21 اگست 2019
تازہ ترین
 ڈالر مہنگا،سٹاک مارکیٹ ڈھیر،ایک ہفتے میں بیرونی قرضہ 800 ارب روپے  بڑھ گیا

 ڈالر مہنگا،سٹاک مارکیٹ ڈھیر،ایک ہفتے میں بیرونی قرضہ 800 ارب روپے  بڑھ گیا

 ڈالر کے روپے پر تابڑ توڑ حملے، ایک ہفتے کے دوران قیمت تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی، روپے کی بے قدری نے سٹاک مارکیٹ کو بھی ڈھیر کر دیا، 30 ہفتوں کی بدترین گرواٹ ریکارڈ کی گئی۔ ڈالر روپے کو روندتا ہوا تاریخ کی بلند ترین سطح کو چھو گیا، ایک ہفتے کے دوران انٹر بینک میں ڈالر کی قیمت 7 روپے 60 پیسے اضافے سے 149 روپے ہوگئی جبکہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر 151 روپے میں فروخت ہو رہا ہے، ڈالر کے دام بڑھنے سے صرف ایک ہفتے کے دوران بیرونی قرضوں میں 800 ارب روپے کا اضافہ ہوگیا۔ بے لگام ڈالر سے عوام کو مہنگائی کا عذاب جھیلنا پڑے گا، پیٹرول، ڈیزل، دال، آٹا، چاول سب کچھ مہنگا ہوجائے گا۔ ڈالر کی قیمت میں اضافے سے سٹاک مارکیٹ میں سرمایا کاروں کو دھچکا لگا، پاکستان سٹاک ایکسچینج کا 30 کاروباری ہفتوں کے بعد بدترین ہفتہ رہا، 100 انڈیکس 1549 پوائنٹس کی گراوٹ کے بعد مارکیٹ 33 ہزار 166پوائنٹس کی سطح پر بند ہوئی، انڈیکس میں 4  اعشاریہ 5 کمی سے سرمایا کاروں کے 315 ارب روپے ڈوب گئے۔ ایک ہفتے کے دوران بیرونی سرمایا کاروں نے مجموعی طور پر 82 لاکھ ڈالر مالیت کے حصص خریدے، جنوری سے اب تک عالمی سطح پر بدترین کارکردگی دکھانے والی سٹاک مارکیٹوں میں پاکستان سٹاک ایکسچینج کا تیسرے نمبر رہا۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟