22 جولائی 2019
تازہ ترین
تیونس ، خواتین کے نقاب لگانے پر پابندی

تیونس ، خواتین کے نقاب لگانے پر پابندی

تیونس کی حکومت نے عوامی مقامات پر خواتین کے نقاب لگانے پر پابندی عائد کردی۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق تیونس کے وزیراعظم  نے سرکاری حکم نامہ جاری کیا ، جس میں عوامی مقامات پر خواتین کے نقاب لگانے پر سخت پابندی عائد کی گئی۔ رپورٹ کے مطابق خواتین کے نقاب پر پابندی حالیہ خودکش حملوں کے بعد سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر لگائی گئی ۔ سرکاری حکم نامے کے مطابق کسی بھی خاتون کو دفتر، تعلیمی ادارے یا شاپنگ مال وغیرہ میں چہرہ ڈھانپنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ دوسری جانب خودکش حملے سے متعلق بعض عینی شاہدین نے کہا ہے کہ حملہ آور نے نے اپنا چہرہ ڈھانپا ہوا تھا۔ تیونس کے وزیر داخلہ نے عینی شاہدین کے موقف کی تردید کردی اور کہاکہ حملہ آور نے اپنے آپ کو دھماکے سے اس لئے اڑا لیا تاکہ اسے کوئی پکڑ نہ سکے۔ واضح رہے کہ برطانیہ، افریقہ اور بعض ایشیائی ممالک میں خواتین کے عوامی مقامات پر نقاب لگانے پر پابندی عائد ہے، جسے انسانی حقوق کی تنظیموں نے مذہبی اور شخصی آزادی کے منافی قرار دیا ہے۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟