سیاسیاتپاکستان

حافظ نعیم کا گورنرسندھ اور مصطفیٰ کمال کی آڈیولیکس پر ردعمل

امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم نے گورنرسندھ اور مصطفیٰ کمال کی ویڈیو لیکس پر ردعمل دیتے ہوئے جعلی مینڈیٹ مسترد کرنےکا مطالبہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ 8 فروری کو کراچی سمیت پورے ملک میں انتخابات ہوئے الیکشن نتائج 9 اور 10 فروری کو جعلی فارم 47 کے مطابق سنائےگئے ایم کیوایم جیسی ریجیکٹڈ پارٹی کو جعلی فارم 47 کے نتائج سےکراچی پر مسلط کیا گیا۔

حافظ نعیم الرحمان نے کہا کہ جماعت اسلامی کا شروع سے مؤقف تھا فارم 45 نتائج کےتحت نتائج دیےجائیں، فارم 45 کے مطابق ایم کیو ایم کراچی کےکسی ایک پولنگ اسٹیشنز سے بھی نہیں جیتی، کراچی میں ساڑھے 5ہزار پولنگ اسٹیشنز اور 19ہزار پولنگ بوتھ ہیں ایم کیوایم کسی ایک جگہ سےبھی نہیں جیت سکی۔

ان کا کہنا تھا کہ مصطفیٰ کمال اور گورنرسندھ کے اعتراف کے بعد الیکشن کمیشن کےپاس کوئی جواز نہیں رہا الیکشن کمیشن فوری جعلی نتائج کو کالعدم قرار دے کر فارم 45 کے مطابق نتائج کا اعلان کرے، گورنر سندھ نے قوم کے سامنے بیان دیاکہ ملک میں200فیصد جعلی مینڈیٹ والےمسلط ہیں گورنر سندھ وعدہ معاف گواہ بن جائیں، بتادیں کس طرح رجیکٹڈپارٹی کو عوام پرمسلط کیا گیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button