ٹیکنالوجی

شمسی طوفان آج زمین سے ٹکرا گیا

گزشتہ 21 برسوں میں اب تک کا سب سے طاقتور ترین شمسی طوفان آج زمین سے ٹکرا گیا، جس کے سبب سیٹلائٹس اور پاور گرڈز میں خلل پیدا ہوا ۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق سورج سے خارج مادے کے بادل آج پاکستانی وقت کے مطابق صبح 9 بجے زمین سے ٹکرایا، جس کا سلسلہ اس ہفتے کے اختتام تک جاری رہے گا۔

امریکی میڈیا کے مطابق شمسی طوفان کے نتیجے میں پیدا ہونے والا ارضیاتی مقناطیسی طوفان جی فائیو لیول تک پہنچ گیا ہے، یہ 21 سال میں پہلی بار جی فائیو لیول تک پہنچا ہے، جس سے جی پی ایس، اسپیس کرافٹ، سیٹیلائٹ و دیگر ٹیکنالوجیز متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق آج زمین سے ٹکرانے والا شمسی طوفان 2003 کے بعد سے اب تک کا سب سے طاقتور ترین طوفان ہے، جس کے سبب آسٹریلیا کے علاقے تسمانیہ سے برطانیہ تک آسمانی روشنی کا شاندار نظارہ کیا گیا جو اس ہفتے کے اختتام تک جاری رہے گا۔

امریکی میڈیا رپورٹس کے مطابق گزشتہ شب مقناطیسی طوفان کے باعث برطانیہ کے مختلف مقامات پر ناردرن لائٹس کے دلفریب مناظر اس وقت دیکھنے میں آئے جب برطانیہ کے مختلف علاقوں میں آسمان پر سبز اور جامنی رنگ نمایاں ہوگئے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق برطانیہ میں ڈربی شائر، ایسیکس، برکشائر اور کینٹ میں ناردن لائٹس کا نظارہ کیا گیا۔

نیشنل اوشینک اینڈ ایٹموسفیرک ایڈمنسٹریشن کے اسپیس ویدر پریڈیکشن سینٹر کے مطابق سورج سے خارج ہونے والے مادے کے بادلوں کا پہلا جھنٹ پاکستانی وقت کے مطابق آج صبح 9 بجے زمین سے ٹکرایا۔

خیال رہے کہ 2003 میں آنے والے شمسی طوفان کے باعث سویڈن میں بلیک آؤٹ ہوگیا تھا جبکہ جنوبی افریقہ میں بجلی فراہمی کے بنیادی ڈھانچے کو نقصان پہنچا تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button