16 جون 2019
نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام پر کام میں تیزی

نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام پر کام میں تیزی

یا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام پر کام میں تیزی آچکی ہے اوراس منصوبے کے تحت لاکھوں گھروں کی مرحلہ وارتعمیر جلد شروع ہوگی.حکومت نے نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کے تحت لاہور، کراچی، اسلام آباد، ملتان، فیصل آباد، جہلم، کوئٹہ، راولپنڈی، پشاورسمیت دیگرشہروں میں رجسٹریشن کا جلد آغازکرنے کا اعلان کیا ہے۔ ملک میں اس وقت ایک کروڑ گھروں کی کمی ہے۔ اس پروگرام کے تحت لاکھوں گھروں کی مرحلہ وارتعمیر شروع کی جائے گی جو دو، تین اور چار بیڈ رومز کے اپارٹمنٹس پر مشتمل ہوں گے۔ اس پروگرام سے لوئرمڈل کلاس اورلوئرکلاس کے افراد کو بھی ورلڈ کلاس ماہرین تعمیرکی سرپرستی میں بننے والے گھر فراہم کئے جائیں گے۔ وزیراعظم عمران خان منصوبے کو پاکستان کی تاریخ میں ایک سنگِ میل قرار دے چکے ہیں۔ منصوبے میں  اوورسیز پاکستانیوں کیلئے دس فیصد مخصوص کوٹہ ہوگا۔ نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام بھی نہ صرف بے گھر افراد کو چھت فراہم کرے گا بلکہ اس سے 60 لاکھ ہنرمندوں کے لیے روزگاربھی پیدا ہوگا۔ تعمیراتی صنعت میں ترقی سے سیمنٹ، لوہا، اسٹیل، اینٹ اوربجری کی صنعتیں فروغ پاتی ہیں۔ ان کے علاوہ پتھر، شیشے، پینٹ اورلکڑی کے کاروباربھی رفتار پکڑتے ہیں۔ مال کی ترسیل کے لیے استعمال ہونے والی ٹرانسپورٹ انڈسٹری کی بھی ترقی ہوتی ہے


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟