23 اکتوبر 2020
تازہ ترین
 حفیظ سنٹر میں لگی آگ سے سامان نہیں سینکڑوں تاجروں کا مستقبل جل گیا ہے۔  ذکر اللہ مجاہد

حفیظ سنٹر میں لگی آگ سے سامان نہیں سینکڑوں تاجروں کا مستقبل جل گیا ہے۔ ذکر اللہ مجاہد

 امیر جماعت اسلامی لاہور میاں ذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ حفیظ سنٹر میں لگی آگ میں سامان نہیں تاجروں کا مستقبل جل گیا ہے۔پلازے میں خوفناک آتشزدگی کے واقعہ پر تاجر برداری کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔حفیظ سینٹر میں صبح سے لیکر شام تک لگی آگ پر قابو نہ پایا جانا لوکل گورٹمنٹ کی نااہلی ثبوت ہے۔ حکومت لوگوں کے جان و مال کے تحفظ میں ناکام ہوچکی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے الخدمت فاؤنڈیشن کے رضاکاروں کا کےہمراہ حفیظ سینٹر کا دورہ کے موقع پر درعمل کا اظہار کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ان کے ہمراہ صدر جے آئی یوتھ لاہور صہیب شریف اور الخدمت فاؤنڈیشن کے رضاکاروں کی بڑی تعداد موجود تھی۔امیر جماعت اسلامی لاہور میاں ذکر اللہ مجاہد مزید کہا کہ فائربریگیڈ کی گاڑیوں کی تعداد کم ہونے کی وجہ سے برقت آگ پر قابو نہیں پایا جا سکا ۔انہوں نے کہا کہ  ریسیکسو 1122 کے اہلکاروں کی اپنی جان پر کھیل کر آگ بجھانے کی کوششیں قابل تحسین ہیں جبکہ الخدمت فاؤنڈیشن کے رضاکاروں کی آگ بجھانے اور تاجروں کے ہمراہ دکانوں سے سامان نکالنے کی کاوشیں قابل قدر ہیں ۔ سانحہ میں جان بحق ہونے والے افراد کے لواحقین کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔اس موقع پر امیر جماعت اسلامی لاہور میاں ذکر اللہ مجاہد  حکومت سے مطالبہ کیا کہ حکومت تاجروں کے نقصان کا فی الفور ازلہ کرے اور  پلازہ میں آگ لگنے کی اصل وجوہات قوم کے سامنے لانے کیلئے کمیشن بنائے ۔آگ میں جان کی بازی ہارنے والے اور زخمی کیلئے حکومت فی الفور امداد کا اعلان بھی کرے اور ہسپتالوں میں زخمی کو بہترین علاج معالجہ کی سہولیات بھی فراہم کرے ۔  


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا آپ کووڈ 19 کے حوالے سے حکومتی اقدامات سے مطمئن ہیں؟