پاکستان

صحافیوں نے پنجاب حکومت کے مجوزہ ہتک عزت قانون 2024 کو مسترد کردیا

صحافیوں نے پنجاب حکومت کے مجوزہ ہتک عزت قانون 2024کو مستردکردیا اور کہا قانون لاگو کرنےکی کوشش پنجاب حکومت کو مہنگی پڑے گی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور پریس کلب نے پنجاب حکومت کے مجوزہ ہتک عزت قانون 2024 کو مسترد کردیا۔

صدر لاہور پریس کلب ارشد انصاری نے کہا کہ ہم سچ کہنے،سچ دکھانے اور چھاپنے پریقین رکھتے ہیں،جبر قبول نہیں، پنجاب حکومت آمرانہ ڈگر پر چل پڑی ہے، قانون لاگو کرنے کی کوشش پنجاب حکومت کو مہنگی پڑے گی۔

ارشد انصاری کا کہنا تھا کہ صحافت ،صحافیوں کا گلہ دبانے کی بجائے حکومت گورننس پر توجہ دے، خوف ڈال کر صحافیوں کی زبان بندی کی کوشش کی گئی ہے، توقع ہے پنجاب حکومت کی اتحادی پیپلزپارٹی بھی آواز اٹھائے گی۔

انھوں نے کہا کہ آزاد صحافت سے خوفزدہ ہونےکی بجائے رہنمائی کا کام لیا جائے ، قانون سازی تمام فریقین کی مشاورت سے کی جائے ، مشاورت سےمثبت اوردیرپا نتائج حاصل ہوں گے۔

صدر لاہور پریس کلب نے خبردار کیا پنجاب حکومت جوش کی بجائے ہوش سے کام لے اور لاہور پریس کلب کےمتفقہ پلیٹ فارم سے تحریک کا آغاز کیا جائے گا، دھونس، جبر کی بجائے جمہوری انداز سے معاملات آگے بڑھائے جائیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button