تازہ ترینخبریںدنیا

غزہ کی تکالیف کو کم کرنے میں مدد کے لیے تیار ہیں

فلسطینیوں کے خلاف اسرائیلی دہشتگردی پر روس نے غزہ میں بین الاقوامی نگرانی کا مطالبہ کر دیا۔

روسی صدر ولادیمیر پیوٹن کا کہنا ہے کہ غزہ کے شہریوں کی تکالیف کو کم کرنےمیں مدد کے لیے تیار ہیں روس تنازع کو کم کرنے میں مدد کیلئے ہر ممکن مدد کےلیے تیار ہے۔

انہوں نے کہا کہ انسانی صورتحال پر نظر رکھنے کیلئے عالمی  مانیٹرنگ مشن کو غزہ جانا چاہیے۔

روس نے غزہ جنگ بندی کیلئےسلامتی کونسل کی قرارداد کی حمایت بھی کی تھی تاہم جنگ بندی کی سلامتی کونسل قرارداد کو امریکا نے ویٹو کر دیا تھا۔

نیتن یاہو اسرائیل کے خلاف روس کےموقف سے پریشان ہیں۔

نیتن یاہو نے روسی صدر ولادیمیر پیوٹن سے فون پر رابطہ کیا اور روس ایران کےتعلقات پربھی تنقید کی۔ نیتن یاہو نے اسرائیل کے خلاف روس کے موقف پر ’ناراضگی‘ کا اظہار کیا۔

وزیر اعظم نے اس بات پر زور دیا کہ کوئی بھی ملک جو مجرمانہ دہشت گردانہ حملے کا شکار ہو گا جیسا کہ اسرائیل کا تجربہ ہوا ہے وہ اس سے کم طاقت کے ساتھ کارروائی کرے گا جس میں اسرائیل کام کرتا ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ نیتن یاہو نے "روس اور ایران کے درمیان خطرناک تعاون پر بھی کڑی تنقید کی”۔

اسرائیل کی غزہ میں دہشت گردی پر روس کے وزیرخارجہ سرگئی لاروف نے سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ حماس کی آڑ میں فلسطینیوں کو سزا دینےکا کوئی جواز نہیں، 7 اکتوبر کے حملےکی آڑ میں فلسطینی عوام کاقتل عام ناقابل قبول ہے، اسرائیل کے قبضے میں راہداریوں پر بین الاقوامی نگرانی کی جائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button