انتخابات

الیکشن کمیشن تمام شکایتیں سن کر22 فروری سے پہلے فیصلہ کرے، عدالت

سندھ ہائیکورٹ نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن تمام شکایتیں سن کر 22 فروری سے پہلے قانون کے مطابق فیصلہ کرے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے40 سے زائد قومی و صوبائی حلقوں کے نتائج کیخلاف درخواستوں کے حوالے سے سندھ ہائی کورٹ نے تحریری فیصلہ جاری کردیا۔ عدالت نے کہا کہ الیکشن کمیشن تمام فریقین کی شکایت سن کر قانون کے مطابق فیصلہ کرے۔

عدالت کا کہنا تھا کہ تمام شکایتیں سن کر22 فروری سے پہلے الیکشن کمیشن فیصلہ کرے۔ الیکشن کمیشن درخواست گزاروں کے فارم 45 یا 47 کا ریکارڈ سے جائزہ لے۔

تحریری فیصلے میں کہا گیا کہ اگرکوئی بےضابطگی پائی جائے تو الیکشن کمیشن اسے دور کرے۔ الیکشن کمیشن درخواستوں پر قانون کے مطابق فیصلہ کرے۔ اس کے بعد متاثرہ فریق چاہے تو قانون کے مطابق متعلقہ فورم سے رجوع کرسکتا ہے۔

سندھ ہائی کورٹ نے کہا کہ تمام درخواست گزاروں نے ایک جیسے خدشات کا اظہار کیا ہے۔ درخواست گزاروں کے مطابق آر اوز نے فارم 47 امیدواروں کی غیرموجودگی میں بنایا۔

الیکشن کمیشن کا جواب میں کہنا تھا کہ درخواست گزار الیکشن ایکٹ 2017 کے تحت متعلقہ فورم سے رجوع کریں۔ عدالت نے مصطفیٰ کمال، خالد مقبول صدیقی و دیگرکیخلاف دائر تمام درخواستیں نمٹا دیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button