02 دسمبر 2021
تازہ ترین
انضمام کی انگلینڈ میں موجودگی ٹیم کیلئے تباہ کن

انضمام کی انگلینڈ میں موجودگی ٹیم کیلئے تباہ کن

چیف سلیکٹر انضمام الحق کی انگلینڈ میں موجودگی ٹیم کیلئے تباہ کن ثابت ہوئی۔ چیف سلیکٹر انضمام الحق کی زیر سربراہی قائم  سلیکشن کمیٹی کی تین سالہ مدت مکمل ہو چکی، اسے ورلڈکپ سکواڈ منتخب کرنے کا اضافی ٹاسک دیا گیا تھا، میگا ایونٹ سے قبل انہوں نے بورڈ حکام کے سامنے اس خواہش کا اظہار کیا کہ قومی ٹیم کی کارکردگی کا جائزہ لینے کیلئے انگلینڈ جانا چاہتے ہیں، ساتھ ہی یہ بھی کہا کہ اس دوران بیٹسمینوں کی رہنمائی بھی کریں گے۔ انضمام کو پی سی بی نے بزنس کلاس کا فضائی ٹکٹ دے کر بھیجا، انہیں 500 ڈالر ڈیلی الائونس دیا گیا، اس دوران بورڈ کی اچھی خاصی رقم خرچ ہو گئی، ذرائع نے بتایا کہ انگلینڈ جانے کے بعد سابق کپتان نے ٹیم مینجمنٹ کے کام میں مداخلت شروع کردی۔ عموماً 15 کھلاڑیوں کا انتخاب کرنے کے بعد سلیکشن کمیٹی  کا کام ختم ہو جاتا ہے مگر حیران کن طور پر ورلڈکپ جیسے اہم ایونٹ میں ایسا نہیں ہوا، انضمام کو  کپتان سرفراز احمد اور کوچ مکی آرتھر کے ساتھ  ٹور سلیکشن کمیٹی میں بھی شامل کر لیا گیا، یوں پلیئنگ الیون کے انتخاب میں ان کی رائے بھی شامل رہی، اس دوران انہوں نے بعض مخصوص کھلاڑیوں کی شمولیت کیلئے اپنے اختیارات کا ناجائز فائدہ اٹھایا۔ ٹیم مینجمنٹ انضمام الحق سے خوش نہ تھی، سونے پر سہاگہ یہ ہوا کہ وہ قومی ٹیم کے ٹریننگ سیشنزمیں جا کرکھلاڑیوں کو مفید مشوروںسے نوازنے لگے، کوچز کی بھاری بھرکم فوج نے اسے اپنے کام میں مداخلت تصور کیا۔ ذرائع نے بتایا کہ ورلڈکپ میں ٹیم کا تیاپانچہ ہونے کے بعد اب چیف سلیکٹر اپنے رشتہ داروں کے پاس چلے گئے ہیں، بقیہ میچز میں کھلاڑیوں کو ان کی خدمات حاصل نہیں ہوں گی۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا آپ کووڈ 19 کے حوالے سے حکومتی اقدامات سے مطمئن ہیں؟