05 دسمبر 2019
تازہ ترین
 قندیل بلوچ  قتل کیس تین سال بعد بھی تاخیر کا شکار

 قندیل بلوچ  قتل کیس تین سال بعد بھی تاخیر کا شکار

معروف ماڈل قندیل بلوچ کے قتل کو تین سال مکمل ہو گئے، ماڈل کو بھائی نے ساتھیوں سمیت مل کر غیرت کے نام پر قتل کر دیا تھا، تین سال بعد بھی قتل کا کیس صرف شہادتوں تک ہی پہنچ سکا ہے۔ ماڈل قندیل بلوچ کو تین سال قبل ملتان کے علاقے مظفر آباد میں بھائی وسیم نے دو ساتھیوں کے ساتھ مل کر گلا دبا کر قتل کر دیا تھا جس پر مرکزی ملزم وسیم، حق نواز، عبد الباسط، ظفر، اسلم شاہین، عارف اور مفتی عبد القوی کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا تاہم تین سال گزرنے کے باوجود بھی ایک ملزم عارف کو تاحال گرفتار نہیں کیا جا سکا۔ وسیم کے علاوہ باقی تمام ملزمان ضمانت پر ہیں جبکہ قتل کا کیس تاحال گواہیوں تک ہی پہنچا ہے، ماڈل کے والدین بھی اپنے بیٹے کو بچانے کے لئے عدالت میں تین بار بیانات بدل چکے ہیں۔  


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟