25 مئی 2019
تازہ ترین
رمضان میں صحت کیلئے ضروری پھل

رمضان میں صحت کیلئے ضروری پھل

 اگر آپ رمضان کے دوران اپنے جسم کو صحت مند بنانا چاہتے ہیں تو چند پھلوں کو افطار میں استعمال کرنا اپنی عادت بنا لیں، جن کے فوائد آپ کو حیران کر دیں گے۔ ویسے تو ہو سکتا کہ سب کو معلوم ہو کہ کیلوں میں پوٹاشیم کی زیادہ مقدار ہوتی ہے مگر آڑو میں جسم کے لئے ضروری اس منرل کی مقدار ایک درمیانے سائز کے کیلے سے زیادہ ہوتی ہے جو اعصابی طاقت کو بڑھانے کے ساتھ پٹھوں کی صحت بھی بہتر بناتی ہے۔ آڑو کی جلد اینٹی آکسیڈینٹس اور فائبر سے بھرپور ہوتی ہے اور وہ لوگ جو اپنے بڑھتے وزن سے پریشان ہیں، ان کے لئے آڑو کسی بھی غذا میں مٹھاس بڑھانے کے لئے ایک صحت مند ذریعہ ہے۔ یہ بھی کافی آسانی سے مل جانے والا پھل ہے جسے کسی بھی شکل جیسے خشک، منجمند وغیرہ میں استعمال کیا جائے تو یہ صحت کے لئے فائدہ مند ہی ثابت ہوتا ہے۔ جس کی وجہ اس میں موجود ورم کش جزو Bromelain ہے جو دل کے دورے اور فالج جیسے امراض کے خطرات کو کم کرتا ہے جبکہ بانجھ پن کا امکان بھی دور کرتا ہے۔ آم تو پھلوں کا بادشاہ ہے اور گرمیوں میں اس کے بغیر اکثر افراد کا گزارہ نہیں ہوتا۔ اس میں ایک جزو بیٹا کیروٹین بہت زیادہ مقدار میں پایا جاتا ہے جو جسم میں جا کر وٹامن اے میں تبدیل ہو جاتا ہے اور ہڈیوں کی نشوونما کے لئے جسمانی دفاعی نظام کو مضبوط بناتا ہے جبکہ بینائی کے لئے بھی یہ وٹامن بہت ضروری ہوتا ہے۔ اسی طرح اس میں وٹامن سی بھی ہوتا ہے جو جلد کی صحت کے لئے بہترین تصور کیا جاتا ہے۔ ایک درمیانے سائز کے سیب میں صرف 80 کیلوریز ہوتی ہیں مگر ایک طاقتور اینٹی آکسیڈینٹ کیورٹیشن اس کا حصہ ہوتا ہے جو ان دماغی خلیات کی تنزلی کی روک تھام کرتا ہے، جو الزائمر جیسے مرض کا باعث بنتے ہیں۔ جو افراد سیب کھانے کے شوقین ہوتے ہیں ان میں ہائی بلڈ پریشر کے مرض کا امکان بھی ہوتا ہے جبکہ یہ پھل کولیسٹرول کی سطح کم کرنے کے ساتھ آنتوں کے کینسر سے بھی تحفظ دیتا ہے۔ یہ دانتوں کی صحت کے لئے بھی بہترین پھل ہے جبکہ جسمانی وزن بھی کم کرتا ہے ۔اس کے چھلکے میں بھی بیماریوں کے خلاف لڑنے والے اجزا ہوتے ہیں جو امراض قلب کا خطرہ کم کر دیتے ہیں۔ کیلے پوٹاشیم اور فائبر سے بھرپور ہوتے ہیں جو جسمانی توانائی کو دیر تک برقرار رکھتے ہیں اور آپ کو جسمانی طور پر پورا دن چوکنا رکھتے ہیں۔ اس میں چربی یا نمک شامل نہیں ہے۔ اس لئے یہ جسمانی وزن میں اضافے یا کسی اور مرض کا خطرہ بھی نہیں بڑھاتے۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟