تازہ ترینخبریںسیاسیات

‘دو صوبوں میں امن نہیں تو انتخابی مہم کیسے چلے گی؟’

جمیعت علمائے اسلام (جے یو آئی) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے سوال اٹھایا ہے کہ دو صوبے بدامنی کی لپیٹ میں ہیں،کیا اس صورت حال میں انتخابی مہم چلائی جاسکتی ہے؟

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو میں مولانا فضل الرحمان نے دعویٰ کیا کہ ڈیرہ اسماعیل خان، ٹانک، لکی مروت میں پولیس ہی نہیں،رات کو مسلح افراد کا راج چلتا ہے، دن میں پولیس آجاتی ہے جبکہ پشاور میں بھی بدامنی کے واقعات ہو رہے ہیں۔

انہوں سوال کیا کہ دو صوبے بدامنی کی لپیٹ میں ہیں کیا اس صورت حال میں انتخابی مہم چلائی جاسکتی ہے؟

مولانا فضل الرحمان نے ساتھ ہی یہ بھی کہہ دیا کہ اس کا یہ مطلب نہیں کہ ہم انتخابات ملتوی کرانا چاہتے ہیں لیکن یہ ایک سوال تو ہے، ہم الیکشن کے لیے تیار ہیں لیکن ہمیں پُر امن انتخابی ماحول دیا جائے۔

انہوں سوال کیا کہ دو صوبے بدامنی کی لپیٹ میں ہیں کیا اس صورت حال میں انتخابی مہم چلائی جاسکتی ہے؟

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button