تازہ ترینخبریںپاکستان

جسٹس ریٹائرڈ شوکت صدیقی کی برطرفی سے متعلق کیس کی سپریم کورٹ میں لائیو سماعت

 

اسلام آباد ہائیکورٹ کے سابق جج جسٹس ریٹائرڈ شوکت صدیقی کی برطرفی سے متعلق کیس کی سپریم کورٹ میں براہ راست سماعت جاری ہے۔

چیف جسٹس پاکستان قاضی فائز عیسیٰ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا 5 رکنی لارجر بینچ کیس کی سماعت کر رہا ہے۔ جسٹس امین الدین خان، جسٹس جمال مندوخیل، جسٹس حسن اظہر رضوی اور جسٹس عرفان سعادت بھی لارجر بینچ میں شامل ہیں۔

شوکت عزیز صدیقی کے وکیل حامد خان نے روسٹرم پر آکر کہا کہ کیس میں بینچ تبدیل ہوگیا ہے، اس سے پہلےجسٹس عمر عطا بندیال بینچ میں تھے، جسٹس سردار طارق اور جسٹس اعجازالاحسن بھی بینچ میں تھے، مجھے اس بینچ میں بھی کسی پر اعتراض نہیں ہے۔
حامد خان نے سابق جج شوکت عزیز صدیقی کی تقریر کا ٹرانسکرپٹ پڑھ کر عدالت کو سنایا اور بتایا کہ ان کے سائل کو کہا گیا کہ اگر آپ نے ان کی خواہش کے مطابق فیصلہ سنا دیا تو آپ کو چیف جسٹس بنا دیا جائے گا، جس پر چیف جسٹس نے حامد خان کو ٹوکتے ہوئے کہا اگر آپ کسی پر الزام لگا رہے ہیں تو اس کو آپ کو پارٹی بنانا چاہیے، ایسا نہیں ہو سکتا کہ آپ کسی پر الزام لگائیں اور عدالت اس کا مؤقف نہ سنے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ موبائل پکڑ کر ہر کوئی صحافی نہیں بن جاتا بلکہ صحافی کا بڑا درجہ ہوتا ہے، ملک میں جمہوریت آ رہی ہے تو عدلیہ میں بھی جمہوریت آ رہی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button