19 نومبر 2019
تازہ ترین
 لیموں کینسر کے خطرات کم کرنے میں مددگار

 لیموں کینسر کے خطرات کم کرنے میں مددگار

 گرمی اپنے عروج پر ہے اور اس کو مات دینے کے لئے کئی طریقے کے مشروبات کا استعمال کیا جارہا ہے بالخصوص لیموں کے مشروبات کا۔ لیموں نہ صرف گرمیوں کا توڑ کرتا ہے بلکہ اس کے کئی طبی فوائد ہیں۔ وزن میں کمی کرنے کے کئی طریقے ہیں، مگر اس کا ایک عام طریقہ سلوبل پیکٹن فائبر کا ہے، جو پیٹ کے نظام کو درست کرنے اور کولیسٹرول کی مقدار کو محدود کرنے میں مددگار ہوتا ہے۔ لیموں میں ہاضمے کے نظام کو درست کرنے اور کولیسٹرول کو کنٹرول کرنے کی خصوصیات شامل ہیں، مگر اس طریقے کے لئے لیموں کا جوس پینے کے بجائے اس کا عرق استعمال کیا جائے، یا اس کے چھلکوں سے استفادہ حاصل کیا جائے تو بہتر ہے۔ لیموں میں موجود سٹرک ایسڈ، پوٹاشیم، کیلشیئم اور دیگر جزیات مل کر گردوں میں پتھری کی پیدائش کو روکتے ہیں ۔ لیموں کے جوس،عرق یا چھلکے کا یومیہ استعمال پیشاب کی صلاحیت کو بڑھا دیتا ہے، جس سے کڈنی میں خرابی پیدا ہونے کے امکانات کم ہوتے ہیں۔ تو لیموں پانی سے لطف اندوز ہوں مگر کوشش کریں کہ اس میں چینی کا اضافہ نہ کریں کیونکہ اس سے گردوں میں پتھری کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔ لیموں میں شامل وٹامن سی اینیمیا کے خلاف لڑتا تو نہیں مگر یہ آئرن کی طاقت کو ضرور بڑھاتا ہے جو اس بیماری کی روک تھام میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق وٹامن سی کے ساتھ آئرن کو کھانا ہمارے جسم میں آئرن کو جذب کرنا آسان کردیتا ہے۔ آئرن سے بھرپور غذائوں میں لیموں کو چھڑکنے سے نہ صرف ذائقہ بڑھتا ہے بلکہ آئرن کے تمام فوائد بھی حاصل ہوتے ہیں۔ لیموں کینسر کے خطرات کم کرنے میں مددگار ہوتے ہیں، تاہم سٹرک ایسڈ کے حامل فروٹ بھی ایسے خطرات کم کرنے میں مددگار ہوتے ہیں۔ لیموں میں شامل لیمونین، بیٹا کراپٹوکسینتھن، ہیسپیریڈن اور نیرنگینین نامی جزیات کینسر کے خطرات کو کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں۔ لیموں میں ایسے جزیات پائے جاتے ہیں جو اسپغول میں موجود ہوتے ہیں، یہ جزیات جہاں کولیسٹرول اور پیٹ کے اندرونی گوشت کو پھیلنے سے روکنے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں، وہیں یہ ہاضمے کا نظام بھی درست کرنے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟