25 جون 2019
عمران خان کی حیثیت نہیں وہ این آر او دے  چند دن بعد وہ خود این آر او مانگ رہا ہو گا, مریم نواز

عمران خان کی حیثیت نہیں وہ این آر او دے  چند دن بعد وہ خود این آر او مانگ رہا ہو گا, مریم نواز

مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نوازنے وزیراعظم کے قوم سے خطاب پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان ڈرپوک اعظم ہے جو پیچھے سے وار کرتا ہے۔ ظفر وال میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے مریم نوازنے کہا کہ نوازشریف کی آف شور کمپنی نہیں تھی پھر بھی سزا ملی، نواز شریف کو اقامے جیسے مذاق پر وزیراعظم کی کرسی سے ہٹایا گیا اور جب سے نوازشریف کو ہٹایا گیا ہے تیزی سے ترقی کرتا ہوا ملک تنزلی کی جانب آگیا، نوازشریف کا 2018 کا جیتا ہوا الیکشن چوری کیا گیا۔ مریم نواز نے کہا کہ جس نے ساری عمر دوسروں کی جیبوں کا کھایا ہو اسے کیا پتا عام آدمی کیسے گزارا کرتا ہے؟علیمہ خان کا واحد ذریعہ معاش سلائی مشین ہے، علیمہ خان نے اقبال جرم کیا اور جرمانہ ادا کیا، نیب مریم نواز کو پکڑ لیتی ہے لیکن اعتراف جرم کرنے والی علیمہ خان کو نہیں پکڑتی۔ الیکشن کمیشن کے پاس عمران خان اور پی ٹی آئی کے خلاف ثبوت موجود ہیں کسی میں اتنی جرات ہے کہ اس اشتہاری کو کٹہرے میں کھڑا کرے،عمران خان تین سو کینال کے گھر میں رہتا ہے اور صرف ایک لاکھ روپے ٹیکس دیتا ہے جبکہ بنی گالہ کا گھر بغیر این او سی کے بنا، کسی میں ہمت ہے کہ وہ گھر کو گرائے؟ نیب کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے مریم نواز کا کہنا تھا کہ نیب سابق وزیراعظم کو اس کی بیٹی کے ساتھ جیل بھیج دیتا ہے مگر علیمہ باجی اور حکومتی وزرا کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کرتا، نیب کو شہباز شریف، حمزہ شہباز، شاہد خاقان، سعد رفیق نظر آتے ہیں مگر نیب کو حکومتی وزرا نظر نہیں آتے۔ مریم نواز کا کہنا تھا کہ 2018 میں نوازشریف کا جیتا الیکشن چوری کیا گیا، عمران خان کو اقتدار میں لایا گیا ہے، نواز شریف چاہتے تو ایک نہیں بلکہ 100 این آر او ان کی جھولی میں پھینک دیئے جاتے لیکن نوازشریف آج بھی جیل میں ڈٹ کرکھڑے ہیں، عمران خان کی حیثیت نہیں کہ وہ کسی کو این آر او دے  بلکہ چند دن بعد خود این آر او مانگے گا، عمران نیازی کو پتا ہے کہ وہ پہلی اور آخری مرتبہ اقتدار میں آیا ہے، وہ عوام کو مشکل میں ڈال کر لندن فرار ہوجائے گا، اس کے بچوں سمیت سب کچھ وہیں ہے۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟