تازہ ترینخبریںکاروبار

اردگان نے مہنگائی کے ستائے ترک عوام کو بڑا ریلیف دیدیا

مانیٹرنگ ڈیسکٞ ترکی میں مہنگائی اور افراد کی گرتی معیار زندگی کیخلاف جاری مظاہروں کے دوران صدر رجب طیب اردگان نے اشیائے خورونوش کے ٹیکس میں کمی کا فیصلہ کر دیا ہے۔
بین الاقوامی میڈیا کے مطابق اردگان نے اپنے بیان میں کہا کہ بنیادی اشیائے خورونوش پر لاگو ٹیکس 8فیصد سے 1فیصد کر دیا گیا ہے۔
صدر کی جانب سے یہ فیصلہ ترکی کے سرکاری اخبار میں شائع ہوگا جبکہ اس فیصلے کا نفاذ پیر سے ہوگا۔ ٹیکس میں کمی کے علاوہ اردگان نے اشیائے خورونوش کی کمپنیوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت امید کرتی ہے کہ کمپنیاں اپنی مصنوعات کی قیمتوں میں 7فیصد تک کمی لائیں گی کیونکہ کھانے پینے کی چیزیں ہی مہنگائی میں کلیدی کردار ادا کرتی ہیں۔
ترک صدر کا اپنے بیان میں یہ بھی کہنا تھا کہ قوم مہنگائی تلے کچلی جائے، یہ ہم کبھی نہیں ہونے دیں گے۔
جنوری کے سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ترکی میں مہنگائی کی شرح میں 48فیصد سالانہ اضافہ دیکھنے میں آیا جبکہ آزاد تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ یہ شرح 115فیصد سے بھی زیادہ ہے۔
دوسری جانب ترک حکومت کے ناقدین کا موقف ہے کہ ترکی میں مہنگائی کی وجہ اردگان کا سود کی شرح میں کمی کا فیصلہ ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button