25 جون 2019
وزیراعظم سمیت کابینہ کا تنخواہ میں رضاکارانہ کٹوتی کا اعلان

وزیراعظم سمیت کابینہ کا تنخواہ میں رضاکارانہ کٹوتی کا اعلان

وزیراعظم عمران خان اور وفاقی کابینہ نے اپنی تنخواہوں میں رضاکارانہ کٹوتی کا فیصلہ کیا ہے۔ مالی سال 20-2019 کا وفاقی بجٹ قومی اسمبلی میں وزیر مملکت برائے ریونیو حماد اظہر نے پیش کیا۔ بجٹ پیش کرتے ہوئے وزیرمملکت کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان اور وفاقی کابینہ نے اپنی تنخواہوں میں رضاکارانہ طور پر 10 فیصد کٹوتی کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں یہ روایت رہی کہ کابینہ اپنی تنخواہیں بڑھاتی تھی لیکن عمران خان کی قیادت میں کابینہ نے رضاکارانہ طور پر تنخواہوں میں کمی کا فیصلہ کیا۔  بجٹ میں دیگر سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ بجٹ میں گریڈ ایک سے 16 تک کے ملازمین کو بنیادی تنخواہ پر 10 فیصد ایڈہاک ریلیف دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ گریڈ 17 سے 20  تک کے سول ملازمین کو 5 فیصد ایڈہاک ریلیف دیا جائے گا تاہم گریڈ 21 اور 22 کے سول ملازمین کی تنخواہوں میں کوئی اضافہ نہیں ہوگا کیوں کہ انہوں نے ملک کی معاشی صورتحال میں بہتری کی خاطر یہ قربانی دینے کا فیصلہ کیا ہے۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟