تازہ ترینخبریںدنیا سے

13 سالہ طالبعلم نے اسکول میں خودکشی کیوں کی؟ والدہ کا خوفناک انکشاف

امریکا کے ایک اسکول میں 13 سالہ لڑکا باتھ میں مردہ حالت میں پایا گیا، طالبعلم کی والدہ نے انکشاف کیا کہ اس کے بیٹے نے خودکشی کی ہے۔

امریکا کی ریاست نارتھ کیرولائنا کے ایک مڈل اسکول کیمپس میں 13 سالہ طالبعلم آسٹن پینڈر گراس گزشتہ منگل کو باتھ روم میں مردہ حالت میں پایا گیا، ابتدائی طور پر اس کو طبی موت قرار دیا گیا بعد ازاں لڑکے کی والدہ نے اپنے بیٹے کی موت کی وجہ خودکشی کرنا قرار دیا اور یہ خوفناک انکشاف کیا کہ اس نے مسلسل ظالمانہ رویے اور غنڈہ گردی سے تنگ آکر اپنی زندگی کا خاتمہ کیا۔

ایک امریکی ٹی وی کو انٹرویو میں آسٹن کی والدہ جیسیکا گراس نے یہ ہولناک انکشاف کیا کہ اس کے بیٹے کو چھٹی جماعت سے ہی غنڈہ گردی کا نشانہ بنایا جا رہا تھا اور ان حملوں نے اسے بہت نقصان پہنچایا تھا تاہم انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ اس سے ظالمانہ طرز عمل اور غنڈہ گردی کرنے والے عناصر کون تھے؟

جیسیکا کا کہنا تھا کہ دھونس اور دھمکانا ایک بدترین طرز عمل اور اس کا تصور بھی بہت خوفناک ہے، ان رویوں نے اسے بہت تنہا کردیا تھا، میرا دیگر والدین کو یہی کہنا ہے کہ وہ اپنے بچوں کو چیک کریں، خاص طور پر سوشل میڈیا چیک کریں، ان کو دوست بنائیں، انکے مسائل سنیں اور انہیں زندگی سے پیار کرنا سکھائیں۔

آسٹن کی والدہ نے اپنے بیٹے کا یاد کرتے ہوئے کہا کہ وہ ایک بہت پیار کرنے والا اور ذہین لڑکا تھا جو میرے ساتھ بیکنگ سے لطف اٹھاتا تھا اور سمندری کچھوؤں کو پسند کرتا تھا۔

طالبعلم خاندان اور دوستوں نے گزشتہ روز ایک تقریب میں آسٹن نے خراج تحسین پیش کرنے کے لیے فضا میں سرخ غبارے چھوڑے، اس موقع پر اس کی والدہ کا کہنا تھا کہ میری خواہش ہے کہ میرے بیٹے کو معلوم ہوتا کہ وہ تنہا نہیں ہے بلکہ تمام لوگ یہاں اس کی حمایت کے لیے موجود ہیں۔

جیسیکا نے کہا کہ وہ امید کرتی ہیں کہ وہ اب بچوں کے خلاف ہراسگی، غنڈہ گری کے منفی اثرات سے متعلق معاشرے میں آگاہی پھیلا سکتی ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button