تازہ ترینخبریںپاکستان

کیا ذوالفقار علی بھٹو کی پھانسی عدالتی قتل تھا؟ ریفرنس مقرر

سپریم کورٹ نے پاکستان پیپلز پارٹی کے بانی چیئرمین ذوالفقار علی بھٹو کی پھانسی کے مقدمے پر صدارتی ریفرنس کو کئی برسوں کے بعد دوبارہ سماعت کے لیے مقرر کیا ہے۔ 12 دسمبر کو چیف جسٹس کی سربراہی میں 9 رکنی لارجر بینچ سماعت کرے گا۔

چیف جسٹس پاکستان قاضی فائز عیسیٰ کی زیر صدارت تین رکنی کمیٹی کا اہم اجلاس ہوا جس میں ملکی تاریخ کے اہم عدالتی مقدمات کو سماعت کیلئے مقرر کردیا گیا۔ سپریم کورٹ کی جانب سے اگلے ہفتے کے مقدمات کی جاری کی گئی کاز لسٹ کے مطابق چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی سربراہی میں عدالت عظمیٰ کا 9 رکنی لارجر بینچ صدارتی ریفرنس کی سماعت کرے گا۔

سابق وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو قتل کیس فیصلے پر دائر صدارتی ریفرنس کی سماعت کے لیے 12 دسمبر کی تاریخ مقرر کی گئی ہے۔

ریفرنس کی سماعت کرنے والے 9 رکنی عدالتی بینچ میں جسٹس سردار طارق مسعود، جسٹس منصور علی شاہ، جسٹس یحییٰ آفریدی، جسٹس امین الدین خان، جسٹس جمال خان مندوخیل، جسٹس محمد علی مظہر، جسٹس حسن اظہر رضوی اور جسٹس مسرت ہلالی شامل ہیں۔

سابق صدر آصف علی زرداری نے اپریل 2011 میں صدارتی ریفرنس سپریم کورٹ میں دائر کیا تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button