تازہ ترینخبریںپاکستان سے

حکومتی رٹ چیلنج کرنے اور پولیس پر فائرنگ کرنے پر مذہبی جماعت کے 34 افراد گرفتار

ایبٹ آباد(نمائندہ خصوصی)حویلیاں میں مذہبی جماعت کی طرف سے امن و امان کی صورت حال کو خراب کرنے درجنوں پولیس افسران جوانوں پر فائرنگ اور زخمی کرنے، سرکاری و پرائیویٹ گاڑیوں، موٹر سائیکلوں و املاک کی توڑ پھوڑ اور نذر آتش اور دفعہ 144 کی خلاف ورزی، سرکاری ملازمین کو اغواء کرنے پر مقدمہ درج کرکے 34 افراد گرفتار کو گرفتار کرلیا گیا۔

بروز اتوار ایک مذہبی تنظیم کے سربراہ سعد حسین رضوی ، مفتی شفیق امین اور قاری عمیر الزاری کی قیادت میں تقریباً 6 ہزار سے زاہد افراد پر مشتمل ایک جلوس جس میں سی سینکڑوں گاڑیاں بھی شامل تھیں ایبٹ آباد میں دفعہ 144 کی خلاف ورزی کرتے ہوئے داخل ہوئے جس پر انتظامیہ کی طرف سے مقامی عمائدین جن میں ڈی آر سی ممبران، امن کمیٹی، علمائے کرام، تاجران،نے امن و امان کی صورتحال کو برقرار رکھنے کے لیے مذہبی تنظیم کے رہنماؤں سے مذاکرات کی کوشش کی، لیکن انہوں نے مذاکرات سے انکار کر دیا اور ڈیوٹی پر موجود 33پولیس افسران اور جوانوں کوفائرنگ، لاٹھیوں، ڈنڈوں، غلیلوں کانچوں سے حملہ کرکے شدید زخمی کر دیا، جبکہ پولیس سمیت دیگر کئی پرائیوٹ گاڑیاں اور موٹر سائیکل نذر آتش کر دیں اور بھاری مقدار میں اسلحہ لے کر فرار ہو گئے اور 05سرکاری ملازمین کو بھی اغواء کر لیا جنہیں بعد میں بازیاب کروا لیا گیا تھا ۔

حکومت کی رٹ چیلنج کرنے پر مذہبی جماعت کے رہنماوں کے خلاف تھانہ حویلیاں میں مقدمہ درج کرکے 34 ملزمان کو موقع سے گرفتار کیا گیا اور زیر دفعات پی پی سی،324/436/153A/353/365/188/189/147/148/149/341/427 اور 7 اے ٹی اے کے تحت مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی گئی۔

ادھر ڈی پی اوایبٹ آباد سجاد خان نے ایوب میڈیکل کمپلیکس مذہبی تنظیم کے کارکنوں کے تشدد سے شدید ذخمی ہونے والے پولیس افسران اور جوانوں کی عیادت کی اور جلد صحت یابی کی دعا فرمائی اور ہر قسم کے تعاون کی یقین دہانی کروائی ہے۔

پولیس اور مذہبی تنظیم کی مڈبھیڑ میں مذہبی جماعت کے کارکنان کی ہلاکت کی بھی خبریں گردش کر رہی ہیں تاہم وہ دونوں تھانہ جات کی حدود میں رپورٹ نہیں ہوئیں ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button