17 نومبر 2018
54 گھنٹے میں مکمل گھر بنانے والا روبوٹ

فرانسیسی تعمیراتی کمپنی نے ایک ایسا مستری روبوٹ بنایا ، جو تھری ڈی پرنٹنگ کرتے ہوئے پانچ افراد کیلئے ایک مکمل گھر صرف 54 گھنٹے میں تیار کر سکتا ہے۔ ٹیکنالوجی کے عملی مظاہرے کے طور پر روبوٹ نے 1022 مربع فٹ کا ایک گھر تیار کیا ، جس کی تیاری میں دو دن اور چھ گھنٹے لگے ہیں۔ تاہم ماہرین اس وقت کو کم کرکے صرف 33 گھنٹے پر لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ بیٹی پرنٹ کمپنی نے یہ تھری ڈی پرنٹنگ روبوٹ بنایا ، جو عام گھروں سے 20 فیصد کم خرچ میں انتہائی موثر اور مضبوط گھر تعمیر کرتا ہے۔ تجرباتی طور پر کمپنی نے فرانس کے شہر نانٹیس میں ایک گھر تیار کرکے اپنے روبوٹ کا عملی مظاہرہ کیا ۔ یہ پہلا تھری ڈی گھر ہے جس میں اب لوگ مستقل طور پر رہیں گے۔ اس عمل میں ایک روبوٹ دھیرے دھیرے زمین کی سطح سے دیوار اٹھاتا رہتا ہے ۔ روبوٹ کسی مداخلت کے بغیر پولی یوریتھین کی دو اور کنکریٹ کی ایک پرت سینڈوچ کی طرح بناتا رہتا ہے۔ گھر مکمل ہونے کے بعد کے بعد غسل خانوں سمیت پانچ کمرے تیار ہوئے اور مکان کی بیرونی دیواریں بھی خوبصورت انداز میں خمیدہ ہیں۔ روبوٹ کے نوزل سے پولی یوریتھین شیونگ کریم کی طرح خارج ہوتا ہے جو پھیلتے پھیلتے کنکریٹ میں سما جاتا ہے۔ اس مٹیریل کی وجہ سے گھر قدرتی طور پر گرم یا سرد رہتا ہے اور بیرونی گرمی سردی کو روک سکتا ہے۔ روبوٹ عین سافٹ ویئر کی ہدایت کے مطابق، لیزر شعاع کی رہنمائی میں اپنا کام کرتا ہے۔ بیٹی پرنٹ کا خیال ہے کہ یہ ٹیکنالوجی مکانوں کی تعمیر کو آسان اور کم خرچ بناتے ہوئے ایک نیا انقلابی عمل ثابت ہوگی۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟