تازہ ترینخبریںدنیا سے

امریکی بحریہ نے یمن سے آنے والے تین میزائل مار گرائے

امریکی وزارت دفاع نے کہا ہے کہ بحیرہ احمر میں امریکی بحریہ کے ایک جہاز نے تین میزائلوں کو مار گرایا تاہم فوری طور پر یہ تعین نہیں ہوسکا کہ آیا انہیں اسرائیل پر فائر کیا گیا تھا یا نہیں۔

اس حوالے سے پینٹاگون کے پریس سیکرٹری پیٹرک رائیڈر نے کہا کہ اس سے پہلے دن کے وقت بحیرہ احمر کے شمالی حصے میں کارروائیاں کرنے والے گائیڈڈ میزائل ڈیسٹرائر یو ایس ایس کارنی نے زمین سے فائر کیے جانے والے تین کروز میزائلوں اور کئی ڈرونز کو مار گرایا۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق پریس سیکرٹری رائیڈر نے بتایا کہ ممکنہ طور پر مذکورہ میزائل اور ڈرون حوثی فورسز نے داغے تھے، حوثی یمن میں ایرانی حمایت یافتہ باغی گروپ ہیں۔

پریس سیکرٹری نے مزید کہا کہ ہم یقینی طور پر نہیں کہہ سکتے کہ ان میزائلوں اور ڈرونز کا نشانہ کہاں تھا لیکن یہ یمن سے بحیرہ احمر کے ساتھ شمال کی سمت ممکنہ طور پر اسرائیل کے اہداف کی طرف داغے گئے تھے۔

امریکہ، ایران اور اس کی پشت پناہی کرنے والے گروپوں جیسی اسرائیل مخالف قوتوں کو اسرائیل اور حماس کے جاری تنازعے میں مداخلت سے روکنا چاہتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button