

پولیس نے مزید کہا کہ ملزم کو گرفتار کر لیا گیا اور اس سے آلہ قتل برآمد کر لیا گیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button