بارش کے باعث قومی کرکٹرز انڈور سرگرمیوں تک محدود

 بارش کے باعث قومی کرکٹرز انڈور سرگرمیوں تک محدود

ٹائونٹین میں بارش نے پاکستانی کرکٹرزکوانڈور سرگرمیوں تک محدود کردیا، کھلاڑی بیٹنگ اور بائولنگ میں صلاحیتیں نکھارنے کیلئے  کوشاں رہے، ورلڈ کپ میں آسٹریلیا کے خلاف اہم میچ کی تیاریوں کیلئے مزید 2 روزمیسر ہیں۔ تفصیلات کے مطابق سری لنکا کے خلاف برسٹل میں میچ بارش کی نذر ہونے کی وجہ سے پاکستان کو صرف ایک پوائنٹ پر اکتفا کرنا پڑا، آسٹریلیا کیساتھ ٹائونٹین میں بدھ کو شیڈول اہم مقابلے کے حوالے سے بھی کوئی اچھی اطلاعات نہیں ہیں، یہاں بھی بارش کی مداخلت کا خدشہ ہے، گزشتہ روز پاکستان ٹیم نے میدان میں فیلڈنگ سیشن کیا، اس دوران  کھلاڑیوں نے مشکل کیچز  تھامنے کے ساتھ وکٹوں کو نشانہ بنانے کی مشق بھی جاری رکھی، بعد ازاں رم جھم شروع ہونے پر میدان میں پھسلن کے پیش نظر انڈور پریکٹس کو ترجیح دی، نیٹس میں بیٹسمینوں نے کوچزکی رہنمائی میں بیٹنگ میں اپنی خامیاں دور کرنے پر توجہ دی، ٹاپ آرڈر میں شامل فخر زمان، امام الحق اور بابر اعظم نے طویل سیشن کیا۔ انہوں نے آف سٹمپ سے باہرجاتی گیندوں کا مسلسل سامنا کرتے ہوئے اپنے  سٹروکس چیک کئے، کوچز مختلف مواقع پر غلطیوں کی نشاندہی بھی کرتے رہے، ایک الگ نیٹ میں پہلے شعیب ملک بعد ازاں سرفراز احمد اور آصف علی نے فاسٹ اور پھر سپن بائولنگ کا سامنا کیا، محمد حفیظ نے بھی دل کھول کر سٹروکس کھیلے، بعد ازاں لوئرآرڈر بیٹسمینوں نے بھی اپنی صلاحیتوں کو بہتر بنانے کیلئے کام کیا۔ بائولرز میں وہاب ریاض، محمد عامر اور حسن علی نے مصنوعی ٹرف پربائونس حاصل کرنے کی کوشش کی، تینوں نے اپنی تیزگیندوں سے بیٹسمینوں کو خاصا پریشان کیا، شاداب خان اور عماد وسیم نے سپن بائولنگ میں اپنی لائن اور لینتھ بہتر بنانے کی کوشش جاری رکھی، مہمان کرکٹرز کو پریکٹس کرانے کیلئے میزبان کلب بائولرز کی معاونت بھی حاصل رہی۔ پاکستان ٹیم کو کینگروز کے خلاف مقابلے سے قبل ٹریننگ کیلئے مزید 2 روز میسر ہوں گے۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟