15 نومبر 2019
تازہ ترین
 پاک افغان تعلقات پر منفی تاثر پیدا نہیں کرنے دیں گے، شاہ محمود

 پاک افغان تعلقات پر منفی تاثر پیدا نہیں کرنے دیں گے، شاہ محمود

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان اور افغانستان اپنی سرزمین ایک دوسرے کے خلاف استعمال نہ ہونے دیں۔ بھوربن میں افغان امن عمل کے لئے لاہور پراسیس کے نام سے کانفرنس کے افتتاحی سیشن سے خطاب کے دوران شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آج ہم امن و استحکام اور مشترکہ مستقبل کے لئے اکٹھے ہوئے ہیں، پاکستان اور افغانستان یکساں تاریخ، مذہبی تعلق، زبان اور ثقافت رکھتے ہیں، پاکستان کی جانب سے افغان مہاجرین کو دہائیوں سے پناہ دینا اسی بھائی چارے کا غماز ہے۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان سمیت ہمسایہ ممالک کے ساتھ پرامن تعلقات چاہتے ہیں، پاکستان ایک پرامن اور مستحکم افغانستان کی حمایت کرتا ہے۔ پاکستان اور افغانستان اپنی سرزمین ایک دوسرے کے خلاف استعمال نہ ہونے دیں، پاکستان اور افغانستان عدم استحکام اور تنازعات کے باعث شدید متاثر ہوئے، ایک دوسرے کے درمیان عدم اعتماد کی فضا کسی کے مفاد میں نہیں، پاک افغان تعلقات پر کسی کو عدم اعتماد پیدا کرنے، پروپیگنڈہ یا منفی تاثر پیدا نہیں کرنے دیں گے۔ افغانستان کو تجارتی، معاشی اور اقتصادی امور میں ہرممکن مدد دیں گے۔ افغان مہاجرین کی باعزت اور محفوظ وطن واپسی کے خواہاں ہیں۔ کانفرنس سے خطاب کے دوران سابق افغان وزیر اعظم گلبدین حکمت یار نے کہا کہ عراق یمن ایران اور افغانستان میں بدامنی کا ماحول ہے، پاکستان اور افغانستان مل دونوں افغان جنگ کا خاتمہ کرسکتے ہیں ۔ یہ جنگ افغانستان کی جنگ نہیں بلکہ پاکستان کے بقا کی جنگ بھی ہے۔ شمالی اتحاد کے رہنما احمد شاہ مسعود مرحوم کے بھائی احمد ولی مسعود نے کہا کہ آج پاکستان اور افغانستان کے مابین ایک نیا باب شروع ہو رہا ہے، آج ہمیں تعلقات کا نیا اور بہترین آغاز کرنا ہے۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟